مزید خبریں

مکانات کی تعمیرکیلئے قسطوں میں تاخیر | ادائیگیاں نہ ملنے سے تعمیرات متاثر ،غریب پریشان 

بختیار کاظمی 
سرنکوٹ// پردھان منتری اواس یوجنا کے تحت تعمیرکئے جانے والے پی ایم اے وائی مکانات کی وقت پر قسط نہ ملنے کی وجہ سے رائشی مکانات گزشتہ کئی عرصہ سے نہ مکمل ہیں ۔سرنکوٹ کی بیشتر پنچایتوں کے مستحقین نے شکایت درج کرواتے ہوئے کہاکہ گزشتہ کئی عرصہ سے مرکزی حکومت کی جانب سے چلائی گئی سکیم کے سلسلہ میں قسطیںہی نہیں دی گئی جس کی وجہ سے کئی ماہ سے رہائشی مکانات کی تعمیر ات بند پڑی ہوئی ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ کچھ مکینوں نے قرض لے کر رہائشی مکانات تعمیر کرنے کا عمل شروع کیا تھا لیکن متعلقہ حکام کی لاپرواہی کی وجہ سے ابھی تک ان کو قسطیں ہی نہیں فراہم کی گئی جس کی وجہ سے مستحقین کو کئی طرح کے مسائل درپیش ہو گئے ہیں ۔مستحقین نے بتایا کہ وہ حکومت کی سکیم کا فائدہ اٹھانے کے بجائے الجھن میں پڑ گئے ہیں ایک جانب نہ تو رہائشی مکانات کی تعمیر مکمل ہو رہی ہے اور دوسری جانب حکام کی جانب سے قسطیں بھی فراہم نہیں کی جارہی ہیں ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ جلدازجلد ان کو قسطیں فراہم کی جائیں تاکہ وہ اپنے رہائشی مکانات تعمیر کر سکیں ۔
 

دھماکہ خیز مواد سے متعلق بیداری پروگرام 

رمیش کیسر 
نوشہرہ //نوشہرہ سب ڈویژن میں فوج کی جانب سے منعقدہ ایک بیداری پروگرام کے دوران بچوں کو دھماکہ خیز مواد سے متعلقہ مکمل جانکاری بالخصوص احتیاطی تدابیر کے سلسلہ میں بیدار کیا گیا ۔فوج کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق نوشہرہ سب ڈویژن کے شیر کمیونٹی ہال میں فوج کی جانب سے ایک بیداری پروگرام منعقد کیا گیا جس کے دوران مقررین نے عام لوگوں بالخصوص بچوں کو دھماکہ خیز مواد کے سلسلہ میں جانکاری فراہم کیں کہ اس سے با حفاظت کیسے رہا جاسکتا ہیے ۔مقررین نے بتایا کہ مذکورہ پروگرام منعقد کرنے کا اصل مقصد علاقہ مکینوں کو حدمتارکہ کے نزدیک بچھائی گئی بارودی سرنگوں سے بچنے کیلئے جانکاری فراہم کی گئی ۔مقامی لوگوں نے فوج کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہاامید ظاہر کی کہ آئندہ بھی مذکورہ نوعیت کے پروگراموں کا اہتمام کیا جائے گا ۔
 
 
 

کوٹرنکہ و بدھل میں نصب کردہ سڑیٹ لائٹس خراب 

محمد بشارت  
کوٹرنکہ //کوٹرنکہ سب ڈویژن کے کوٹرنکہ اور بدھل قصبوں میں لائی گئی سٹریٹ لائٹس گزشتہ کئی عرصہ سے خراب پڑی ہوئی ہیں لیکن ان کی مرمت کیلئے متعلقہ حکام کی جانب سے ابھی تک کوئی قدم نہیں اٹھایا گیا ہے ۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ دنوں قصبوں میں عوامی مفاد کیلئے 2008میں سٹریٹ لائٹس نصب کی گئی تھی لیکن نصب کرنے کے کچھ ہی عرصہ کے اندر لگ بھگ سبھی لائٹس خراب ہو گئی جس کے بعد ان کی مرمت کیلئے کوئی عملی قدم نہیں اٹھایا گیا ۔غور طلب ہے کہ مذکورہ لائٹس چوکوں اور مذہبی مقامات کے نزدیک لگائی گئی تھی ۔انہوں نے بتایا کہ بس سٹینڈبدھل اور مین چوک کوٹرنکہ میں نصب کی گئی لائٹس کی خرابی کیلئے کئی مرتبہ متعلقہ حکام سے رابطہ قائم کیا گیا لیکن ابھی تک مرمت نہیں کی جاسکی جس کی وجہ سے رمضان میں اب نمازیوں کیلئے بھی مذکورہ لائٹس سود مند ثابت نہیں ہو رہی ہیں ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہا کہ مذکورہ لائٹس کی جلدازجلد مرمت کیلئے متعلقہ حکام کو ہدایت جاری کی جائیں ۔
 

