میرواعظ مولانا محمد یوسف شاہ کا یوم وصال | جامع مسجد سرینگر میں دعائیہ مجلس، ڈاکتر فاروق اور مولانا ہمدانی کا خراج عقیدت

نیوز ڈیسک
سرینگر// عوامی مجلس عمل کے زیر اہتمام مرکزی جامع مسجد سرینگر میں مفسر قرآن میرواعظ کشمیر مولانا محمد یوسف شاہ کے 55ویں یوم وصال کی مناسبت سے ایک خصوصی دعائیہ مجلس کا انعقاد کیا گیا۔اس پر وقار قرآن خوانی ، ایصال ثواب اور دعائیہ مجلس میں ہزاروں عقیدت مندوں اور محبین نے شرکت کرکے خصوصی دعائوں کا اہتمام کیا گیا۔اس موقعہ پر عوام نے سربراہ تنظیم میرواعظ محمد عمر فاروق کی مسلسل نظر بندی کے خلاف شدید مایوسی  کا اظہار کیا۔عوامی حلقوں نے ماہ رمضان کے آخری جمعہ ، جمعتہ الوداع اور شب قدر کی مقدس تقریبات کے پیش نظر میرواعظ کشمیر کی غیر مشروط رہائی کا مطالبہ دہرایا تاکہ موصوف اپنی منصبی ذمہ داریاں انجام دے سکیں۔اس دوران نیشنل کانفرنس صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ مولانا محمد یوسف شاہؒ کے یوم وصال پر مرحوم کوخراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہاکہ مرحوم  ایک عالم باعمل، سرکردہ مبلغ اور ریاست کے ممتاز دینی شخصیت کے مالک تھے۔ نائب صدر عمر عبداللہ نے بھی مرحوم شاہ صاحبؒ کی دینی خدمات کو سراہاتے ہوئے کہا کہ مرحوم میر واعظ شاہ صاحبؒ ایک ممتاز عالم دین تھے۔پارٹی کے جنرل سکریٹری علی محمد ساگر، معاون جنرل سکریٹری ڈاکٹر شیخ مصطفیٰ کمال، صوبائی صدر ناصر اسلم وانی، ترجمان اعلیٰ تنویر صادق، رکن پارلیمان حسنین مسعودی اورضلع صدر سرینگر پیر آفاق احمد نے بھی مرحوم میر واعظ مولانا محمد یوسف شاہ صاحبؒ کو خراج عقیدت پیش کیا۔ جمعیت ہمدانیہ کے سربراہ مولانا ریاض احمد ہمدانی نے میر واعظ کشمیر مولانا محمد یوسف شاہؒ کوخراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم ریاست کے ممتاز عالم دین تھے۔ اِس موقعہ پر مرحوم کے حق میں کلمات اور دعائے مغفرت ادا کیا گیا۔