معیاری تعلیم کیساتھ سائنسی مزاج کا فروغ

سرینگر //جموں و کشمیر میں اسکول ایجوکیشن ماحولیاتی نظام میں مثالی تبدیلی لانے کے مقصد کے ساتھ ، لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے طلبا میں  معیاری تعلیم کیساتھ سائنسی مزاج کو فروغ دینے کیلئے اساتذہ کی مختلف سطحوں پر تعلیمی اصلاحات کمیٹی تشکیل دینے پر زور دیا۔لیفٹیننٹ گورنر یہاں محکمہ اسکول ایجوکیشن کے جائزہ اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔لیفٹیننٹ گورنر نے محکمہ اسکول ایجوکیشن سے کہا کہ وہ اعلی کارکردگی کرنے والے اساتذہ کی نشاندہی کریں جو اس خصوصی ٹاسک فورس کے ممبر کی حیثیت سے کام کریں گے۔اس نئے اقدام سے اساتذہ میں بااختیار ہونے کا احساس پیدا ہوگا نیز طلبا کے اندراج اور کارکردگی کو بہتر بنانے کے علاوہ ، وہ اپنے فرائض کے تئیں زیادہ ذمہ دار اور جوابدہ ہونگے۔ انہوں نے مزید کہا کہ کمیٹی اساتذہ کے ساتھ ساتھ طلبا میں سیکولر اور جمہوری اقدارکی سمت بھی طے کرے گی۔تعلیم کو قوم کی ترقی کا لازمی جز قرار دیتے ہوئے ، لیفٹیننٹ گورنر نے نئی تعلیمی اصلاحات کی اہمیت پر زور دیا تاکہ کوئی بھی تعلیم سے محروم نہ رہے۔انہوں نے کہا کہ ہم بڑے مقصد یعنی "سب کیلئے تعلیم" حاصل کرنے کیلئے تعلیم کے شعبے میں اصلاحی بہتری لانے کے لئے کام کر رہے ہیں، حکومت جموں و کشمیر خواندگی کی شرح بہتر بنانے کیلئے ہر سطح پر ایکویٹی اور شمولیت کو یقینی بنانے کے علاوہ اسکول ایجوکیشن میں سماجی اور صنفی فرق کو ختم کرنے کے لئے جامع اقدامات کررہی ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے قابلیت پر مبنی تعلیم پر ایک خاص توجہ دینے پر زور دیا تاکہ طلبا ان تصورات کی بہتر تفہیم پیدا کرسکیں جن کو حقیقی صورتحال میں لاگو کیا جاسکے۔