نوجوان کی ہلاکت کیخلاف پلوامہ میں مکمل ہڑتال

پلوامہ  / 22سالہ نوجوان فیاض احمد وانی کی ہلاکت کیخلاف پلوامہ میںمنگل کو مکمل ہڑتال رہی جس کے نتیجے میں یہاں تمام کارو باری ،تجارتی اور تعلیمی سر گر میاں مسدود ہو کر رہ گئی جبکہ سڑکوں پر ٹریفک کی نقل و حمل بند رہی ۔ اس دوران سیکورٹی خد شات کے پیش نظر ریل حکام نے سر ینگر بانہال ریل خد مات معطل رکھیں۔ شہری ہلاکت کے خلاف ہڑتال کے دوران پلوامہ ،راجپورہ اور کاکہ پورہ تحصیل کے علاوہ دیگر کئی علاقوں میں مکمل بند رہا ۔ ہڑتال کے نتیجے میں بازار وں میں سناٹا چھایا رہا جبکہ ٹریفک کی آمد و رفت بند رہی ۔ ضلع انتظامیہ پلوامہ نے شہری ہلاکت کو مد نظر رکھتے ہو ئے پلوامہ ،راجپورہ اور کاکہ پورہ میں تمام تعلیمی ادارے بند رکھنے کے احکامات صادر کئے تھے جس کے نتیجے میں یہاں تعلیمی سر گر میاں مکمل طور معطل رہیں ۔تاہم ترال میں کوئی ہڑتال نہیں کی گئی۔یادرہے کہ فورسز کی بھاری تعداد نے آپریشن آل آوٹ کے تحت ضلع پلوامہ کے لگ بھگ 20سے زائددیہات کا محاصرہ عمل میں لاکر گھر گھر تلاشی کا رروائی  عمل میں لائی جس کے دوران چیوہ کلاں میں پتھرائو کرنے کے دوران فورسز نے گولی چلائی جس کے نتیجے میں میڈیکل شاپ مالک جاں بحق ہوا۔