نام بڑے درشن چھوٹے ! انتظامیہ کے بہترسڑک رابطوں کے دعوے دھڑام

دیہی عوام کیلئے لائف لائن کی حیثیت رکھنے والی سڑک مرمت کی طلبگار

جموں//اگرچہ جموں ریاست کی سرمائی راجدھانی ہے لیکن اس شہراورگردونواح کی سڑکوں کی خستہ حالی کاجائزہ لینے سے کسی بھی طوریہ کہنامناسب نہیں لگتاہے کہ یہ سڑکیں راجدھانی کی سڑکیں ہیں ۔اس میں شبہ نہیں کہ ریاستی حکومت محکمہ پی ڈبلیوڈی اوردیگرتعمیراتی ایجنسیوں کے ذریعے نئی سڑکوں کی تعمیراورپرانی سڑکوں کی مرمت کیلئے سالانہ لاکھوں نہیں بلکہ کروڑوں روپے صرف کرتی ہے لیکن زمینی سطح پرسڑکوں کی خستہ حالی سے ظاہرہوتاہے کہ سالانہ لاکھوں روپے سڑکوں کی خستہ حالی دورکرنے یاتعمیرکیلئے صرف کاغذات میں ہی خرچ ہوتے ہیں اورزمینی سطح پرخستہ حال سڑکوں کی مرمت کی طرف متعلقہ محکمہ کوئی خاطرخواہ توجہ نہیں دیتاہے ۔سب ڈویژن نارتھ جموں اورتحصیل بھلوال کے تحت برن تااگورسڑک لگ بھگ بارہ کلومیٹرسڑک ان دنوں اس قدرخستہ حالی کی شکارہے کہ اس پرسفرکرنانہ صرف مسافروں کیلئے باعث نز ع ہے بلکہ گاڑی مالکان کیلئے بھی گھاٹے کاسوداہے۔شبیراحمدنامی ایک شخص نے بتایاکہ جموں سے اگورکی طرف جاتے ہوئے بھلوال سے آگے برن تااگوراس قدرٹوٹ پھوٹ کاشکارہوچکی ہے کہ اس پرگاڑی چلانامشکل ہی نہیں بلکہ ناممکن ہوگیاہے۔انہوں نے کہاکہ ہرروزسینکڑوں دوپہیہ ، چارپہیہ اورمیٹاڈور(منی بسیں) اس سڑک سے ہوتی ہوئی اگورپہنچتی ہیں اوریہ سڑک گزشتہ ایک سال سے خستہ حالی کی شکارہے لیکن باوجوداس کے انتظامیہ کی طرف سے سڑک کی حالت زارکوبہتربنانے کیلئے کوئی خاطرخواہ اقدامات نہیں اٹھائے جاتے۔یہ سڑک سیری ،امب ،گھروٹہ ، برن ،بھلوال،جنڈیال، اگور،رانجن، شبا،پاٹا،دبڑمیرہ،متھوار،دھنوں رابطہ کے دیہات کیلئے لائف لائن ہے لیکن اس کے باوجودضلع انتظامیہ اورمحکمہ تعمیرات عامہ کی ناقص کارکردگی کے سبب سڑک کی مرمت کی طرف متعلقہ حکام توجہ نہیں دے رہاہے ۔
سنیل کمارنامی ایک شخص نے کہاکہ اس سڑک پربڑی گاڑیوں کاچلناہی مشکل ہے توایسے میں اگرکسی شخص کے پاس موٹرسائیکل یاکوئی دوسری دوپہیہ گاڑی ہوتواس کابرن سے اگورتک کاسفرنہایت ہی مشکلات میں گزرتاہے۔انہوں نے کہاکہ برن سے اگورتک سڑک پرکوئی بھی جگہ ایسی نہیںہے جہاں پوری سڑک دکھائی دیتی ہو۔انہوں نے کہاکہ سڑک جگہ جگہ سے ٹوٹ چکی ہے اوراس میں کھڈے پڑچکے ہیں جومسافروں کیلئے باعث عذاب ہیں۔غلام رسول نامی ایک شخص نے کہاکہ اگرچہ جموں کوراجدھانی کہاجاتاہے لیکن یہاں کی برن تااگورسڑک کی خستہ حالت کودیکھ کریہ کہنے میں شرم محسوس ہوتی ہے کہ یہ سڑک راجدھانی شہرکی کوئی سڑک ہے۔ذرائع کے مطابق سڑک کی مرمت کیلئے محکمہ تعمیرات عامہ نے ٹینڈرنکالاتھاجوکسی وجہ سے کینسل کردیاگیاہے ۔انہوں نے کہاکہ نہ ضلع ترقیاتی کمشنر جموں اور نہ ہی صوبائی کمشنرجموں کبھی اس سڑک کاجائزہ لیتے ہیں جس کاخمیازہ اس سڑک پرآئے روزمجبورہوکرسفرکرنے والے مسافروں کوبھگتناپڑرہاہے۔ضلع جموں کے دیہی علاقہ جات کے لوگوں نے انتظامیہ سے پرزورمانگ کی ہے کہ برن تااگورسڑک کی خستہ حالی کودورکرکے لوگوں کی پریشانی کاازالہ کیاجائے اورساتھ ہی یہ انتباہ دیاکہ اگرانتظامیہ نے سڑک کی مرمت کرکے اس پرتارکول نہ بچھانے کیلئے جلدازجلد اقدامات نہ اٹھائے تولوگ انتظامیہ کیخلاف سڑکوں پرآکراحتجاج کرنے پرمجبورہوجائیں گے۔