ملک میں صحت کے شعبے کو مضبوط بنانا میری ترجیح:مودی

نئی دہلی// وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعہ کو کہا کہ ملک میں میڈیکل کالجوں میںکل تقریباً کل ڈیڑھ لاکھ سیٹوں میں 66 فیصد تعداد گزشتہ سات برسوں میں بڑھیں ہیں۔ وزیر اعظم مودی ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے کولکاتہ میں چترنجن نیشنل کینسر انسٹی ٹیوٹ (سی این سی آئی) کے دوسرے کیمپس کا افتتاح کرتے ہوئے یہ بات کہی۔افتتاحی تقریب پر ورچول موڈ پر خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ ملک کے صحت شعبہ کو مضبوط بنانے سے ہندوستان کافی آگے بڑھ سکتا ہے کیوں کہ جب سماج بیماریوں سے پاک ہوگا تب ہی تعمیر و ترقی اور اختراعی رجحان کی طرف توجہ دی جاسکتی ہے ۔ وزیراعظم نے کہاکہ بھارت نے شعبہ طب میں کافی ترقی کی ہے اور کووڈ کے دوران اس کے خلاف ویکسین کی تیاری کے بعد عالمی سطح پر یہ بات تسلیم کی جاچکی ہے کہ بھارت کا ہیلتھ سیکٹر بہتری کی طرف بڑھ رہا ہے ۔ مودی نے کہا کہ 2014 تک ملک میں میڈیکل کی انڈر گریجویٹ اور پوسٹ گریجویٹ تعلیم کے لیے سیٹوں کی تعداد تقریباً 90 ہزار تھی۔ پچھلے سات برسوں میں ان میں 60 ہزار (66 فیصد) نئی سیٹیں شامل کی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا، "2014 میں، ہمارے پاس صرف چھ آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (اے آئی آئی ایم ایس) ہوتے تھے ۔ آج ملک 22 ایمس کے مضبوط نیٹ ورک کی طرف بڑھ رہا ہے ۔سی این سی آئی کا دوسرا کیمپس 530 کروڑ روپے سے زیادہ کی لاگت سے تعمیر کیا گیا ہے ۔ اس کے لیے تقریباً 400 کروڑ روپے مرکزی حکومت نے گرانٹ دی ہے ۔ یہ کمپلیکس 460 بستروں والا یونٹ ہے ۔ یہ کیمپس کینسر کی تحقیق کی ایک جدید سہولت کے طور پر بھی کام کرے گا اور خاص طور پر ملک کے مشرقی اور شمال مشرقی حصوں سے تعلق رکھنے والے کینسر کے مریضوں کو جامع دیکھ بھال فراہم کرے گا۔اس پروگرام میں مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی بھی موجود تھیں۔ملک بھر میں عام لوگوں تک صحت کی سہولیات کو وسعت دینے کے لیے حکومت کی طرف سے اٹھائے جانے والے اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ آیوشمان بھارت اسکیم ایک سستی اور جامع اسکیم کے طور پر آج دنیا کے لیے ایک رول ماڈل ہے ۔انہوں نے کہا کہ پردھان منتری جن آروگیہ یوجنا کے تحت ملک بھرمیں دو کروڑ 60 لاکھ سے زیادہ مریض، اسپتالوں میں اپنا مفت علاج کراچکے ہیں۔مسٹر مودی نے کہا کہ کینسر کی بیماری ایسی ہے کہ غریب اور متوسط طبقہ اس کا نام سن کر ہمت ہار جاتا تھا۔ غریبوں کو اسی پریشانی سے باہر نکالنے کے لیے ملک سستے اور قابل رسائی علاج کے لیے مسلسل اقدامات کر رہا ہے ۔وزیراعظم نے کہا کہ کینسر کی ضروری ادویات کی قیمتوں میں گزشتہ برسوں میں نمایاں کمی آئی ہے ۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ اب تک حکومت کی طرف سے مغربی بنگال کو بھی کورونا ویکسین کی تقریباً 11 کروڑ خوراکیں مفت فراہم کی گئی ہیں۔