35روز سے’ سنگیوٹ ۔لوہرکا ‘رابطہ سڑک بند 

مقامی لوگوں کا ایک وفد ایس ڈی ایم سے ملاقی 

جاوید اقبال 
مینڈھر //مینڈھر سب ڈویژن کے سنگیوٹ علاقہ میں سنگیوٹ تا لوہرکا رابطہ سڑک کو ایک شخص کی جانب سے گزشتہ 35روز سے بند کر دیا گیا ہے جس کی وجہ سے کئی دیہات کی عوام کو دوران آمد ورفت شدید مشکلات درپیش ہیں ۔مقامی لوگوں نے متعلقہ محکمہ اور مقامی انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ گزشتہ کئی دنوں سے بند پڑی ہوئی سڑک کے سلسلہ میں شکایت درج کروائی گئی ہیں لیکن ابھی تک حکام رابطہ سڑک کو بحال کروانے میں ناکام ثابت ہو ئی ہے ۔اس سلسلہ میں مقامی لوگوں کا ایک وفد ایس ڈی ایم مینڈھر سے ملا قی ہوا اور بند ہوئی سڑک کے سلسلہ میں شکایت درج کرواتے ہوئے جموں پونچھ شاہراہ کو بند کر کے احتجاج کرنے کا انتباہ بھی دیا ۔اس دوران ایس ڈی ایم نے متعلقہ حکام کو ہدایت جاری کرتے ہوئے کہاکہ سڑک کی بند کرنے کے عمل کا نوٹس لے کر جلدازجلد اس کو بحال کروایا جائے تاکہ عام لوگوں کو سہولیات مل سکیں ۔
 
 
 
 

طبی مرکز پلیرہ کا حال بے حال 

عملے کی عدم دستیابی عوام کیلئے مشکلات کا سبب

عشرت حسین بٹ
منڈی//سرکار کی جانب سے تحصیل منڈی کے علاقہ پلیرہ میں قائم کردہ طبی مرکز میں عملے کی عدم دستیابی کی وجہ سے عوام کو کافی مشکلات کا سامناکرنا پڑ رہاہے۔ مکینوں کے مطابق نہ ہی اس طبی مرکز میں کوئی ڈاکٹر تعینات ہے اور نہ دوسرا طبی عملہ موجود ہے جس کی وجہ سے اس علاقہ کے لوگوں کو علاج و معالجے کیلئے یا تو سب ضلع ہسپتال منڈی کا رخ کرنا پڑتا ہے یا وہ ضلع ہسپتال جا کر طبی سہولیات حاصل کر تے ہیں ۔علاقہ کے سابق ممبر پنچایت یار محمد خان نے بتایا کہ سرکار کی جانب سے پندرہ برس قبل پلیرہ میں طبی مرکز قائم کیا تھا مگر آج تک اس طبی مرکز میں ڈاکٹر کی تعیناتی نہیں کی گئی ۔ان کا کہنا تھا کہ طبی مرکز میں ایک میڈیکل اسسٹنٹ اور ایک میڈیم تعینات ہیں جو کہ اس طبی مرکز کا نظام چلانے کیلئے کافی نہیں ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پلیرہ علاقہ پانچ پنچایتوں پر مشتمل ہے جس میں پانچ ہزار سے زائدلوگ اپنی زندگی بسر کرتے ہیں مگر جب وہ بیمار ہو جاتے ہیں تو انہیں منڈی یا پونچھ ہسپتال کا ہی رخ کرنا پڑتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ سرکار کو چاہیے کہ وہ اس طبی مرکز میں ڈاکٹر کی تعیناتی عمل میں لائے تاکہ عوام کی مشکلات کا ازالہ ہو سکے۔محمد اعظم خان نامی ایک اور شخص نے بتایا کہ اس طبی مرکزکیلئے ایک ایمبولینس بھی سابقہ ممبر قانون ساز کونسل ڈاکٹر شہناز گنائی نے اپنے ذاتی فنڈ سے دی تھی مگر اس کا بھی کوئی پتہ نہیں کہ وہ کہا رکھی گئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ طبی مرکز میں صفائی کرم چاری کا بھی کو انتظام نہیں ہے جس کی وجہ سے طبی مرکز میں گندگی کے ڈھیر لگے رہتے ہیں۔ رابطہ کرنے پر بلاک میڈیکل آفسر منڈی ڈاکٹر نصرت النساء نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ حال ہی میں سرکاری کی جانب سے اس طبی مرکز کو پی ایچ سی سے این ٹی پی ایچ سی کا درجہ دیا اور اس طبی مرکز میں سرکار کی جانب سے ڈاکٹر کی تعیناتی عمل میں نہیں لائی گئی ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ طبی مرکز میں ایک میڈیکل اسسٹنٹ ایک ایم پی ڈبلیو اور ایک صفائی کرمچاری پہلے سے ہی تعینات ہے۔ انہوں نے ایمبولینس کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ طبی مرکز میں جگہ نہ ہونے کے کارن ایمبولینس کو سب ضلع ہسپتال منڈی میں ہی رکھا گیا ہے جو کہ ضرورت پڑنے پر پلیرہ بھیج دی جاتی ہے۔
 
