نوجوان ملک دشمنوں سے ہوشیاررہیں ملک کی کامیابی کی کلیدنوعمرنسل کے ہاتھ میں:نائب صدر

یواین آئی

نئی دہلی// نائب صدر جگدیپ دھنکڑ نے ہفتہ کو نوجوانوں سے کہا کہ وہ ہمیشہ قومی مفاد کو مقدم رکھیں اور اس کام سے بیزار نہ ہوں اور ایسے عناصر سے ہوشیار رہیں جو ہمیشہ ہندوستان مخالف کہانیاں بنانے اور پھیلانے میں مصروف رہتے ہیں۔ دھنکڑ دارالحکومت میں دہلی یونیورسٹی کے 100ویں کانووکیشن سے خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ ترقی یافتہ ہندوستان کے راستے کی کامیابی کی کنجی ملک کی نوجوان نسل کے ہاتھ میں ہے۔ نائب صدر جمہوریہ نے کہا کہ ہندوستان کے نوجوانوں کو نہ صرف اپنے لئے بلکہ ملک اور پوری دنیا کے لئے اپنا منفرد نشان چھوڑنا ہوگا کیونکہ ہم ‘واسودھائیو کٹمب’ کے تصور پر یقین رکھتے ہیں۔نوجوان طلباء کو ترقی یافتہ ہندوستان کے میراتھن سفر کا ایک اہم حصہ بتاتے ہوئے دھنکڑنے طلبا کو اس بات کی تلقین کی کہ جب ملک کی خدمت کی بات آتی ہے وہ ملک دشمن سرگرمیوں میں مصروف اور انتشار پھیلانے والوں کے خلاف ہمیشہ چوکنا رہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ جن لوگوں کی ملک دشمن باتیں پھیلانے کی بھوک کبھی نہیں مٹتی، ان لوگوں سے ہوشیار رہیں جو ہماری تیز رفتار اقتصادی ترقی اور خوشحالی کو شتر مرغ کی طرح نہیں دیکھنا چاہتے۔نائب صدر جمہوریہ نے نوجوانوں سے قومی مفاد کو ہمیشہ مقدم رکھنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ میری آپ سے اپیل ہے کہ قومی مفاد کو ہمیشہ مقدم رکھیں، اس کا کوئی متبادل نہیں ہو سکتا۔ قوم کے تئیں ہمارا عزم کبھی کم نہیں ہو سکتا۔ اسے دن رات 100 فیصد برقرار رکھنا ہوگا۔ دھنکڑ نے کہا کہ ہندوستانی جمہوریت میں نوجوانوں کا تعاون بڑا اور قیمتی ہے۔ نوجوانوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ ان تمام لوگوں کو بے اثر کریں جو حکمت عملی کے ساتھ ہمارے قومی امیج کو خراب کرنے اور ہمارے آئینی اداروں کو داغدار کرنے میں مصروف ہیں۔ڈیجیٹل ادائیگیوں، خلائی تحقیق اور دیگر شعبوں میں ہندوستان کی ترقی کے اثرات کا حوالہ دیتے ہوئے نائب صدر نے کہا کہ آج امریکہ، یوروپ اور سنگاپور جیسے ممالک خلائی صنعت جیسے شعبوں میں ہندوستان کے ساتھ تعاون کر رہے ہیں۔ انہیں اب ہماری صلاحیتوں پر یقین ہے۔ دھنکڑنے کہا “ذرا ہندوستان کے سفر کو دیکھیں۔ وقتاً فوقتاً سائیکلوں پر راکٹ کے پرزے لے جانے سے لے کر اب دنیا میں سیٹلائٹ لانچ کرنے تک ہم نے خواب دیکھنے کی ہمت کی ہے اور ہم نے ناممکن کو حاصل کر لیا ہے۔” دھنکڑ نے کہا “یاد رکھیں، آپ سب 2047 میں ہندوستان کے میراتھن سفر کا ایک اہم حصہ ہیں۔ اس کی کامیابی آپ کے کندھوں پر ٹکی ہوئی ہے، مجھے آپ سے پوری امید اور مکمل اعتماد ہے۔ قوم کامیاب ہوگی کیونکہ آپ ناکامی کے متحمل نہیں ہوسکتے۔ آپ نہ صرف اپنی قسمت کے معمار ہیں بلکہ ہمارے مشترکہ مستقبل کے بھی معمار ہیں۔” دھنکڑ نے نوجوانوں سے کہا ’’نہ صرف اپنے لیے بلکہ ملک اور دنیا کے لیے ایک نشان بنائیں کیونکہ ہم ‘ایک زمین، ایک خاندان، ایک مستقبل’ میں یقین رکھتے ہیں۔ آپ کے پاس 2047 میں ترقی یافتہ ہندوستان کی کلید ہے۔ آپ کو اس کا دروازہ کھولنا ہوگا۔”