نالہ ورنو پر پل خستہ ہونے کاشاخسانہ | ملہ گنڈ سیورلولاب کے لوگوں کو مشکلات کاسامنا

کپوارہ//  لولاب کپوارہ میں نالہ ورنو پر پل بنائے گئے عارضی پل کی حالت خستہ ہونے کی وجہ سے ملہ گنڈ سیور کے لوگو ں کو شدید دقتو ں کا سامنا ہے اورآج اس گائوں میں گاڑیاں داخل نہیں ہوسکتی ۔ملہ گنڈ سیور کے لوگو ں کا کہنا ہے کہ لولاب وادی کا یہ علاقہ تعمیر و ترقی کے لحاظ سے آج تک نظر انداز کیا گیا اور اس علاقہ میں بنیادی سہولیات کا فقدان ہے ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے ملہ گنڈ سیور علاقہ میں نالہ ورنو پر پل نہ ہونے کی وجہ سے لوگ بہتر سڑک رابطے سے محروم ہیں ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ نالہ ورنو پر 17سال قبل سدبھاونا سکیم کے تحت ایک لکڑی کا پل تعمیر کیا گیا لیکن اب مذکورہ پل انتہائی خستہ ہوچکا ہے اور اس پل سے لوگو ں کا عبور ومرور مشکل بن گیا ہے ۔ملہ گنڈ سیور کے لوگو ں نے مزید کہا ہے کہ پل کی عدم دستیابی کی وجہ سے آج بھی اس گائو ں میں گا ڑیاں دا خل نہیں ہوسکتی ہیں ۔مقامی لوگو ں کا یہ بھی کہنا ہے کہ انہیں روزانہ اس نالہ کو عبور کر نے کے لئے زندگی کو رواں دواں رکھنا پڑتا ہے اور جب نالہ میں بارشو ں کے دوران پانی کا بہائو تیز ہوتا ہے تو ان کی زندگی تھم جاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ بارشو ں کے دوران وہ اپنے ہی گھرو ں میں بیٹھتے ہیں جبکہ چھوٹے سکولی بچے تعلیم حاصل کرنے کے لئے سکول نہیں جا سکتے ہیں اور نہ ہی بیمار افراد اسپتال تک پہنچ پاتے ہیں ۔ملہ گنڈ سیور کی آبادی میں معاملہ کو لیکر سخت ناراضگی پائی جارہی ہے اورانہوں نے اب تک کئی بار انتظامیہ تک اپنی بات پہنچائی لیکن کوئی بھی کاروائی عمل میں نہیں لائی گئی ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ نالہ ورنو پر رابطہ پل کی عدم دستیابی کی وجہ سے ان کی زندگی بے معنی ہو کر رہ گئی ہے تاہم متعلقہ محکمہ کو رابطہ پل کی تعمیر کے لئے درخواست پیش کی لیکن آج تک ان کی داد رسی نہیں ہوئی ۔ایک مقامی شہری فاروق احمد کا کہنا ہے کہ مقامی سیاست دانو ں نے بھی پل کی تعمیر کے لئے آج تک جھوٹی تسلیا ں دیکر ووٹ حاصل کئے تاہم ان کے مشکلات کا ازالہ ابھی نہیں ہوا ۔