میدانہ تا گگر کوٹ سڑک کا تعمیراتی کام سست روی کا شکار

پونچھ//میدانہ تا گگر کوٹ سڑک کا تعمیراتی کام سست روی کا شکار ہے جس کی وجہ سے ہزاروں کی آبادی مشکلات سے دوچار ہیں۔ اس سڑک کا تعمیراتی کام 20سال پہلے شروع کیا گیا جس پر لوگوں نے سکھ کا سانس لیا تھا لیکن سڑک کا کام انتہائی سست روی کا شکار ہونے کی وجہ سے اس وقت تک کام مکمل نہ ہو سکا ہے۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ سڑک کی خستہ حالی کی وجہ سے نہ صرف ٹریفک متاثر ہو رہی ہے بلکہ حادثات میں بھی اضافہ ہو گیا ہے گرد و غبار سے بیماریاں جنم لے رہی ہیں۔ اہل علاقہ نے بتایا کہ اگر تعمیراتی کام کی رفتار یہی رہی تو مزید 20 سال میں بھی سڑک مکمل نہیں ہو گی۔انھوں نے کہا نالیوں کا گندا پانی سڑک پر جمع ہو جاتا ہے جس سے لوگوں کی مشکلات بڑھ رہی ہے۔ محمد سلیم نامی ایک سیاسی وسماجی کارکن نے بتایا کہ گگر کوٹ پاور ہوس کے سامنے پاور ہوس والوں نے ایک جھولا پ±ل لگایا ہے جس کے سہارے لوگ دریا عبور کرتے ہیں۔انھوں نے بتایا کہ اکثر دریا میں تغیانی کے دوران وہ پل بھی بند ہوجاتا ہے اور کبھی کبھی الٹ جاتا ہے۔انھوں نے بتایا کہ علاقہ کی عوام پچھے چالیس سالوں سے وہاں موٹر ایبل پل تعمیر کرنے کا مطالبہ کر رہے ہیں لیکن انتظامیہ ہر بار کہتی ہے کہ منصوبہ بھیج دیا گیا ہے۔انھوں نے کہا کہ ان کوسمجھ نہیں آتی کہ وہ منصوبہ کب تیار ہو گا۔انھوں نے ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ سے اپیل کی کہ وہ علاقہ کے لوگوں کی پریشانیوں کو دیکھتے ہوئے پل کی تعمیراتی کا شروع کرنے کے ساتھ ساتھ میدانہ تا گگر کوٹ سڑک پر تارکول بچھانے کے علاوہ تعمیراتی کام جلد سے جلد مکمل کروائیں تاکہ علاقہ کے لوگ سکھ کا سانس لے سکیں۔