موسم بہارکے آغاز سے ہی پیر پنچال میں نا خوشگوار وقعات میں اضافہ

راجوری+پونچھ //موسم بہارکے شروع ہو تے ہے خطہ پیر پنچال میں نا خوشگوار وقعات رونما ہونا شروع ہو گئے ہیں ۔خطہ کے جڑواں اضلاع راجوری اور پونچھ میں لائن آف کنٹرول کے قریب سے اسلحہ برآمد ہونے کیساتھ ساتھ راجوری ضلع میں بھاری ہتھیاروں سے لیس عسکریت پسندوں کے ایک گروپ کی دراندازی کی کوشش کو ناکام بنا دیا گیا ہے جس میں ایک جنگجو مارا گیا ہے۔ ان دونوں واقعات کو سیکورٹی فورسز نے گرمی کے موسم کے آغاز کے ساتھ ہی لائن آف کنٹرول پر عسکریت پسندی کے واقعات شروع ہونے کے واضح اشارے کے طور پر لیا ہے کیونکہ گرمیوں کے دوران عسکریت پسندی کی کارروائیوں میں عام طور پر اضافہ ہوتا ہے کیونکہ برف پگھلنا شروع ہوتی ہے جس سے پیر پنجال کے پہاڑی راستے کھلتے ہیں۔ فوج کے ایک سرکاری بیان کے مطابق پونچھ لائن آف کنٹرول پر شروع کی گئی کارروائی کے دوران اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کیا گیا ہے۔یہ بازیابی فوج اور جموں و کشمیر پولیس کے اسپیشل آپریشن گروپ کے مشترکہ آپریشن کے دوران کی گئی ہے۔اتوار کی شام، ہندوستانی فوج اور ایس او جی کے الرٹ دستوں نے ایک مشترکہ آپریشن کیا اور ضلع پونچھ میں لائن آف کنٹرول کے ساتھ ایک گاؤں سے اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کیا۔فوج نے بتایا کہ سرچ آپریشن مخصوص انٹیلی جنس معلومات کی بنیاد پر، وائٹ نائٹ کور کے پونچھ بریگیڈ اور ایس او جی پونچھ نے تحصیل حویلی، ضلع پونچھ کے گاؤں نور کوٹ میں کیا تھا۔ فوج نے مزید کہا کہ تلاشی کے دوران، پارٹی نے دو اے کے 47 رائفلیں، دو اے کے 47 میگزین، ایک 223 بور اے کے شیپ بندوق ہینڈ گرپ کے ساتھ، 233 بور اے کے شیپ گن کے دو میگزین، ایک چینی پستول، ایک چینی پستولمیگزین، 63 اے کے 47 راؤنڈز، 223 بور اے کے شیپ گن کے بیس راؤنڈ اور چائنیز پستول کے چار راؤنڈزوغیرہ ضبط کرلئے ہیں ۔دریں اثنا، راجوری ضلع میں لائن آف کنٹرول پر کی گئی ایک اور کارروائی میں، فوج نے دراندازی کی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے ایک جنگجو کو مار گرایا جس کی لاش کے ساتھ اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کیا گیا ہے۔فوج کے مطابق، اتوار اور پیر کی درمیانی رات فوج نے ضلع راجوری کے نوشہرہ سیکٹر میں لائن آف کنٹرول کے ساتھ پاکستانی دہشت گردوں کی طرف سے دراندازی کی اس کوشش کو کامیابی سے ناکام بنا دیا۔فوج نے بتایا کہ ایک دہشت گرد کی لاش اور اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کیا گیا ہے۔ آپریشن جاری ہے۔