ناظم تعلیمات نے اوڑی میں صورتحال کا جائزہ لیا

اوڑی//محکمہ تعلیم نے اُن تمام سکولوں میں فوری طور اصلاحی کلاسز شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے جن کی کارکردگی حالیہ بورڑ امتحانات میں نا تسلی بخش رہی ہے۔ اس سلسلے میں وزیر تعلیم سید محمد الطاف بخاری کی ہدایت پر آج ناظم تعلیمات کشمیر ڈاکٹر جی این اِتو نے اسی آئی ای کشمیر کے سربراہ محبوب حسین اور دیگر سینئر افسران کے ہمراہ وادی کے دور دراز علاقے اوڑی کا دورہ کیا ۔ دورے کے دوران اُنہوں نے ہائی سکول دنی سیداں اوڑی میں کل سے باضابطہ طور اصلاحی کلاسز شروع کرنے کی ہدایت دی۔ ناظم تعلیمات نے مختلف سکولوں کا دورہ کرنے کے دوران سول سوسائٹی کے افراد سے بات کرکے اُن کے مسائل سنے اور موقعہ پر ہی اُن کے ازالے کے لئے ہدایات دیں۔ انہوں نے سی ای او بارہمولہ کو ہدایت دی کہ ہائی سکول دنی سیداں میں مکمل تدریسی عملے کو یقینی بنایا جائے۔ اس دوران ناظم تعلیمات نے سکول کی دیوار بندی اور گراونڈ کی مرمت فوری طور کئے جانے کا یقین دلایا۔ سول سوسائٹی سے بات کرتے ہوئے ناظم تعلیمات اور ضلع انتظامیہ کے افسران نے والدین سے بچوں کو بچہ مزدوری کروانے سے اجتناب کرنے کی تاکید کی تاکہ اُن کی حاضری سکولوں میں صد فیصد یقینی بن کر بہتر نتائج سامنے آجائیں اور بچہ مزدوری کو روکنے کے قانون کی پیروی یقینی بن جائے۔ بعد میں ناظم تعلیمات نے گرلز ہائر سیکنڈری سکول اوڑی میں منعقدہ ایک اور تقریب میں شرکت کرکے اساتذہ، طلباء اور ان کے والدین سے بات کی ۔ اس دوران طالب علموں اور سول سوسائٹی نے مختلف معاملات کے حوالے سے ڈائریکٹر موصوف کو آگاہ کیا۔ ناظم تعلیمات نے تقریب میں بولتے ہوئے جہاں اساتذہ کو اپنے فرائض تندہی سے انجام دینے کی تلقین کی وہیں انہوں نے طالب علموں کو تعلیم کی طرف مکمل طور راغب ہونے کی تاکید کی۔انہوں نے والدین کی طرف سے اُبھارے گئے مختلف معاملات کو حل کرنے کی موقعہ پر ہی ہدایات دیں۔ناظم تعلیمات کے ہمراہ SIEکشمیر کے سربراہ محبوب حسین ،سی ای اوبارہمولہ عبدالاحد انشاء،او ایس ڈی کلچرل ونگ غلام نبی شاکراور سٹیٹ میڈیا کارڈی نیٹر تھے۔