نیشنل پینتھرس پارٹی کا روہنگیا وبنگلہ دیشیوں کے خلاف احتجاج

جموں//  جموں وکشمیر نیشنل پینتھرس پارٹی نے بدھ کے روز یہاں روہنگیا اور بنگلہ دیشی شہریوں کوجموں بدر کرنے کے لئے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ پارٹی چیئرمین ہرش دیو سنگھ کی قیادت میں درجنوں کارکنان یہاں پارٹی دفتر کے باہر جمع ہوئے اورمرکزی وریاستی سرکار کے خلاف نعرہ بازی کی۔ مظاہرین نے ’روہنگیا کو باہر نکالو، باہر نکالو‘، بنگلہ دیشیوں کو بھگاؤ، بھگاؤ، روہنگیا بنگلہ دیشی جموں چھوڑو، جموں چھوڑو کے نعرے بلند کئے۔اس موقع پرمیڈیا افراد سے بات کرتے ہوئے ہرش دیو سنگھ نے کہاکہ’ جموں شہر اور اس کے آس پاس رہنے والے روہنگیا اور بنگلہ دیشی شہری یہاں کے لئے خطرہ ہیں، آپسی بھائی چارہ کے لئے خطرہ ہیں، یہ لوگ فرقہ وارانہ ماحول پیدا کرنا چاہتے ہیں‘۔انہوں نے الزام لگایاکہ روہنگیا اور بنگلہ دیشی لوگ یہاںپر عسکری سرگرمیوں، منشیات، انسانی اسمگلنگ جیسے جرائم میں ملوث ہیں۔ہرش دیو سنگھ نے مرکزی وریاستی حکومتوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ’ پچھلے تین سالوں سے صرف یہی بیان آرہا ہے کہ ہم ان کی نشاندہی کر رہے ہیں، سرکاران لوگوں کو یہاں سے نکالنے میں مکمل طور ناکام رہی ہے‘۔ہرش دیو سنگھ نے مرکزی قیادت والی بھارتیہ جنتا پارٹی سے کہاکہ وہ اس بات کی وضاحت کرے کہ روہنگیا اور بنگلہ دیشیوں کو جموں بدر کرنے میں اتنی تاخیر کیوں کی جارہی ہے۔سنجواں ملٹری اسٹیشن جموں پر ہوئے فدائین حملہ میں بھی روہنگیا کے ملوث ہونے کی اطلاعات ہیںتو پھر کارروائی نہ کرنا افسوس کن ہے۔ ہرشدیو سنگھ نے کہاکہ اگر فوری طور اس ضمن میں کوئی اقدام نہ اٹھائے گئے تو جموں کی تمام سماجی، غیر سرکاری تنظیمیں اور سول سوسائٹی مشترکہ طور مل کر روہنگیا اور بنگلہ دیشیوں کے خلاف بڑی مہم شروع کریگی۔یو این آئی