میرواعظ کی نظر بندی حکومت کی بوکھلاہٹ:امام حی

 سرینگر//امام حی مولانا سید احمد سعید نقشبندی نے مزاحمتی قائدین بالخصوص میرواعظ محمد عمر فاروق کی خانہ نظربندی کو حکومت کی بوکھلاہٹ سے تعبیر کیا ہے۔مولانا مرکزی جامع مسجد میں نماز جمعہ سے قبل ایک عوامی اجتماع سے خطاب کررہے تھے۔انہوں نے کہا کہ میرواعظ کشمیر کو خانہ نظربند کرنے اور مذہبی ذمہ داریوں سے بھی دوررکھنا قابل مذمت ہے۔امام حی نے ڈی ایس پی قتل کیس میں گرفتار نوجوانوں کی رہائی پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اُن نوجوانوں کو جرم بے گناہی کی سزادی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ مذکورہ نوجوانوں کی بے گناہی عدالت میں بھی ثابت ہوئی اسلئے انہیں فوری طور رہا کیا جائے۔مولانا نے ڈاکٹر قاسم فکتو،غلام قادر بٹ اور مسرت عالم سمیت سبھی محبوسین کی رہائی کا مطالبہ کیا۔