منڈی میں دن دھاڑے کانکنی کا کاروبار جاری محکمہ جیالوجی اینڈ مائننگ اور پولیس غفلت کا شکار

عشرت حسین بٹ

منڈی//ایک طرف جہاں محکمہ جیالوجی ماینگ اور محکمہ پولیس کی جانب سے ضلع پونچھ میں غیر قانونی طور پر دریاوں سے بجری اوور ریت کی غیر قانونی طور پر ہو رہی کانکنی پر قابو پانے کے دعوے کئے جا رہے ہیں وہیں دوسری جانب ضلع پونچھ کی تحصیل منڈی میں دن دھاڑے بجری اور ریت مافیاکانکنی کا دھندا چلا رہے ہیں۔ منڈی میں رات بھر دریاؤں پر بجری اور ریت مافیا لوگ کانکنی کرتے ہیں اور دن کے اجالے میں بھی پولیس اور محکمہ جیالوجی اینڈ مائینگ کی ناک تلے یہ سلسلہ چلایا جا رہا ہے ۔باوثوق زرئع کے مطابق یہ مائینگ مافیا پولیس اور محکمہ جیالوجی اینڈما ئینگ کے ملازمین کو ہفتہ دے کر اپنا کاروبار بغیر کسی ڈر اور خوف کے چلا رہے ہیں۔ وہیں منڈی کے لوگوں کا کہنا ہے کہ رات بھر منڈی کے دریاؤں پر بجری اور ریت مافیا جے سی بی مشینوں کے ذریعہ ریت اور بجری نکال کر بازاروں میں مہنگے داموں میں بیچ کر عوام کو لوٹ رہے ہیں ۔مکینوں کے مطابق نہ انہیں پولیس اور نہ ہی محکمہ جیالوجی مائینگ کا خوف ہے۔انہوں نے بتایا کہ منڈی کے دریاؤں سے ریت بجری نکالی جا رہی ہے جس کی وجہ سے دریاؤں میں بڑے بڑے کھڈے پڑے ہوئے ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ ماضی میں بھی منڈی کے جالیاں علاقہ سے رکھنے والے ایک ہی خاندان کے دو بچے لقمہ اجل بن گئے تھے ۔ عوام کا کہنا ہے کہ منڈی میں محکمہ جیالوجی اینڈمائینگ کی جانب سے اس طرح کے لوگوں پر کوئی بھی کارروائی نہیں کی جارہی ہے۔لوگوں نے ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ اور جموں کشمیر یوٹی انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ ایسے لوگوں کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے جو ریت اور بجری مافیا گیری چلا رہے ہیں۔