مناور ندی پر تعمیر پل کا حصہ منہدم

رمیش کیسر
نوشہرہ //سب ڈویژن نوشہرہ کے گاؤں تلہ ڈبری میں مناور ندی پر بنائے گئے پل کا کچھ حصہ گرنے سے پل کو ٹریفک کیلئے بند کر دیا گیا ہے جبکہ مقامی لوگوں نے لیفٹیننٹ گورنر سے پل کی تعمیر کا کام کروانے والے ٹھیکیدار کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ گزشتہ سال نوشہرہ کے تلہ ڈبری گاؤں میں مناور ندی پر حکومت کی طرف سے ایک پل بنایا گیا تھا جس کا افتتاح گزشتہ سال اگست میں مرکزی وزیر نے کیا تھاتاہم مذکورہ پل کا ایک حصہ ڈھہ گیا ہے جس کے باعث پل کو گزشتہ 5 روز سے ٹریفک کے لئے بند کر دیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ کروڑوں روپے کی لاگت سے تعمیر ہونے والا یہ پل صرف 6 سے 7 ماہ میں ہی ٹریفک کے لئے استعمال میں لایا گیا۔مقامی لوگوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ جس ٹھیکیدار یا کمپنی نے اس پل کا تعمیراتی کام کروایا ہے اس کے خلاف اعلیٰ سطح پر انکوائری کی جائے ۔اہل علاقہ کے مطابق پل کا تعمیراتی کام ناقص ہے جبکہ اس کی تعمیر میں انتہائی ناقص مٹریل کا استعمال کیا گیا تھا جس کی وجہ سے پل کا حصہ منہدم ہوگیا ۔انہوں نے کہا کہ پل کی طرف جانے والی سڑک بھی دونوں طرف سے نہیں بنائی گئی ہے جو کہ آنے جانے والی گاڑیوں کے لئے بھی خطرہ ہے ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ پل کو مکمل کرنے کیلئے متعلقہ حکام کو ہدایت جاری کی جائے جبکہ غیر معیاری کام میں ملوث ٹھیکیدار کیخلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے ۔