نامکمل ترقیاتی پروجیکٹ ترجیحی بنیادوں پر پایہ تکمیل تک پہنچائے جائیں

سرینگر//صوبائی کمشنر کشمیر نے تمام ضلع ترقیاتی کمشنروں کو کرگل اور لیہہ سمیت وادی کے مختلف علاقوں میں نامکمل پروجیکٹوں کی مقررہ وقت میں تکمیل کو یقینی بنانے کی ہدایت دی ۔صوبائی کمشنر نے یہ ہدایات سنیچرکو ایک میٹنگ کے دوران دیں جس میں لیہہ اورکرگل سمیت وادی بھر کے تمام نامکمل ترقیاتی پروجیکٹوں کا جائزہ لیا گیا،جن کی تکمیل پر 8000 کروڑ روپے خرچ کے جارہے ہیں۔ انہوںنے واٹر سپلائی سکیموں،اری گیشن وفلڈ کنٹرول،سڑک رابطوں، پلوں، عمارتوں،بجلی اورصحت سمیت تمام محکموں سے جُڑ ے نامکمل پروجیکٹوں کے بارے میں ایک رپورٹ تیار کرنے اور رپورٹ کو یکم اکتوبر2018ء تک صوبائی کمشنر کے دفترمیں بھیجنے کی ہدایت دی تاکہ اس سلسلے میں آگے کی کارروائی عمل میںلائی جاسکے۔صوبائی کمشنر نے ایس ایم سی اور چیف انجینئر یو ای ای ڈی کو شہر سرینگر میں ناکارہ ڈرینیج سسٹم کے بارے میں تفصیلی رپورٹ دینے کی ہدایت دی تاکہ بہتر ڈرینیج سسٹم کی تعمیر کو یقینی بنایا جاسکے جس سے لوگوں کو بارشوں کے ایام کے دوران راحت ملے۔تمام چیف انجینئروں پر لازم ہے کہ وہ متعلقہ ترقیاتی کمشنروں کو رُکے پڑے پروجیکٹوں کے بارے میں مفصل جانکاری فراہم کریں۔صوبائی کمشنر نے ترقیاتی کمشنروںکو ہدایت دی کہ وہ نامکمل پروجیکٹوں کی فوری تکمیل کو ترجیحی بنیادوں پر یقینی بنائیں اورپروفارما کے مطابق یکم اکتوبر2018ء تک تخمینہ سے متعلق جانکار ی فراہم کریں۔میٹنگ میں ضلع ترقیاتی کمشنر سرینگر،وی سی لائوڈا ،سی ای او ارا، وی سی لائوڈا ،مختلف محکموں کے چیف انجینئران کے علاوہ میکنیکل انجینئرینگ محکمہ ،جوائنٹ کمشنر ایس ایم سی اور اسسٹنٹ کمشنر کے علاوہ دیگر متعلقہ آفیسران بھی موجود تھے جب کہ لیہہ اورکرگل سمیت وادی کے تمام ضلع ترقیاتی کمشنروں نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے میٹنگ میں شرکت کی۔