میری مٹی، میرا دیش پروگرام ‘ میں منوج سنہا کی شرکت | نوجوانوں کو ترنگے پر فخر ریلی میں بڑے پیمانے پر شرکت کچھ لوگوں کیلئے کرارا جواب: لیفٹیننٹ گورنر

عظمیٰ نیوز سروس
سرینگر// لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے اتوار کو کہا کہ ترنگا ریلی میں بڑے پیمانے پر شرکت ان لوگوں کے لئے ایک بڑا جواب ہے، جنہوں نے ایک بار دعویٰ کیا تھا کہ اگر جموں و کشمیر میں دفعہ 370 کو منسوخ کیا گیا تو کوئی بھی ترنگا نہیں اٹھائے گا۔اتوار کو سرینگر میں ترنگا ریلی کی قیادت کرتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ آج ہر ہاتھ میں ترنگا اور ریلی میں لوگوں کا زبردست جوش و خروش وہ ہے جس کی ہر کشمیری برسوں سے ایک ساتھ ترس رہی ہے۔یہاں مشہور ڈل جھیل پر میگا “تیرنگا ریلی” کو جھنڈی دکھانے کے بعد لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ جو لوگ یہ کہتے ہیں کہ جموں و کشمیر میں کوئی بھی قومی پرچم نہیں اٹھائے گا، انہیں یہ احساس ہو گیا ہوگا کہ ہر نوجوان ترنگا سے محبت کرتا ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا، “سب سے بڑی تبدیلی یہ ہے کہ ہر شخص ترنگے کے فخر کی حفاظت کرنا چاہتا ہے اور جموں و کشمیر اور قوم کی ترقی میں اپنا حصہ ڈالنا چاہتا ہے۔”لیفٹیننٹ گورنر کی قیادت میںسینکڑوں مرد، خواتین اور بچوں کے علاوہ سیکورٹی اور سول انتظامیہ کے عہدیداروں کو ڈل جھیل کے کنارے بلیوارڈ روڈ پر ترنگے کی بلندی پر مارچ کرتے ہوئے دیکھا گیا۔انہوں نے کہا”آج پورا جموں و کشمیر ترنگا یاترا میں حصہ لے رہا ہے، ترنگا آسمان پر بلندی پر اڑ رہا ہے، گلیاں جوش و خروش سے بھری ہوئی ہیں، مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں مردوں، خواتین، نوجوانوں اور بزرگ شہریوں کی شرکت ملک کے لیے بھی ایک تحریک ہے‘‘۔انہوں نے ساتھ ہی کہا، جموں و کشمیر ایک روشن مستقبل کی طرف بڑھ رہا ہے۔ زندگی کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگ ایک عزم کے ساتھ جموں و کشمیر کے مستقبل کو تشکیل دینے کیلئے کام کر رہے ہیں۔آئیے ساتھ چلیں، اپنے دلوں کو ایک ساتھ دھڑکنے دیں، یہ ترنگا یاترا کا عزم ہے جو سماج کے ہر طبقے کو ایک جذبات میں باندھ دیتا ہے۔ لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ پلوامہ سے پونچھ تک، کولگام سے کٹھوعہ تک، جموں سے سری نگر تک، 20 اضلاع کے تمام گھر ترنگا منا رہے ہیں اور لہرا رہے ہیں۔

ترنگا یاترا ‘‘ جھنڈی دِکھا کر روانہ ، باٹونیکل گارڈن تک واکتھون میں شامل

عظمیٰ نیوز سروس

سرینگر// لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا نے سری نگر میں ’’ ترنگا یاترا‘‘ کو جھنڈی دِکھا کر روانہ کیا اور کے آئی سی سی سے بوٹینیکل گارڈن تک واکتھون میں ہزاروں شہریوں کے ساتھ شامل ہوئے۔لیفٹیننٹ گورنر نے آزادی پسندوں، شہیدوں کو خراج عقیدت پیش کیا اور طلبا، پی آر آئی کے ارکان اور عوام کو پنچ پران سے عہد کروایا۔ انہوں نے آزادی پسندوں، ان کے اہل خانہ سے بھی بات چیت کی اور ان سے آشیرواد لیا۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا”میں وطن کے لیے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والے ہمارے آزادی کے متوالوں اور ہیروز کی قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کرتا ہوں۔ ان کی شہادت کی یادیں ہمیشہ ہمارے دلوں میں زندہ رہیں گی اور ہمیں متاثر کرتی رہیں گی‘‘۔ لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ یہ ہمارے بہادروں کی قربانی کی علامت ہے، نئے خوابوں، جموں و کشمیر کے لوگوں کی نئی امنگوں کی عکاس ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ وسودھا وندھن پروگرام ہمیں فطرت کے تئیں ہمارے فرض کی یاد دلاتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہر گائوں میں 75 پودے لگانے اور امرت واٹیکا تیار کرنے کی مہم پائیدار ترقی کی کوششوں کے لیے خود کو دوبارہ وقف کرنے کا ایک موقع ہے۔اس بات پر زور دیتے ہوئے کہ پوری قوم، پوری دنیا ایک خاندان ہے، لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ معاشرے میں امن اور خوشحالی ہمارا مشترکہ مقصد ہونا چاہیے۔لیفٹیننٹ گورنر نے پی آر آئی ممبران پر زور دیا کہ وہ اس مہم میں طلبا، نوجوانوں اور مقامی باشندوں کو بڑی تعداد میں شامل کریں۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی رہنمائی کے تحت، انتظامیہ عظیم شخصیات، شہدا اور عظیم روحوں کی یادوں کا احترام کرنے کے لیے پرعزم ہے جنہوں نے جموں و کشمیر کے پرامن اور خوشحال مستقبل کی تعمیر کے لیے اپنی زندگی وقف کر دی ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے آزادی کا امرت مہوتسو کے تحت سری نگر میں انسانی زنجیر کا ریکارڈ توڑنے پر طلبا، عوام اور ضلع انتظامیہ کو بھی مبارکباد دی۔ آج کی تقریب میں 15,000 سے زائد افراد نے شرکت کی۔