ممبر اسمبلی کی رہائش گاہ سے اسلحہ چھیننے کا معاملہ

سرینگر// تفتیشی ایجنسی’’این آئی ائے‘‘ نے دعویٰ کیا ہے کہ جنوبی ضلع شوپیاں میں انہوں نے پی ڈی پی کے سابق ممبر اسمبلی کی رہائش گاہ پر ہتھیاروں کو لوٹنے میں3نوجوانوں کو گرفتار کیا ہے۔ سرینگر کے جواہر نگر علاقے میں گزشتہ برس28 ستمبر کو پی ڈی پی کے سابق ممبر اسمبلی کی سرکاری رہائش گاہ سے7 رائفلیں اور ایک لائسنس شدہ پستول کو ایس پی ائو عادل احمد نے لوٹ لیا تھا،جس کے بعد انہوں نے حزب المجاہدین میں شمولیت اختیار کی تھی۔ اس سلسلے میں ایک کیس زیر نمبر 57/2018 بتاریخ28ستمبر بھی درج کیا گیا تھا۔این آئی ائے نے معاملے سے متعلق کیس درج کر کے چھان بین شروع کی تھی۔این آئی ائے ترجمان کے مطابق’’ تحقیقات کے دوران اس بات کا انکشاف ہوا ایس پی ائو عادل بشیر شیخ ساکن ٹھوکر پورہ شوپیاں اور انکے ساتھی یاور احمد ڈار ولد مشتاق احمد ساکن ٹھوکر پورہ اور رفیق احمد بٹ ولد محمد اشرف بت ساکن اچھن پلوامہ نے کشمیر میں سرگرم حزب المجاہدین کی اعلیٰ لیڈرشپ کی منصوبہ سازی پر یہ ہتھیار لوٹ لئے،جس کے بعد رفیق احمد کو اس کیس میں گرفتار کیا گیا،جبکہ عادل بشیر اور یاور احمد فرار ہیں۔ این آئی ائے کا کہنا ہے کہ گرفتار ہوئے نوجوانوں کی شناخت پرویز احمد وانی،ساکن ٹھوکر پورہ،جاوید یوسف ڈار ساکن گنڈ درویش اور سبزار احمد کمہار ساکن شرمال کیطور ہوئی ہیں۔ بیان کے مطابق تحقیقات کے دوران یہ معلوم ہوا کہ پرویز احمد وانی،جاوید یوسف ڈار،اور سبزار احمد کمار نے ان لوگوں کو منصوبہ سازی میں تعاون فراہم کیا۔بیان میں کہا گیا کہ ان لوگوں کو این آئی ائے جموں کی خصوصی این آئی ائے عدالت میں بدھ کو پیش کیا جائے گا۔
 
 

گارڈ کی بندوق اُڑانے کا معمہ ATM

 شوپیاں پولیس نے  2افراد گرفتار کئے

سرینگر //شوپیاں پولیس نے ہتھیار چھیننے کے معاملے کو حل کرتے ہوئے دو افراد کی گرفتاری عمل میں لانے کا دعویٰ کیا ہے۔ 6مارچ 2019کے روز شوپیان کے کندلن گائوں میں اے ٹی ایم گارڈ سے بار ہ بور رائفل چھین لی گئی ۔پولیس بیان کے مطابق تفتیش کے دوران معلوم ہوا ہے کہ ہتھیا رچھیننے کی اس واردات میں دو افراد ملوث ہیں۔چنانچہ پولیس نے فوری طورپر کارروائی کرتے ہوئے مذکورہ افراد کی گرفتاری عمل میں لا کر اُنہیں سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا۔ پوچھ گچھ کے بعد پولیس نے چھینا ہوا ہتھیار برآمد کیا۔ اس سلسلے میں مزید تحقیقات جاری ہے۔