نوا کدل آتشزدگان سے یکجہتی

 سرینگر//نیشنل کانفرنس کے جنرل سکریٹری علی محمد ساگر(ایم ایل اے خانیار) ، ایم ایل اے عیدگاہ مبارک گل اور حریت (ع) چیئرمین میرواعظ عمر فاروق نے تارہ بل اور بلبل لنکر جاکر آتشزدگان سے اظہار یکجہتی کیا۔ ساگر کے ہمراہ مختلف محکموں کے اعلیٰ افسران بھی موجود تھے۔ انہوں نے افسران کو ہدایت کی کہ آتشزدگان کی بازآبادری کیلئے فوری طور اقدامات کئے جائیں۔ اس کے علاوہ انہوں نے متاثرین کی ڈھارس بندھائی۔ ساگر نے انتظامیہ کو متاثرین کی بازآبادکاری کیلئے ضروری اقدامات کرنے کی اپیل کی۔ انہوں نے حکومت خصوصاً ضلع ترقیاتی کمشنر سرینگر سے اپیل کی کہ وہ متاثرین کے عارضی قیام و طعام کا بندوبست کریں نیز آتشزدگان کے حق میں مفت راشن کیساتھ مفت عمارتی لکڑی اور ٹین کی چادریں فراہم کی جائیں۔ انہوں نے ریڈ کراس سوسائٹی کے حکام سے بھی اپیل کی کہ متاثرین کی امداد کیلئے اقدامات کئے جائیں۔ادھر  مبارک گل نے تار بل نواکدل میں آگ سے ہوئے نقصان کا جائزہ لیا اور موقعہ پر محکمہ مال کے افسران کو فی الفور آتشزدگان کو امداد دینے کے لئے کہا ۔ مبارک گل نے متاسرین کو یقین دلایا کہ جلد ہی محکمہ مال کی طرف سے بھرپور مدد کی جائے گی۔اس دوران میرواعظ عمر فاروق نے شہر خاص کے تارہ بل اور بلبل لنکرنواکدل کا دورہ کرکے آگ کی ہولناگ وارداتوں سے متاثرہ کنبوں کے ساتھ ذاتی طور ہمدردی اور یکجہتی کا اظہار کیا اور وہاں پر آگ سے برپا ہوئی تباہی کا بذات خود جائزہ لیا۔اس موقعہ پر متاثرہ افراد نے میرواعظ کو آتشزدگی کے نتیجے میں ہوئے زبردست نقصانات کی تفصیلات سے آگاہ کیا۔اس موقعہ پر میرواعظ نے امدادی اور فلاحی تنظیموں سے آگے آکر متاثرین کی ممکنہ مدد کی اپیل کی تاکہ متاثرین کی مشکلات کا ازالہ کیا جاسکے۔میرواعظ نے ناوپورہ میں 10 دسمبر کو پیش آئی آگ کی واردات میںزبردست متاثر ہوئی مسجد اویس کرنی ؒ کا بھی دورہ کیا اور نقصان کا جائزہ لیا۔اس دوران میرواعظ نے بلبل لنکر میں آستان عالیہ حضرت بلبل شاہ صاحب ؒ کے آستان عالیہ اور کشمیر کے پہلے مسلمان سلطان رینچن شاہ کے مزارکا دورہ کرکے فاتحہ خوانی کی۔