مستقلی کے حق میں کنٹریکچول لیکچراروںکا احتجاج

سرینگر// اپنی ملازمت کی مستقلی اور جاب پالیسی کے حق میں کنٹریکچول لیکچراروںنے کل پریس کالونی میں احتجاج کیا اور نعرہ بازی کی ۔احتجاجی لیکچرار ملازمت کی مستقلی کے مطالبے کے حق میں احتجاج مظاہرہ کیا۔انہوںنے بتا یا کہ وہ جاب پالیس کے مطالبے کے حق میں گذشتہ کئی برسوں سے احتجاجی مظاہرے کر رہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ وہ اعلیٰ تعلیم یافتہ ہیں اور کئی پی ایچ ڈی ،NETاور پوسٹ گریجویٹ ہیں تاہم انہیں یو جی سی نارمز کے تحت تنخواہ نہیں دی جارہی ہے اور ہر سال انہیں تعیناتی کیلئے فارم داخل کرنے پڑتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اگر سرکار40ہزار رہبر تعلیم اساتذہ کو ریگولر کرسکتی ہے تو 1500اعلیٰ تعلیم یافتہ امیداروں کا مستقبل بچانے کیلئے کوئی پالیسی کیوں نہیں بنائی جاتی ہے ۔انہوں نے محکمہ اعلیٰ تعلیم پر الزام لگایا کہ وہ ان کے ساتھ سوتیلی ماں کا سلوک کرکے انہیں یو جی سی کے نارمز کے تحت تنخواہ نہیں دی جاتی ہے ۔انہوں نے دھمکی دی کی کہ سرکار نے ان کی مستقلی کے حوالے سے جلد کوئی اقدام نہیں کیا تو وہ سڑکوں پر آکر منظم احتجاجی مہم چھیڑ دیں گے ۔