ملازمین کیلئے ہیلتھ انشورنس ماڈل

جموں//گورنر ستیہ پال ملک کی صدارت میں ریاستی انتظامی کونسل نے سرکاری ملازمین اور پنشنروں کے لئے ہیلتھ انشورنس ماڈل کو منظوری دیدی ہے ۔ میڈیکلیم پالیسی کو رد کرنے کے بعد ریاستی سرکار نے پرنسپل سیکرٹری ہیلتھ کی سربراہی میں ایک کمیٹی تشکیل دی تھی جس سے ریاست میں تھرڈ پارٹی ایڈمنسٹریٹر کے ذریعے ہیلتھ انشورنس سکیم کا جائزہ لینے کا اختیار دیا گیا تھا۔کمیٹی نے مختلف ریاستوں کے ہیلتھ انشورنس ماڈلز کا جائزہ لینے کے بعد تین ماڈلز پر مبنی رِپورٹ پیش کی جس کا انتظامی کونسل نے تفصیلی جائزہ لیا۔اِن ماڈلز کا جائزہ لینے کے بعد کونسل نے ٹرسٹ ماڈل کو ریاست میں عملانے کو منظوری دی ۔ اس کے تحت ریاستی سرکار کی طرف سے ایک ٹرسٹ تشکیل دیا جائیگا جو انشورنس اور اس کے فوائد سے متعلق ڈیزائن تیار کرے گا۔سکیم کے تحت مذکورہ ٹرسٹ پریمیم ،اندراج اور انشورنس کلیم کا جائزہ لے گا ۔ اس اقدام کی بدولت بار بار رینول اور دیگر غیر ضروری لوازمات پورا کرنے کے عمل سے چھٹکارا ملے گااور قریبی نگرانی یقینی بنے گی۔کونسل نے صحت و طبی تعلیم محکمہ کو ا س سلسلے میں ضروری اقدامات اٹھانے کی ہدایت دی۔