منڈی میں کھیل کا میدان دستیاب نہیں

منڈی//پونچھ کی تحصیل منڈی میں ہنْر مند نوجوانوں کے کھیل کود کیلئے کوئی بھی میدان میسر نہیں ہے جس کی وجہ سے ان کی صحت پر بھی اثرات مرتب ہوتے ہیں ۔نوجوانوں نے بتایا کہ انتظامیہ کی جانب سے ان کیلئے کوئی کھیل کود کا میدان تعمیر نہیں کیا گیا ہے جس کی وجہ سے ان کو کھیتوں کا رخ کرناپڑتا ہے ۔منڈی تحصیل کے بچوں میں کھیل کود کے حوالے سے ہنْر کی کوئی بھی کمی نہیں ہے مگر کھیل کود کیلئے تحصیل میں ایک بھی میدان کا نہ ہونا ان کیلئے ایک بڑامسئلہ بن گیا ہے ۔ منڈی کے ایک کرکٹر محمد اویس کے مطابق اسے بچپن سے ہی کرکٹ کھلنے کا شوق ہے اور وہ عالمی شہرت یافتہ کرکٹ کھیلنے والے لوگوں سے کافی متاثر ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ اپنی پڑھائی کے ساتھ ساتھ کرکٹ بھی کھیلتے ہیں مگر منڈی تحصیل میں کھیل کا میدان نہ ہونے کی وجہ سے انہیں ہفتہ میں چار دن پونچھ شہر جانا پڑتا ہے اور وہ وہاں کے گرونڈ میں کرکٹ کھیلتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ منڈی تحصیل میں اگر چہ کھیل کے میدان کیلئے جگہیں بھی ہیں مگر انتظامیہ اور سرکار کی جانب سے اس طرف کوئی بھیدھیان نہیں دیا جاتا جس کی وجہ سے یہاں کے نوجوانوں کو لوگوں کے کھیتوں میں کھیلنا پڑتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ تحصیل کے ہنْر مند بچوںکیلئے کھیل کا میدان ہونا ضروری ہے جس کی وجہ سے وہ اپنی صحت کے ساتھ ساتھ مختلف کھیل کھیل سکیں۔مقامی لوگوں بالخصوص نوجوانوں نے جموں وکشمیر انتظامیہ سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ منڈی میں کھیل کا میدان تعمیر کروایا جائے تاکہ نوجوان اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کر سکیں ۔