ملک میں کورونا کے فعال کیسز میں اضافہ

نئی دہلی // (یواین آئی ) ملک میں کورونا وائرس (کووڈ ۔19) کے کیسز کے تیز اضافے کے درمیان گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران تقریبا 19 ہزار فعال کیسز سامنے آئے ہیں۔گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران فعال کیسز 18918 سے بڑھ گئے ہیں جبکہ جمعرات کو 17958 ، بدھ کو 10974 ، منگل کو 4170 ، اتوار کو 8،522 اور ہفتہ کو 4785 کیسز کا اضافہ درج کیا گیا تھا ۔اس دوران کورونا وائرس سے مرنے والوں کی تعداد 154 درج کی گئی ہے ۔ جمعرات کو یہ تعداد 172 ، بدھ کو 188 ، منگل کو 131 ، پیر کو 118 ، اتوار کے روز 158 ، ہفتہ کو 140 ، جمعہ کو 117 درج کی گئی تھی۔ دریں اثنا ملک میں اب تک تین کروڑ 93 لاکھ 39 ہزار سے زائد افراد کو کورونا کے ٹیکے لگائے جا چکے ہیں ۔مرکزی وزارت صحت کی جانب سے جمعہ کی صبح جاری اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے 39726 نئے کیسز سامنے آئے ہیں ، جس سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ 15 لاکھ 14 ہزار سے زیادہ ہوگئی ہے ۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 20654 مریض صحتیاب ہوئے ہیں ، جس سے اب تک 11083679 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں۔فعال کیسز 18918 سے بڑھ کر 271282 ہوگئے ہیں۔ اسی دوران مزید 154 مریضوں کی موت ہونے سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 159370 ہوگئی ہے ۔ ملک میں شفایابی کی شرح 96.25 اور فعال کیسز کی شرح 2.35 فیصد ہوگئی ہے ، جبکہ شرح اموات ابھی 1.38 فیصد ہے ۔مہاراشٹرکورونا کے فعال کیسز کے معاملے میں سرفہرست ہے اور ریاست میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران فعال کیسز 13601 بڑھنے سے ان کی تعداد بڑھ کر 167637 ہوگئی ہے ۔ ریاست میں 12174 مریض صحتیاب ہوئے ہیں ، جس سے کورونا کو شکست دینے والوں کی تعداد 2175565 لاکھ پہنچ گئی ہے ، جبکہ مزید 58 مریضوں کی موت ہونے سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 53138 ہوگئی ہے ۔ کیرالہ میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران فعال کیسز 235 کم ہو کر 25463 رہ گئے اور 2119 مریضوں کے صحتیاب ہونے سے کورونا کو شکست دینے والے کی تعداد 10 لاکھ 68 ہزار سے زیادہ ہوگئی ہے جبکہ مزید 15 مریضوں کی موت ہونے سے مرنے والوں کی تعداد 4450 ہوگئی ہے ۔کرناٹک میں کورونا کے سرگرم کیسز 1139 بڑھ کر 11378 ہوگئے ہیں ۔ ریاست میں اموات کی تعداد بڑھ کر 12415 ہوگئی ہے اور اب تک 941309 مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔پنجاب میں فعال کیسز 1046 مزید بڑھ کر 14366 ہو گئے ہیں ۔
 
 

سادھو سنتوں کو بھی کورونا کا ٹیکہ لگے :پرینکا چترویدی

نئی دہلی// (یواین آئی ) شیوسینا کی پرینکا چترویدی نے جمعہ کے روز راجیہ سبھا میں ملک کے مختلف مقامات پر مقیم سادھو سنتوں کو بھی کووڈ کا ٹیکہ لگا نے کا مطالبہ کیا ۔ چترویدی نے وقفۂ صفر کے دوران کہا کہ سادھو سنت ملک کے مختلف حصوں میں رہتے ہیں اور بہت سے سنتوں کے پاس آدھار کارڈ بھی نہیں ہوتا ہے ۔ یہ لوگ زیادہ دیر تک ایک جگہ پر نہیں رہتے ۔ انہوں نے کہا کہ ٹیکہ کاری میں سادھو سنتوں کو ترجیح دی جانی چاہئے ۔انہوں نے کہا کہ پہلے مرحلے میں ساٹھ سال سے زائد اور دوسرے مرحلے میں 45 سال سے زائد عمر کے لوگوں کو کووڈ کو ٹیکہ لگایا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ دمہ کے مریضوں کو بھی ٹیکہ کاری میں شامل کیا جانا چاہئے ۔ کورونا کے رہنما خطوط میں دمہ کے مریضوں کو شامل نہیں کیا گیا ہے ۔ بھارتیہ جنتا پارٹی کے ہری دوار دوبے نے وقفہ صفر کے دوران ہی اترپردیش کے آگرہ کے آس پاس کے علاقوں میں سیاحتی صنعت کو فروغ دینے کا مطالبہ کیا۔ آگرہ میں تاج محل ہے اور اس کے آس پاس کے علاقوں میں بہت سارے مغلیہ دور کے تاریخی مقامات ہیں ، جسے دیکھنے کے لئے ہر روز لاکھوں سیاح آتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کورونا کی وبا کے دوران گذشتہ ایک سال کے دوران سیاحتی صنعت بری طرح متاثر ہوئی ہے ۔ ٹیکسی اور ہوٹل اس سے بری طرح متاثر ہوئے ہیں اور ان کے ملازمین بھوک مری کے شکار ہو گئے ہیں۔
 

اراکین پارلیمنٹ کورونا کے سلسلے میں احتیاط برتیں: وینکیا

نئی دہلی// (یو این آئی) راجیہ سبھا کے چیئرمین ایم وینکیا نائیڈو نے جمعہ کے روز اراکین پارلیمنٹ سے کورونا وبا کے حوالے سے احتیاط برتنے ، مرکزی اور ریاستی حکومتوں کو اس بابت دی گئی ہدایات پر عمل درآمد کرنے کی درخواست کی۔ نائیڈو نے پارلیمنٹ کی کاروائی شروع کیے جانے کے بعد کہا کہ ریاستوں سے آئی رپورٹ سے معلوم ہوا ہے کہ کورونا بڑھ رہا ہے ۔