موجودہ صورتحال کیلئے پی ڈی پی اور بھاجپا ذمہ دار :ہرش دیو

رام گڑھ //نیشنل پنتھرز پارٹی کے چیئر مین ہرش دیو سنگھ نے کہاکہ ریاست جموں وکشمیر میں دوبارہ سے پھیل رہی ملی ٹینسی اور پیدا شدہ صورتحال کیلئے پی ڈی پی اور بھاجپا کی سابقہ ریاستی حکومت ذمہ دار ہے ۔اسمبلی حلقہ کے دھیری گائوں میں پارٹی کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ 2014کے اسمبلی انتخابات میں پی ڈی پی اور بھاجپا نے ایک دوسرے کو اقتدار سے الگ رکھنے کیلئے انتخابات لڑا تھا لیکن انتخابی نتائج کے ساتھ ہی دونوں سیاسی پارٹیوں نے اپنے سیاسی مفادکیلئے اتحادی حکومت تشکیل دی ۔انہوں نے کہاکہ اقتدار میں آنے کے بعد دونوں سیاسی پارٹیوں نے عوام کو آپس میں تقسیم کرنے کی پالیسی اپنائی جبکہ عوامی مسائل کو حل کرنے کی طرف کوئی توجہ نہیں دی ۔این پی پی لیڈر نے بھاجپا کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ پارٹی نے اقتدار کی خاطر صوبہ جموں کی عوام کیساتھ کئے گئے تمام وعدوں کو یکسر نظرانداز کیا جس کی وجہ سے اس وقت صوبہ کی عوام تمام بنیادی سہولیات سے محروم ہے ۔انہوں نے کہاکہ بھاجپا نے دفعہ 370اور 35Aکے سلسلہ میں انتخابات کے دوران اختیار کئے گئے مواقف پر کوئی عمل ہی نہیں کیا گیا جبکہ بھاجپا کے دورے اقتدار میں اسمبلی میں پاکستان کے حق میں نعرے بازی کی گئی لیکن پارٹی لیڈران خاموشی کیساتھ تماشہ دیکھتے رہے ۔این پی پی لیڈر نے پارٹی کارکنوں سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ وہ صوبہ جموں کی عوام کی آواز کو بلند کرنے کیلئے پارٹی کو زمینی سطح پر مضبوط کریں ۔