میوہ جات کی برآمدگی ٹرکوں کو دن رات چلنے کی اجازت :صوبائی کمشنر

سرینگر//صوبائی کمشنر کشمیر بصیر احمد خان نے صوبہ کشمیر کے تمام ضلع ترقیاتی کمشنروں کو ہدایت دی ہے کہ میوے سے بھرے ٹرکوں کو دن رات خصوصاً رات کے دوران آج سے ہی قومی شاہراہ پر بغیر روکے جموں کی طرف جانے کی اجازت دی جانی چاہیے۔اس سلسلے میں منعقدہ ایک میٹنگ کے دوران بتایا گیا کہ وادی میں مختلف اقسام کے میوے کی 18لاکھ میٹرک ٹن کی سالانہ پیداوار ہوتی ہے جس میں سے 11لاکھ میٹک ٹن ملک کے مختلف حصوں کی سپلائی کئے جارہے ہیں۔اس مقصد کے لئے یومیہ 1000ٹرکوں کی ضرورت پڑتی ہے اورہر ایک ٹرک 9ٹن میوہ لے جاسکتا ہے۔صوبائی کمنرنے ترقیاتی کمشنروں کو لداخ سپلائی کیلئے مخصوص خالی ٹرکوں اوایف سی آئی سٹوریج کے لئے ٹرکوں کو میوے کی بیرون ریاست ٹرانسپورٹیشن مکمل ہونے تک استعمال میںلانے کی ہدایت دی۔تمام ضلع  ترقیاتی کمشنروں کو سرکاری کی طرف سے ٹرانسپورٹیشن کے لئے ترمیم شیدہ ریٹوں کو من وعن عملدر آمد کرانے کی ہدایت دی گئی ۔مقررہ ریٹوں سے زیادہ ریٹ طلب کرنے والے ٹرک ڈرائیوروں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کے بھی احکامات صادر کئے گئے۔صوبائی کمشنر نے پولیس،ٹریفک آفیسران اورتمام اے آر ٹی اووز کو اندرونی سڑکوں اورقومی شاہراہ پر میوے سے بھرے ٹرکوں کی بلا خلل نقل وحمل یقینی بنانے کی ہدایت دی۔انہوںنے ترقیاتی کمشنروں کو روزنہ بنیادوں پر میوے کی ٹرانسپورٹیشن کی نگرانی کرنے اور اس سلسلے میں صوبائی کمشنر کے دفتر میں رپورٹ پیش کرنے کی بھی ہدایت دی تاکہ ضرورت پڑنے پر لازمی کارروائی کی جاسکے۔میٹنگ میں اے ڈی سی سرینگر ،ڈائریکٹر ہارٹیکلچر (پلاننگ اینڈ مارکیٹنگ ) ڈائریکٹر ہارٹیکلچر (پروڈکشن) جی ایم ایس آر ٹی سی ،ایڈیشنل ٹرانسپورٹ کمشنر ،آر ٹی او کشمیر اورایس ایس پی ٹریفک کے علاوہ فروٹ گروورس ایسوسی ایشن کے نمائندے موجود تھے۔جب کہ صوبہ کشمیر کے ترقیاتی کمشنروں نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے میٹنگ میں شرکت کی۔