مودی کے دورے سے قبل جموں میں تصادم:2 جنگجو جاں بحق،اے ایس آئی ہلاک

نیوز ڈیسک

جموں// جموں کے جلال آباد سنجوا علاقے میں جمعے علی الصبح سیکورٹی فورسز اور جنگجوؤں کے درمیان خونیں تصادم آرائی کے دوران دو جنگجو مارے گئے۔

 

اے ڈی جی پی جموں زون مکیش سنگھ نے بتایا کہ سنجیوا علاقے میں دو جنگجوؤں کو مارا گیا۔انہوں نے کہا کہ مہلوک جنگجوؤں کی تحویل سے 2 اے کے 47 رائفلیں، سیٹلائٹ فون اور مزید کچھ اسلحہ و گولہ باردو بر آمد کیا گیا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ایسا لگتا ہے کہ مہلوک جنگجو فدائین حملہ آور تھے۔

 

مسٹر سنگھ نے کہا کہ علاقے میں تلاشی آپریشن ہنوز جاری ہے۔قبل ازیں انہوں نے جائے تصادم آرائی پر نامہ نگاروں کو بتایا کہ جلال آباد سنجوا میں ملی ٹینٹوں کے چھپے ہونے کی ایک خاص اطلاع موصول ہونے کے بعد سیکورٹی فورسز نے درمیانی رات کو آپریشن شروع کیا۔

 

انہوں نے بتایا کہ جنگجو رہائشی مکان میں چھپے بیٹھے ہیں جنہیں مار گرانے کی خاطر اضافی کمک کو روانہ کیا گیا ہے۔

 

موصوف اے ڈی جی پی نے بتایا کہ تلاشی آپریشن کے دوران ہی رہائشی مکان میں موجود جنگجووں نے سیکورٹی فورسز پر اندھا دھند فائرنگ شروع کی جس کے نتیجے میں پانچ اہلکار زخمی ہوئے جنہیں علاج ومعالجہ کی خاطر نزدیکی ہسپتال منتقل کیا گیا تاہم ایک پولیس اہلکار زخموں کی تاب نہ لا کر چل بسا۔

 

بتادیں کہ وزیر اعظم اتوار یعنی 24 اپریل کو جموں کے دورے پر آرہے ہیں جس کے پیش نظر پورے جموں صوبے میں ہائی الرٹ جاری کیا گیا ہے۔

 

یہ بھی یاد رہے کہ کل ہی سیکورٹی فورسز نے ہیرا نگر اور کٹھوعہ میں چھاپہ مار کارروائیوں کے دوران چھ مشتبہ افراد کو حراست میں لے کر اُن کے قبضے اسلحہ وگولہ بارود ضبط کیا تھا۔