میسرہ بانو2ماہ کی بچی کو چھو ڑ گئی

یونسو (ہندوارہ)//یو نسو ہندوارہ کے رہنے والے محمد شعبان وازہ خطافلاس سے نیچے زندگی گزبسر کر رہا ہے اور گھر کو چلانے کیلئے اپنی بیٹی 25سالہ میسرہ کی شادی اپنے ہی گائو ں کے ایک لڑکے اشفاق احمد سے کی تاکہ وہ ان کی خدمت کر سکے ۔محمد شعبان وازہ نے اپنی بیٹی میسرہ کو اپنے ہی گھر میں رکھا اور اشفاق کو گھر داماد بنایا ۔لواحقین کا کہنا ہے محمد شعبان وازہ جس گھر میں رہتا ہے وہ بھی برسو ں سے گھر جمائی بن بیٹھا ہے اور اپنی لخت جگر کے جا ں بحق ہونے کے بعد اپنے ہوش و حواس کھو بیٹھا ہے کیونکہ میسرہ اس کی اکلوتی بیٹی تھی جس کو دیکھ کر وہ اپنی زندگی کے دن گزار رہا تھا ۔میسرہ جس نے زندگی کی 25بہاریں دیکھیں تھیں، نے دو مہینے قبل ایک ننھی سے بچی کو جنم دیا تھا۔میسرہ بانوکے جا ں بحق ہونے کے بعد علاقہ ماتم کدے میں تبدیل ہو گیا ہے اور دو ماہ کی ننھی سے بچی کو دیکھ کر ہر آ نکھ پر نم ہے اور ہر دل ملول و مضطرب ہے جبکہ پورے علاقہ میں سنا ٹا سا چھا یا ہو اہے ۔میسرہ کیوالد محمد شعبان اور اس کے شوہر اشفا ق احمد نے جس وقت جنازے کو کندھا دیا  تو اس دوران یونسو میں رقعت آ میز منا ظر دیکھنے کو ملے ۔علاقے کی خواتین سینہ کوبی کررہی تھیں۔ ہزاروں لوگوں نے اسکی نماز جنازہ میں شرکت کرکے اسے سپرد خاک کیا۔
 
 

انجینئر رشید کا احتجاجی مارچ

اشرف چراغ 
 
ہندوارہ //ممبر اسمبلی لنگیٹ انجینئر رشید نے یونسو میں جا ں ہوئی میسرہ بانوکی ہلاکت پر سخت مذمت کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ اس واقعہ کی غیر جانبدارانہ تحقیقات ہونی چایئے ۔انجینئر رشید نے جو ں ہی یو نسو میں خاتون کے جا ں بحق ہونے کی خبر سنی تو وہ فوری طور ہندوارہ پہنچ  گئے اور ایک جلوس کی صورت میں یو نسو کی طرف پیش قدمی کی تاہم فورسز کی بھاری جمعیت نے انہیں وہا ں جانے سے روک دیا جس کے بعد انجینئر نے ہندوارہ میں لو گو ں کیایک بڑی تعداد کے ساتھ احتجاج کیا۔انہوں نے وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی اورعمر عبد اللہ سے مخاطب ہوکر کہا کہ وہ یونسو میں ایک خاتون کی ہلاکت کا سخت نو ٹس لیں ۔
 
 

وزیراعلیٰ کا اظہار رنج و غم اور مذمت

نیوز ڈیسک
 
جموں//وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی نے کیلر شوپیاں میں ایک کیش وین کے ساتھ جارہے دو سیکورٹی گارڈس کی ہلاکت کی سخت مذمت کی ہے ۔ ایک بیان میں وزیر اعلیٰ نے اس واقعہ کو بدقسمتی سے تعبیر کیا جس میں عوام کے پیسے کی حفاظت پر مامور اہلکاروں کو ہلاک کیا گیا ۔محبوبہ مفتی نے ہندوارہ میں ایک خاتون کی ہلاکت پر بھی دُکھ اور صدمے کا اظہار کیا ہے۔انہوںنے کہا کہ وہ ہمیشہ تشدد کے منفی اثرات کے بارے میں خبردار کرتی آرہی ہے۔انہوں نے سول سوسائٹی سے ایک بار پھر اپیل کی کہ وہ آگے آکر نوجوانوں کا مستقبل محفوظ اور پُر امن بنائیں۔