میری آوا ز سنو !

کوئی میرا انٹرویو بھی لیتا،کوئی مجھے بھی مبارکباد دیتا ۔کوئی میرا بھی نام پوچھتا؟یہاں تو بس نمبرات کی پڑی ہے۔میرے جذبات،احساسات اور سچائی کی کوئی قیمت ہی نہیں ۔امی نے بھی دن بھر کچھ نہیں کھایا،ابو کہہ رہے ہیں کہ میں نے اُن کو کہیں کا نہیں چھوڑا ہے ۔ میرے بھائی جان اور بہنا بھی دن بھر نم آنکھوں سے کہتے رہے کہ تم نے ہمارا باہر نکلنا بھی دشوار کر دیا ہے ۔میں گنہگار ہوں!اپنوں کا گنہگار!! آپ یہی سوچ رہے ہونگے کہ میرا گناہ کیا ہے ۔ میرا گناہ یہی ہے کہ میرا نام اُن ٹاپ امیدواروں میں نہیں ہے، جن کی تصاویر اشتہارات کے تحت اخبارات کی زینت بن چکی ہیں ۔میری تصویر نہ فیس بک پر آئی ہے اور نہ کسی نے میرا انٹرویو لیا ہے ۔
امی اور ابو نے خود پانچویں سے آگے پڑھائی ہی نہیں کی ہے،لیکن آج صبح سے ہی مجھے کہہ رہے ہیں کہ تم سال بھر کیا کرتےرہے۔دیکھو صبیہ اور انور نے کتنے اچھے نمبرات لائے ہیں ۔میں اُن کو کیسے سمجھاؤں کہ زندگی کی کامیابی کا راز صرف  Distinction اور ڈاکٹر ،انجینئربننے میں ہی نہیں ہے۔ سماج میں ایک اچھے ٹیچر،اچھے پروفیسر، اچھے تاجر اور اچھے لیڈر کی بھی اتنی ہی ضرورت ہے۔
بھائی جان ایک کمپنی میں منیجر کے پوسٹ پر ہیں۔پچاس ہزار ماہوار سیلری ہے ۔کمپنی کی گاڑی ہے اور بڑی شان اور عزت سے جی رہے ہیں ۔ پھر بھی پتہ نہیں کیوں میرے نمبرات کے پیچھے کیوں پڑے ہیں ۔۔۔ابو کو کھانے کی فرصت تک نہیں ملتی، دوکان پر دو دو ملازم رکھے ہیں۔ مگر میرے نمبرات %98کیوں نہیںہیں، اِسی پہ صبح سے گھر میں بوال مچا ہوا ہے۔کوئی میری کامیابی پر دھیان ہی نہیں دے رہا ہے،جو بھی رشتہ دار فون کرتا ہے ،یہاں سے کہا جارہا ہے ۔ہاں! پاس ہی ہے مگر نمبرات صرف 389 ہے ۔اوپر سے یہ سلیمہ آنٹی! پچھلے دو سالوں سے اس کا بیٹا سلمان سرینگر میں اپنے باپ کے پیسوں سے عیش کر رہا ہے اور یہ سمجھ رہی ہے کہ وہ وہاں سے آکر کوئی تاریخ رقم کر دے گا۔ دن بھر امی کو نہ جانے کیا کیا اڈن گھائیاں بتاتی رہی اور اس کا پارہ بڑھتا ہی چلا جارہا ہے۔۔۔۔۔اب امی کو کون سمجھائے کہ اُس نے مجھ سے بائیس نمبر کم لئے تھے ۔ یہ خالد سر کا کمال ہے جو انہوں نے امتحان میں اُس کی غیر قانونی شرارتوں کونظر انداز کیا تھا ۔
خیر یہ تو پانچ چھ دن سہنا ہی ہے۔ بہتر ہے کہ اپنے آگے کی پڑھائی پر دھیان دو۔
ان سب بھائی بہنوں کو بھی مبارک بہت بہت مبارک ،جنہوں نے ٹاپ کیا ہے اور ان کو بھی جن کا نام میری طرح سوشل میڈیا کے کسی پیج پر نہیں آیا اور جو میری طرح گنہگارہیں!
(رحمت کالونی شوپیان)