مودی نے کشمیر کا بیانیہ ہی بدل دیا ہے

سورت(گجرات)//مرکزی وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے کہا ہے کہ واد ی میں پہلی بار جنگجوئوں پر فورسز کوغلبہ حاصل ہوگیاہے اور 8نومبر 2016کے بعد اب ہزاروں کی تعداد میں پتھرائو کرنے والے سڑکوں پر نہیں اترتے۔ایک تقریب کے دوران انہوں نے کہا’’ کرنسی نوٹوں کی تبدیلی کے بعد پتھرائو کرنے والوں کیلئے فنڈس کے استعمال پر روک لگی اور اب جو کوئی بھی لشکر کمانڈر بنتا ہے وہ 2یا 3ماہ سے زیادہ زندہ نہیں رہتا‘‘۔انکا کہنا تھا کہ مودی حکومت نے کشمیر کا بیانیہ تبدیل کردیا ہے۔جیٹلی نے کہا’’ جو جو لوگ پاکستان میں ممبئی حملوں کی حمایت کرتے تھے وہ پوری دنیا میں الگ تھلگ ہوچکے ہیں۔انہوں نے کہا’’2تین سال قبل کشمیر کی صورتحال جو ہمیں ورثے میں ملی ،اب تبدیل ہوچکی ہے،اب معمولی مسئلے پر جو  پتھرائو کرنے والا ہجوم جمع ہوتا تھا اب دکھائی نہیں دیتا‘‘۔انہوں نے کہا’’ کشمیر کے ہر گائوں میں دوبارہ انٹلی جنس سسٹم کو فعال بنایا گیا ہے اور پہلی بار سیکورٹی فورسز کو جنگجوئوں پر غلبہ حاصل ہوگیا ہے‘‘۔جیٹلی نے مزید کہا’’نوٹوں کی تبدیلی کے فیصلے سے وہ رقوم بند ہوئے جو پتھرائو کرنے والوں کو دیئے جاتے تھے‘‘۔انہوں نے کہا’’ 8نومبر 2016کے بعد ایسے واقعات میں اب 100سے زیادہ لوگ جمع نہیں ہوتے، نہ دکھائی دیتے ہیں‘‘۔