نرسنگ اسٹاف احتجاج کرنے کیلئے مجبور کیوں؟ | سول سوسائٹی فورم کا سکمزانتظامیہ سے سوال

سرینگر// جموں و کشمیر سول سوسائٹی فورم کے چیئرمین عبد القیوم وانی نے سکمز میں کام کرنے والی نرسوں کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ فورم نے فیملی نرسنگ اسٹاف کی جانب سے احتجاج کا سخت نوٹس لیا ہے۔ایک بیان میں قیوم وانی نے کہا کہ نرسوں کے آنسوؤں نے سب کے دل ہلا کر رکھ دئے ہیں کہ آخر کیوں ایک ہی معاشرے کے افسران ایک انتہائی حساس منظر نامے کے متعلق اسقدر بے حس اور لاتعلق ہوسکتے ہیں۔بیان میں کہا گیا ہے کہ جے کے سی ایف ان نرسوں کے موجودہ حالات پر گہری نظر رکھے ہوئے ہے جو خاص طور پر اس عالمگیر وبا میں خود کو خطرے میں ڈالکر لوگوں کی زندگیوں کے تحفظ کے لئے کام کررہی ہیں لیکن فرائض سے سمجھوتہ نہیں کررہی ہیں۔وانی نے کہا ’’ ہر ملازم انسان ہوتا ہے نہ کہ مشین اور جب ورک کلچر کا ایک نظام موجود ہو جس میں روسٹر میکانزم اور شرحِ تناسب جیسی چیزیں ہر جگہ موجود ہیں، جموں کشمیر سول سوسائیٹی فورم حیرت زدہ ہے کہ یہ نرسیں سڑکوں پر نکلنے کے لئے کیوں اتنی مجبور ہو گئیں؟‘‘۔انہوںنے حکام سے اپیل کی کہ اس معاملے کی تحقیقات کی جائے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ ایک منصفانہ طریقہ کارکورائج کیا جائے جو عام طور پر ملازمین اور خاص طور پران نرسوں کیلئے کام کرنے والی جگہوں سے لیکر ان کے رہائشی مقامات تک موزوں ہوگا تاکہ کسی تانا شاہی نظام کے لئے کوئی گنجائش باقی نہ رہے۔