نئی حد بندی سے قبل پہاڑیوں کو ایس ٹی کادرجہ دینے کی مانگ

 تھنہ منڈی //متحدہ پہاڑی محاذ اور پہاڑی ویلفیئر فورم نے بھاجپا کی مرکزی حکومت سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ اسمبلی حلقوں کی نئی حد بندی اور اسمبلی انتخابات سے قبل ہی پہاڑی طبقہ کو ایس ٹی کا درجہ دیا جائے تاکہ اس طبقہ کے غریب لوگوں کو فائدہ مل سکے ۔تھنہ منڈی ایک پریس کانفرنس کے دوران صدر پہاڑی فرنٹ جہانگیر عالم خان اور انجینئر ارشد اعجاز خان نے پہاڑی طبقہ کو چار فیصد ریزرویشن دینے کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہاکہ مرکزی حکومت کو چاہئے کہ وہ پہاڑیوں کیساتھ کئے گئے وعدوں کو پورا کرئے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر اس مرتبہ بھی ایس ٹی کے دیرینہ مطالبہ کو پورا نہ کیا گیا تو پہاڑی قبیلہ نہ صرف جموں و کشمیر کے اندر سیاسی طور پر بے اختیار ہو جائے گا بلکہ تعلیمی اور معاشی طور پر بھی بہت پچھڑ جائے گا۔مقررین نے کہا کہ اسمبلی حد بندی سے قبل اگر پہاڑیوں کو ایس ٹی کا درجہ نہ دیا گیا تو براہ راست اس قبیلہ کو ناقابل تلافی نقصان اٹھانا پڑے گا۔ انھوں نے پہاڑی ریزرویشن کیلئے انکم سلیب کو بھی خارج کرنے کا مطالبہ کیا ۔ نوجوان لیڈر اور سماجی کارکن انجینئر ارشد اعجاز خان نے بھی لیفٹیننٹ گورنر انتظامیہ اور مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ سب سے پہلے پہاڑیوں کو ایس ٹی کا درجہ دیں تاکہ ا ن کی مانگ پوری ہوسکے ۔