نگین آتشزدگان کی بازآبادکاری اور مسابقتی امتحانات کی تاریخوں پر نظر ثانی کی جائے: فاروق عبدا ﷲ

نیوز ڈیسک
سری نگر//جموں وکشمیر نیشنل کانفرنس کے صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے لوک سبھا میں وقفہ صفر کے دوران نگین آتشزدگی اور مسابقتی امتحان کے اُمیدواروں کے معاملات کو اُجاگر کیا۔

 

انہوں نے کہا کہ ”کل ہمارے یہاں نگین لیک میں7 ہاﺅس بوٹ آگ کی ہولناک واردات میں خاکستر ہوئے ہیں۔ مذکورہ ہاﺅس بوٹ مالکان کو بہت زیادہ نقصان پہنچا ہے۔

 

عبدا ﷲ نے مرکزی وزیر سیاحت سے اپیل کی ہے کہ وہ معاملے کا نوٹس لیں اور ان کی راحت کاری کیلئے اقدامات اُٹھائے اور ساتھ ہی جموں وکشمیر حکومت مذکورہ آتشزدگان کو لڑکی فراہم کریں تاکہ وہ جلد از جلد اپنے ہاﺅس بوٹ پھر سے تعمیر کرسکیں۔

 

مسابقتی امتحان کا معاملہ اُجاگر کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ جے کے پی ایس سی نے پہلے مسابقتی امتحانات کو ملتوی کردیا تھا اور اب امتحان کے شیڈول کا اعلان کیا ہے لیکن اس میں طلباء کو صرف 6 دن کا وقت دیا گیا ہے جو بہت کم ہے۔

 

انہوں نے کہاکہ قوائد و ضوابط کے تحت نوٹس کی اجرائی سے امتحان تک 30 دن کا دیا جانا چاہئے ۔

 

انہوں نے حکومت پر زور دیا کہ اُمیدواروں کو امتحان کی تیاری کیلئے معقول وقت دیا جائے۔

 

اس کے علاوہ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ مسابقتی امتحانات جموں و کشمیر اور ملک کی دیگر ریاستوں میں تفاوت ہے، جس سے ہمارے نوجوانوں کو بہت نقصان پہنچا رہا ہے۔

 

انہوں نے کہا کہ یو پی ایس سی اور مسابقتی امتحانات میں عمر کی حد کی تفاقت کو دور کیا جائے۔