ملازمین کے مشترکہ فورم کے مطالبات

سرینگر//سرکاری ملازمین کیلئے ہفتہ کوپانچ دن بنانے،ملازمین کا مہنگائی بھتہ بلاتاخیر واگزار کرنے اور عارضی ملازمین کومستقل بنانے کے علاوہ محکمہ خوراک ورسدات کے 12مزدوروں کی گزشتہ دوبرس کی تنخواہ واگزار کرنے کاملازمین انجمنوں کے مشترکہ پلیٹ فارم ایمپلائزجوائنٹ کنسلٹیٹیو کمیٹی نے مطالبہ کیا ہے۔ایک بیان کے مطابق مشترکہ فورم کے ایک اجلاس میں سرکار پرزوردیا گیاکہ مرکزی سرکار اوردیگر مرکزی زیرانتظام علاقوں کے ملازمین کی طرح جموں وکشمیر کے سرکاری ملازمین کیلئے بھی ہفتے کو پانچ دن رکھاجائے۔EJCCکے چیئرمین اعجاز احمدخان نے کہاکہ مرکزی سرکار کے ملازمین اورمرکزی زیرانتظام علاقوںمیں ملازمین کیلئے ہفتے میں صرف پانچ دن کی ڈیوٹی رکھی گئی ہے لیکن اکتوبر2020سے جموں وکشمیر کومرکزی زیرانتظام خطہ  بنائے جانے کے بعدبھی یہاں کے سرکاری ملازمین کواب بھی ہفتے میں  چھ دن ڈیوٹی انجام دینا پڑتی ہے ،جومتعلقہ قواعد وضوابط کی خلاف ورزی ہے۔اعجاز احمدخان نے مطالبہ کیاکہ جموں وکشمیرکے سرکاری ملازمین کے حق میں واجب الادامہنگائی الائونسDAبلاتاخیر واگزار کیاجائے ۔سینئر ٹریڈیونین لیڈر اعجاز احمدخان نے مختلف سرکاری محکموں میں دہائیوں سے معمولی اُجرتوں پرخدمات انجام دینے والے ڈیلی ویجروں ،کیجول لیبروں اورکنٹریکچول ملازمین کے ساتھ فیرپرائس شاپ ڈیلراورمحکمہ خوراک، رسدات وعوامی تقسیم کاری کے گوداموں اورشالی اسٹورمیں کام کرنے والے مزدوروںں کے دیرینہ مطالبات کاذکر کرتے ہوئے کہاکہ ڈیلی ویجروں ،کیجول لیبروں،کنٹریکچول ملازمین ،فیئر پرائس شاپ ڈیلروں اورشالی اسٹورمیںکام کرنے والے ورکروںکی ملازمتوں کوبھی باقاعدہ یامستقل بنایاجائے ۔انہوںنے حکام سے یہ اپیل بھی کی کہ شالی اسٹور کے12مزدروں کی گزشتہ2برسوں سے واجب الاداتنخواہوں کوجلدسے جلد واگزار کیاجائے ۔