نوجوان نسل عسکریت کا راستہ اختیار کرنے پر مجبور

 سرینگر//حریت (گ)،حریت (ع)، تحریک حریت ،فریڈم پارٹی ، پیپلز پولیٹکل فرنٹ اور سالویشن مومنٹ نے زچلڈارہ ہندوارہ میں عسکری معرکہ کے دوران جاں بحق ہوئے دو جنگجوئوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت یہاں کی نوجوان نسل کو عسکریت کا راستہ اختیار کرنے پر مجبور کررہی ہے ۔ حریت (گ) چیئرمین سید علی گیلانی نے خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے یہ سرفروش اپنی قوم کیلئے اٹھتی جوانیاں قربان کررہے ہیں۔ گیلانی نے اپنی گہری تشویش اور فکرمندی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایک امن پسند قوم پر جنگ مسلط کی گئی اور دنیا خاموش تماشائی بنی اس خون خرابے کو اپنے ذاتی مفادات کی خاطر نظرانداز کررہی ہے۔ گیلانی نے کہا کہ ’ہمارے نوجوان اپنا خون دے کر اس تحریک کو سینچ رہے ہیں اور ہم پر یہ ذمہ داری عاید کرتے ہیں کہ ہم ان کے اس مقدس مشن کو پائیہ تکمیل تک پہنچائیں۔  حریت (ع)ترجمان نے جاں بحق ہوئے دو عسکریت پسندوں عاشق احمد بٹ ساکن پلہالن اور طیب مجید میر ساکن براٹھ کلان سوپور کوخراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت کی پالیسیاں یہاں کی نوجوان نسل کو عسکریت کا راستہ اختیار کرنے پر مجبور کررہی ہے ۔ایک بیان میںترجمان نے کہا کہ کشمیری نوجوان نسل کو پشت بہ دیوار کرنے کیلئے بھارت اور اس کے ریاستی حواری جس ڈھٹائی کے ساتھ جبر وتشدد کا بے تحاشہ استعمال کررہے ہیں اس نے بھارت کے جمہوری غبارے سے ہوا نکال دی ہے ۔ترجمان نے کہا کہ کشمیری نوجوان ایک عظیم مقصد کے حصول کیلئے اپنی قیمتی جانوں کا نذرانہ پیش کررہے ہیں اور یہ پوری قوم اور قیادت کی ذمہ داری ہے کہ وہ اس مشن اور مقصد کے تئیں بھر پور استقامت اور یکجہتی کا مظاہرہ کرے۔ترجمان کے مطابق گزشتہ ایک ہفتے سے وادی میں مختلف علاقوں کا گھیرائو کرکے تلاشیاں لی جاتی ہیں ۔ترجمان نے لوگوںکو یرغمال بنانے اور گھر گھر خانہ تلاشیوں کے دوران لوگوں کو ہراساں کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے جارحانہ حربے کے ایک مبنی برحق جدوجہد میں مصروف قوم کے حوصلوںکو شکست نہیں دے سکتے۔تحریک حریت کے شعبہ دعوت وتبلیغ کے معاون سیکریٹری بشیر احمد قریشی اور بزرگ لیڈر شاہ ولی محمد کی قیادت میں ایک وفد نے جاں بحق ہوئے دونوں جنگجوئوں کوخراج عقیدت ادا کیا۔شاہ ولی محمد نے طیب مجید کی نماز جنازہ کی پیشوائی کی اور بشیر احمد قریشی نے تعزیتی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی مظالم کی اب انتہا ہوگئی ہے۔انہوں نے کہا کہ ’جموں کشمیر کو ایک قتل گاہ بنادیا گیا ہے، نوجوانوں کا مستقبل تاریک بنادیا گیا۔ گرفتاریاں، چھاپے، محاصرے، توڑ پھوڑ، تشدد، مار دھاڑ تسلسل کے ساتھ جاری ہے‘۔انہوں نے مزید کہا کہ تنگ آمد بہ جنگ آمد نوجوان اپنا سر ہتھیلی پر لیکر بھارتی مظالم کا مقابلہ کررہے ہیں، کیونکہ حکومت اور پولیس نے ہر کشمیری کے خلاف انتقام گیری کا محاذ کھول رکھا ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت نے طاقت کے بل بوتے پر آزادی پسندوں کو زیر کرنے کی کوشش کی اورظلم وزیادتی کے تمام حربے آزما کر کشمیر ی عوام کو سرینڈر کرانے کی ہر ممکن کوشش کی، مگر عوام نے عزیمت اور قربانیوں کا راستہ اختیار کرکے مقدس خون کی لاج رکھی۔  فریڈم پارٹی نیخراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا کہ جب تک تنازعہ کشمیر یہاں کے عوام کی سیاسی اُمنگوں کے مطابق حل نہیں کیا جاتا تب تک جنوب ایشیائی خطے میں امن و سلامتی کا خواب پورا نہیں ہوسکتا ہے۔ایک بیان میں فریڈم پارٹی نے کہا کہ ظلم و جبر مسائل کو حل کرنے کے بجائے بڑھاتے ہیں۔ہندوارہ ،کولگام اور دیگر علاقوں میں جاں بحق کئے گئے جنگجوئوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے فریڈم پارٹی بیان میں کہا گیا ہے کہ عسکریت پسند انتہائی صبر و ثبات سے اور بیش بہا قربانیاں پیش کرکے مزاحمتی تاریخ کا ایک ناقابل فراموش باب رقم کررہے ہیں۔ پیپلز پولیٹکل فرنٹ چیئرمین محمد مصدق عادل نے خراجِ عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ تاریخ اورقوم اپنے ان معصوموںکی طرف سے  دی جارہی قربانیوں کو ہمیشہ یاد رکھے گی۔مصدق عادل نے کہا’’ یہ ہماری اخلاقی، دینی اور قومی ذمہ داری بنتی ہے کہ ہم ان قربانیوں کی حفاظت کریں۔سالویشن مومنٹ چیئرمین ظفربٹ نے خراج عقیدت ادا کیا۔ پارٹی کی طرف سے عبدالمجید ،جاوید احمداورمحمد اشرف نے جنازے میں شرکت کی اورلواحقین سے تعزیت و ہمدردی کا اظہار کیا۔