نئے گن لائسنسوں پر روک

سرینگر //ریاستی حکومت نے نئی گن لائسنس کی اجرائی پر روک لگا کر یکم جنوری 2017سے 23فروری 2018تک اجرا کی گئیں تمام لائسنس کو منسوخ کرنے کے احکامات صادر کئے ہیں۔ محکمہ امور داخلہ کی جانب سے  جاری کئے گئے احکامات میں بتایا گیا ہے کہ سی آئی ڈی اور پولیس کی جانب سے یہ بات سامنے لائی گئی ہے کہ کئی اضلاع میں  بڑے پیمانے پر گن لائسنس اجرا  کئے گئے ہیں جس کے بعد فائنسانشل کمشنر کے بی اگروال کے ذریعے تحقیقات عمل میں لانے کا حکم دیا گیا۔اسکے بعد مرکزی وزارت داخلہ اور قومی سطح پر گن لائسنس سے متعلق اعدادوشمار کی تفصیلات سے بھی جانکاری حاصل کی گئی ۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ یہ بات سامنے آئی ہے کہ کئی اضلاع میں غیر قانونی طریقے سے لائسنس کی اجرائی عمل میں لائی گئی ہے لہٰذا کشمیر اور جموں کے صوبائی کمشنروں کو ہدایات دی جاری ہیں کہ وہ کشتواڑ، کپوارہ،گاندربل، لیہہ،راجوری،رام بن،ریاسی اور ادہم پور میں یکم جنوری 2017سے 23فروری 2018تک اجراء کی گئی تمام گن لائسنس کی چھان بین کرے اور اسکی رپورٹ ایک ماہ کے اندر اندر پیش کریں۔ان سبھی اضلاع، جن کا ذکر اوپر کیا گیا ہے، کے ڈپٹہ کمشنروں سے کہا گیا ہے کہ وہ کوئی گن لائسنس اجراء نہ کریں۔دیگر اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں سے کہا گیا ہے کہ وہ گن لائسنس اجراء کرتے وقتتمام قانونی پہلوئوں کو مد نظر رکھیں۔