نوشہرہ ہسپتال میں 3برسوں سے بلڈبینک کی مشینری ناکارہ | خون کی ضرورت پڑنے پر مریض راجوری اور جموں میں درماندہ

رمیش کیسر
نوشہرہ //سب ڈسٹرکٹ ہسپتال نوشہرہ میں گزشتہ 3 سال سے بلڈ بنک کی مشینری ناکارہ ہونے کی وجہ سے مریضوں کو خون کی ضرورت پڑنے پر راجوری یا جموں کے ہسپتالوں میں جانے پر مجبور ہونا پڑرہا ہے ۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ کسی بھی ایمر جنسی کے دوران مریضو ں بالخصوص حادثات کے دوران زخمی ہونے والے افراد کو خون جیسی بنیادی سہولیات ہی دستیاب نہیں ہوتی جس کی وجہ سے ہسپتال میں علاج کے لئے آنے والے مریضوں کو راجوری یا جموںمیں جاکر علاج معالجہ کروانا پڑرہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ بلڈ بینک کی مشینری گزشتہ تین برسوں سے خستہ حالی کا شکارہ ہو ئی ہے لیکن محکمہ صحت کے ساتھ ساتھ مقامی انتظامیہ کی جانب سے مشینری کی مرمت کیلئے کوئی عملی قدم ہی نہیں اٹھایا جارہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ حد متارکہ پر گولہ باری کے دوران زخمی ہونے والے افراد کیلئے ایمر جنسی کے اوقات میں خون جیسی سہولیات بھی میسر نہیں ہوتی تھی جبکہ روانہ وقت میں جب حدمتارکہ پر فائر بندی ہوئی ہے اس کے دوران حادثات میں زخمی ہونے والوں کو مذکورہ سہولیات دستیاب نہیں کی جارہی ہیں ۔غور طلب ہے کہ ہسپتال میں بلڈ بینک کیساتھ ساتھ دیگر معیاری بنیادی سہولیات بھی دستیاب نہیں ہیں ۔نوشہرہ کے مکینوں نے جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ کے اعلیٰ آفیسروں کو ہدایت جاری کی جائیں تاکہ ہسپتال میں بلڈ بینک جیسی بنیادی سہولیات کیلئے عملی اقدامات اٹھائے جائیں ۔