ملی ٹینٹوں اور انکے معاونین کو ختم کریں:سنہا ایل جی کاجموں صوبہ کے سنیئر سیول اور پولیس آفیسران کیساتھ سیکورٹی جائزہ اجلاس

عظمیٰ نیوز سروس

جموں//لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے جموں میں ڈویژن کے 10اضلاع کے ڈی سیز اور ایس ایس پیز اور سول اور پولیس انتظامیہ کے سینئر افسران کے ساتھ ایک اعلیٰ سطحی سیکورٹی اور ضلعی ترقی کا جائزہ اجلاس کی صدارت کی۔میٹنگ میں چیف سکریٹری ایس اتل ڈلو ،، ڈی جی پی آر آر سوین، محکمہ داخلہ کے پرنسپل سیکرٹری چندرکر بھارتی، اے ڈی جی پی لاء اینڈ آرڈروجے کمار، اے ڈی جی پی سی آئی ڈی نتیش کمار، اے ڈی جی پی جموںآنند جین،لیفٹیننٹ گورنر کے پرنسپل سکریٹری ڈاکٹر مندیپ کمار بھنڈاری،ڈویژنل کمشنر جموں رمیش کمار،ڈی آئی جیز، ڈپٹی کمشنرز، ایس ایس پیز اور دیگر سینئر افسران نے شرکت کی۔ لیفٹیننٹ گورنر نے خطے میں سیکورٹی کے مجموعی منظر نامے کا جائزہ لیا۔ انہوں نے پورے دہشت گردی کے ماحولیاتی نظام کو ختم کرنے کے لئے سیکورٹی فورسز، سول اور پولیس انتظامیہ کے درمیان قریبی ہم آہنگی پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں اور ان کی مدد کرنے والوں کو ترجیحی بنیادوں پر ختم کیا جانا چاہئے۔لیفٹیننٹ گورنر نے ترقیاتی پروجیکٹوں اور سماجی بہبود اور دیگر سرکاری اسکیموں پر ہونے والی پیش رفت کا بھی جائزہ لیا۔ڈی سیز نے چیئرمین کو ہولیسٹک ایگریکلچر ڈویلپمنٹ پروگرام (HADP) کے نفاذ، انڈسٹریل اسٹیٹس کی ترقی اور عوامی خدمات میں توسیع کے بارے میں بریفنگ دی۔میٹنگ میں امرناتھ یاترا سے پہلے کی تیاریوں اور یاترا کی سیکورٹی سے متعلق اہم امور پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ ٹریفک مینجمنٹ، راستے پر یاتریوں کے لئے ضروری سہولیات،رہائش، سڑکوں کی اپ گریڈیشن؛ آر ایف آئی ڈی کارڈز کی تقسیم وغیرہ کی تفصیلی جانکاری دی گئی ۔لیفٹیننٹ گورنر نے حادثات کے بڑھتے ہوئے واقعات، غیر قانونی کان کنی کی سرگرمیوں اور منشیات کی لعنت پر قابو پانے کیلئے اٹھائے گئے اقدامات پر ضلع اور پولیس انتظامیہ کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات پر کارروائی کی رپورٹ بھی طلب کی۔انہوں نے جموں ڈویژن کے پہاڑی اضلاع میں سڑک کی حفاظت اور سڑک حادثات پر لوگوں کی بڑھتی ہوئی تشویش کو اجاگر کیا جس کے نتیجے میں شدید زخمی اور اموات ہوتی ہیں۔لیفٹیننٹ گورنر نے ڈی سیز اور ایس ایس پیز کو ہدایت کی کہ وہ ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف زیرو ٹالرنس کی پالیسی اپنائیں اور سخت نگرانی اور جرمانہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ قوانین کی خلاف ورزی کرنے والی ناکارہ گاڑیوں کی فوری نشاندہی کی جائے اور انہیں ضبط کیا جائے۔