مہنگائی کیخلاف مہور میں کانگریس کارکنان کا احتجاج

مہور// ملک میں اشیاء خوردنی اور پیٹرول ڈیزل کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کے مخالف کانگریس جماعت کے کارکنان نے سب ڈویژن مہور میں زبردست احتجاجی مظاہرے کئے۔ کانگریس کے سینئر لیڈر شیخ ایاز حسین کی قیادت میں احتجاج مین بازار سے شروع ہوا۔ احتجاجی مظاہرین نے مہنگائی کے خلاف حکومت کے خلاف جم کر نارے بازی کی۔ احتجاجی مظاہرین نے مین بازار سے ایک ریلی نکالی اور ایس ڈی ایم آفس تک حکومت کے خلاف احتجاج کیا اور وہاں کئی گھنٹوں تک احتجاج کو جاری رکھا۔ احتجاجی مظاہرین نے حکومت پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ملک بھر میں پیٹرول ڈیزل اشیاء خوردنی کی قیمتیں آسمان کی بلندیوں کو چھو رہی ہیں جس کا اثر غریب عوام پر پڑھ رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ موجود صورتحال میں غریب عوام کو خرچہ پورا کرنا محال بن گیا ہے۔ کانگریس لیڈران کا مزید کہنا تھا کہ ان کا مہور میں احتجاج کرنے کا مقصد اشیاء خوردنی پیٹرول ڈیزل کی بڑھتی قیمتوں کے خلاف تھا کیونکہ مہنگائی اس قدر بڑھ رہی ہے کہ غریب لوگوں کو گھر میں دو ٹایم کی روٹی پورا کرنا محال ہوگیا ہے۔احتجاجی مظاہرین کا کہنا تھا کہ بے روزگاری عروج پر ہے اسلئے حکومت کو چاہئے کہ وہ بڑھتی ہوئی مہنگائی کسانوں کے مخالف قانون واپس لے۔ اس دوران احتجاجی مظاہرین نے مرکزی سرکار سے جموں کشمیر کو ریاست کا درجہ بحال کرنے کی مانگ بھی کی ہے۔