میڈیکل کالج راجوری و دیگر برفانی علاقوں کے سرکاری ہسپتال

راجوری //سرکاری ہسپتالوں میں بہتر بنیادی سہولیات فراہم کرنے کے سرکاری حکام کے بلند و بانگ دعوے راجوری ضلع میں بے نقاب ہوتے نظر آرہے ہیں جہاں تمام سرکاری ہسپتالوں میں ہیٹنگ کے مناسب انتظامات کا فقدان ہے اور برفباری والے علاقوں کے ہسپتال اس کمی کی وجہ سے سب سے زیادہ متاثر ہیں۔یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ راجوری ضلع کی پانچ تحصیلیں برفباری کی زد میں ہیں جن میں تھنہ منڈی، درہال ،کوٹرنکہ ،خواص اور منجاکوٹ شامل ہیں۔راجوری ضلع میں پیر پنجال کے برف کے پہاڑ کہلانے والے تمام بالائی علاقے تھنہ منڈی ،درہال اور کوٹرنکہ ان تین تحصیلوں کے تحت آتے ہیں جہاں سردیوں کے موسم میں کم سے کم درجہ حرارت صفر ڈگری کے قریب رہتا ہے اس کے باوجود ان علاقوں کے سرکاری ہسپتالوں میں حرارت کا کوئی انتظام نہیں ہے۔حکام کی لاپرواہی کا اندازہ ضلع کے کنڈی میڈیکل بلاک کے ہسپتالوں کی حالت سے لگایا جا سکتا ہے جس میں تحصیل کوٹرنکہ کا پورا علاقہ اور تحصیل درہال کے کچھ حصے آتے ہیں۔کنڈی میڈیکل بلاک میں، ترالہ، پیڑی اور بدھل نام کے تین پرائمری ہیلتھ سینٹر اور ایک کمیونٹی ہیلتھ سینٹر قائم ہے ۔اس علاقے میں سردیوں میں چند فٹ تک برفباری کے باوجود، مریضوں اور ان کے تیمار دار وں کوٹھنڈک سے بچانے کیلئے ہیٹنگ کا کوئی مناسب انتظام نہیں ہے۔ان تمام ہسپتالوں میں گیس ہیٹر کے استعمال جیسے ہیٹنگ نظام کا صرف عارضی انتظام کیا جاتا ہے ورنہ شدید سردی میں مریضوں اور ان کے تیمار داروں کی زندگی خدا کے رحم و کرم پر رہتی ہے۔کوٹرنکہ کے ایک مقامی شہری فاروق احمد نے بتایا کہ سردیوں میں ہسپتالوں میں ہیٹنگ کا کوئی معقول بندوبست نہیں ہوتا جسکی وجہ سے مریضوں کو شدید مشکلات درپیش رہتی ہیں ۔بلاک میڈیکل آفیسر کنڈی ڈاکٹر اقبال ملک نے بتایا کہ ان کے پاس کوئی مستقل سینٹرل ہیٹنگ سسٹم نہیں ہے۔انہوں نے بتایا کہ وہ اس سلسلہ میں عارضی بندوبست کر تے ہیں ۔گور نمنٹ میڈیکل کالج راجوری اور اس سے منسلک ہسپتال کا حال ہی ایسا ہی ہے ۔ہسپتال کے ایک سرکاری ذرائع نے بتایا کہ گورنمنٹ میڈیکل کالج راجوری میں ہیٹنگ کا کوئی انتظام نہیں ہے۔’گائنی وارڈ اور چائلڈ کیئر یونٹ میں ہیٹنگ کا کچھ انتظام باقی ہے لیکن وہ بھی عارضی بنیادوں پر کیا گیا ہے ۔ذرائع نے مزید بتایا کہ اس کے علاوہ گورنمنٹ میڈیکل کالج میں ہیٹنگ کا کوئی دوسرا متبادل انتظام نہیں ہے جو کہ راجوری ضلع کی پوری آبادی کی صحت کی ضروریات کو پورا کرنے کا ایک اہم ہسپتال بھی ہے جبکہ اس ہسپتال میں سرحدی ضلع پونچھ کے مریضوں کی بھی ایک بڑی تعداد ریفر ہو کر علاج معالجہ کیلئے آتی ہے ۔گور نمنٹ میڈیکل کالج راجوری کے سپر ناٹینڈنٹ ڈاکٹر محمود بجاڑ نے تصدیق کرتے ہوئے کہاکہ ہسپتال میں ہیٹنگ کا کوئی مستقبل بندوبست انتظام نہیں ہے ۔