مغل شاہراہ ٹریفک آمد و رفت کیلئے مسلسل بند | شاہراہ پر سخت کہرے کے باعث پھسلن ،آج کھلنے کی امید: حکام

عشرت حسین بٹ+بختیار کاظمی+سمت بھارگو

پونچھ// تاریخی مغل شاہراہ کو شدید برف باری ،کہرےاور پھسلن کے باعث حکام کی جانب سے مسلسل دوسرے روز بھی ٹریفک آمد و رفت کے لیے بند رکھاگیا۔ بتا دیں کہ خطہ پیر پنچال کو وادی سے ملانے والی تاریخی مغل شاہراہ کو برف باری کی وجہ سے سنیچر کو بعد دوپہر ٹریفک آمدو رفت کے لیے بند کر دیا گیا تھا جو مسلسل دوسرے روز بھی ٹریفک آواجاہی کے لیے بند رہی۔ حکام کے مطابق اتوار کو شاہراہ سے برف ہٹانے کا کام شروع کیا گیا لیکن سخت کہرے اور پھسلن کے باعث شاہراہ پر گاڑیوں کا چلنا خطرے سے خالی نہیں تھا۔ شاہراہ پر تعینات مکینکل ونگ کے انجینئر طاہر شیخ نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ اتوار کو شاہراہ سے برف ہٹانے کا کام شروع کیا گیا اور کہرے کو نمک ڈال کر ختم کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔ان کا کہنا تھا موسم کی بہتری اور سڑک سے برف ہٹانے کے بعد ہی شاہراہ پر ٹریفک کو چلنے کی اجازت دی جا سکتی ہے۔ایگزیکٹو انجینئر مغل روڈ نے بتایا کہ حکام کی کوشش ہے کہ اگر موسم سازگار رہے تو ایمرجنسی کے لیے ایک ہفتہ شاہراہِ پر ٹریفک بحال کیاجائے لیکن موقع کی حالت شاہراہ پر سفر کرنے کی اجازت نہیں دیتی کیونکہ تقریباً 15 کلومیٹر کے حصے پر سخت کہرا جم چکا ہے جس پر نمک کا ذرا بر بھی اثر نہیں ہو رہا ہے۔ اس دوران مغل روڈ پر ڈی ٹی آئی ٹریفک پولیس کپل منہاس نے بتایا کہ سڑک سے برف ہٹا دی گئی ہے لیکن ٹھنڈ والی سطح کی وجہ سے پھسلن کی وجہ سے یہ بندہی رہی۔انہوں نے مزید کہا “سڑک کو پیر کو بحال کر دیا جائے گا کیونکہ ہم توقع کرتے ہیں کہ پیر کو مناسب موسمی حالات کے درمیان ٹھنڈ کی سطح کم ہو جائے گی‘‘۔ٹریفک پولیس عہدیدار نے مزید بتایا کہ ایک ہلکی مال بردار گاڑی سڑک پر پھنس گئی تھی جسے پیر کو ٹو کر کے مغل روڈ سے باہر لایا گیا ہے۔