مینڈھر قصبہ کے بنکر وں میں کئی فٹ پانی جمع

مینڈھر //ضلع پونچھ کے سرحدی قصبہ مینڈھر کے ملحقہ علاقوں میں تعمیر کردہ کمیونٹی بنکروں کی تعمیر گزشتہ کئی عرصہ سے مکمل ہی نہیں کی جارہی ہے جس کی وجہ سے ان زیر تعمیر بنکروں میں کئی فٹ تک پانی جمع ہوا ہے جبکہ مینڈھر قصبہ کی حدود میں تعمیر کردہ کچھ بنکروں کو اس وقت ٹائلٹ کے طورپر استعمال بھی کیاجارہا ہے ۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ مینڈھر کے سب ڈسٹر کٹ ہسپتال کے قریب2برس قبل ایک کمیونٹی بنکر کی تعمیر عمل میں لائی گئی تھی لیکن اس کا ڈھانچہ تعمیر کرنے کے بعد اس کو مکمل ہی نہیں کیاجارہا ہے جس کی وجہ سے بنکر میں کئی میٹر تک بارشوں کاپانی جمع ہو چکا ہے ۔مقامی معززین کہا کہ قصبہ اور تعمیراتی ایجنسیوں کے دفتروں کے نزدیک اگر بنکروں کی مذکورہ نوعیت کی غیر معیاری تعمیر ات عمل میں لائی گئی ہے تو سرحدی اور مشکل علاقوں میں کی گئی تعمیر ات کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے ۔مکینوں نے بتایا کہ تعمیراتی ایجنسیوں کی جانب سے بنکروں کی تعمیر انتہائی غیر معیاری کی گئی ہے جبکہ ان کو مکمل کرنے کیلئے کئی برسوں سے کوئی دھیان ہی نہیں دیا جارہاہے ۔غور طلب ہے کہ فائرنگ سے لوگوں کو محفوظ رکھنے کیلئے مرکزی حکومت کی جانب سے بنکروں کی تعمیر کا عمل شروع کیا گیا تھا لیکن دونوں ممالک کی افواج کے مابین ہوئے سیز فائر معائد ے کے بعد تعمیراتی عمل بھی سست روی کا شکار ہو گیا گیا ۔مقام لوگوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ تعمیراتی ایجنسیوں کو ہدایت جاری کی جائیں تاکہ بنکروں کو قابل استعمال بنایا جاسکے ۔