مڈل سکول ممنکوٹ کی خستہ حال عمارت بچوں کیلئے پریشانی کا باعث بارش کے دوران پانی سکول کے اندر داخل ،بچوں کی کتابیں بھی متاثر

محمد بشارت

ریاسی //خطہ پیر پنچال کے دیگر علاقوں کیساتھ ساتھ ریاسی ضلع میں ہوئی بارش کی وجہ سے گور نمنٹ مڈل سکول ممنکوٹ کی عمارت میں پانی داخل ہو گیا جس کی وجہ سے سکول میں زیر تعلیم بچوں کی کتابیں بھی خراب ہو گئی ۔

 

والدین نے محکمہ ایجوکیشن کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ سکول کی پرانی عمارت کی نہ تو مرمت کیلئے کوئی سنجیدہ قدم اٹھایا جارہا ہے اور نہ ہی نکاسی نظام کو بہتر بنایا جارہا ہے جس کی وجہ سے سکول میں اب ان کے بچے بھی محفوظ نہیں ہیں ۔توصیف بٹ نامی ایک مقامی نوجوان نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ علاقہ میں بار ش ہونے کی وجہ سے سکول کے اندار پانی داخل ہو گیا جس کی وجہ سے بچوں کی کتابیں اوربیگ بھی خراب ہو گئے ہیں ۔غور طلب ہے کہ مذکورہ سرکاری سکول میں 100سے زائد بچے زیر تعلیم ہیں لیکن عمارت کی خستہ حالی کی وجہ سے ان کو بیٹھنے تک کی جگہ بھی دستیاب نہیں ہے ۔

 

والدین نے بتایا کہ کئی عرصہ سے سکول کی عمارت خستہ حال پڑی ہوئی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ عمارت کی مرمت کیلئے کئی مرتبہ متعلقہ حکام سے بھی رجوع کیاگیا لیکن اس کے باوجود بھی بچوں کو معیاری بنیادی سہولیات دستیاب نہیں ہیں ۔انہوں نے جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ گور نمنٹ مڈل سکول ممنکوٹ کی عمارت کو قابل استعمال بنانے کیلئے متعلقہ محکمہ کو ہدایت جاری کی جائیں تاکہ ان کے بچوں کا مستقبل بہتر بنایا جاسکے ۔