نشیلی ادویات کے استعمال کیخلاف مہم

کریری ہایراسکینڈری میں ہیومن ایڈ سوسائٹی کاپروگرام 

 
بارہمولہ //ہیومن ایڈ سوسائٹی رضاکارتنظیم نے بارہمولہ انتظامیہ کے اہتمام سے منعقدہ ہفتہ بھر جاری نشیلی ادویات کیخلاف مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا اور لوگوں میں نشیلی ادویات کے مضراثرات کے بارے میں آگاہی دلانے میں کلیدی کردار اداکیا۔29اپریل سے جاری اس مہم کے دوران ضلع کے مختلف مقامات پر بیداری پروگرام منعقد کئے گئے ۔اس سلسلے میں ہیومن ایڈ سوسائٹی نے ضلع انتظامیہ کے اشتراک سے گورنمنٹ ہائے اسکیندری اسکول کریری میں پروگرام منعقد کیا جس دوران علاقہ کے لوگوں کی کثیرتعداد نے نشیلی ادویات کے استعمال کاخاتمہ کرنے کا عہد کیا۔اس موقعہ پر مقررین نے اپنے ذاتی عزم کو دہراتے ہوئے پروگرام منتظمین کو اس بات کا یقین دلایا کہ اس مہم کے خلاف ان کی انفرادی اور اجتماعی جنگ سال بھر جاری رہے گی ۔ ِاس پروگرام میں اِدارہ ہیو من ایڈ سو سائٹی کے رضاکاروں اور محکمہ ہیلتھ سروسز سب ڈسٹرکٹ اہسپتال کے ملازمین نے بلاک میڈیکل آفیسر کریری اور چیر مین ہیومن ایڈ سو سایٹی کی سر براہی میں ایک ساتھ جلوس کی صورت میں شامل ہوکر نشیلی ادویات کے استعمال کے خلاف ہاتھوں میںبینر لیکرایک ریلی برآمدکی جو کریری ہائراسکینڈری اسکول کے گرائونڈ میں ایک جلسہ کی صورت میںاختتام پزید ہوئی۔ اس موقعہ پر کئی طلباء وطالبات نے تقاریر کے ذریعے عوام کو نشیلی ادویات کے نقصانات سے آگاہ کیا۔ اِدارہ ہیومن ایڈ سو سایٹی کے چیر مین بشیر احمد میر نے  اس موقعہ پرکہا کہ ہمارے سماج میںجہاں مختلف قسم کی برائیوں نے جنم لیا ہے وہیں نشیلی ادویات کے کارو بار اور اسکے استعمال سے یہاں کے عوام کاجینا بھی اب دوبھر کر ہو گیا اور نہ صرف ہماری معیشت پر اسکے منفی اثرات مر تب ہو رہے ہیں۔بلکہ ہماری نوجوان نسل کے ساتھ ساتھ دیگر مرد زن بھی اِن برائیوٗں میں مبتلاہ ہوکر اب اپنی زندگی کے دْشمن ہو گئے۔ جو کہ اب ہماری قوم وملت کے ِذی حسِ لو گوں کے لئے کسی لمحہ فکریہ سے کم نہیں اور جس سے نپٹنے کے لئے ہمیں اپنی انفرادی اور اجتماعی ذمہ داریوں کو بروئے کارلاکر اپنے اپنے حصہِ کی شمع روشن کر کے اِن تمام خرافات کا مکمل طور پر خاتمہ کرنا ہوگا ۔