 

تیل کی قیمتوںمیں لگاتار اضافہ

سیاسی و سماجی کارکنان کا اظہار تشویش

حسین محتشم
پونچھ//ملک بھر میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں بار بار اضافہ سے مہنگائی میں مزید اضافے کے خدشات کا اظہار کیا جا رہا ہے۔ پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے پر عوام کی جانب سے حکومت سے ان قیمتوں کو واپس لینے کے مطالبات کئے جا رہے ہیں وہیں سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے طنز، تنقید اور غصے کا اظہار کیا جا رہا ہے۔اپنی پارٹی کی ضلع نائب صدر بشیر احمد خاکی نے پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔انہوں نے کہا مہنگائی، بے روزگاری، غربت اور کرپشن کے بعد اب ملک میں تیل کی قیمتوں کو بھی ریکارڈ توڑ دیاہے۔ انہوں نے کہا کہ پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے سے ہر چیز مہنگی ہوتی جا رہی ہے جس کی وجہ سے غریب عوام پریشان ہوتے جا رہے ہیں۔ کانگریس کے سینئر لیڈر تاج میر نے کہا حکومت کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کیا جا رہا ہے جب ملک میں گزشتہ دو سال سے مہنگائی میں مسلسل اضاف ہو رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کی معراج ہے وہ غریب لوگوں کو پڑھ رہی ہے۔ دونوں لیڈروں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ مہنگائی ختم کی جائے اور لوگوں کو روزگار فراہم کرنے کیموقع  فراہم کئے جائیں تاکہ غریب پریشانیوں سے راحت حاصل کر سکیں۔
 

رمضان کی آمد کیساتھ ہی مساجد میں رونقیں لوٹ آئی 

پونچھ// ماہِ رمضان المبارک کی آمد ہوتے ہی مساجد میں نمازیوں کا جم غفیر نظر آنے لگا ہے۔ ماہِ صیام کا چاند نظر آتے ہی شہر بھر کی مختلف مساجد میں حفاظ کرام کی اقتداء￿  میں متعدد مومنین نے بیس رکعت سنت موکدہ نماز تراویح ادا کر کے اپنی بندگی کا ثبوت دیا۔ دریں اثناء شہر پونچھ کی تاریخی اور مرکزی جامع مسجد میں مفتی مولانا فاروق حسین مصباحی نے حسب سابق درس حدیث مبارکہ کا با قاعدہ آغاز کیا۔ اس موقع پر نمازیوں کی کثیر تعداد نے درس حدیث سے استفادہ کیا۔ آج کا درس نیک نیتی اور اچھے اعمال کی تعلیم پر مشتمل تھا جس میں صیاح ستہ کی احادیث مبارکہ شامل کی گئی تھیں۔ درس کے اختتام پر سارے عالم کے امن و سکون کے لئے خصوصی دعا کی گئی۔
 
 

راجوری میں فوج کا بیداری پروگرام 

راجوری //فوج کی جانب سے راجوری ضلع میں ’روز گار کا موقعہ ‘کے عنوان سے ایک بیداری پروگرام کا اہتمام کیا گیا جس میں نوجوانوں کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی ۔ضلع کے سموٹ علاقہ میں منعقدہ پروگرام کے دوران مقررین نے نوجوانوں کو اس مشکل وقت میں مختلف روز گار سکیموں کے سلسلہ میں بیدار کرتے ہوئے کہاکہ جہاں حکومت کی جانب سے کئی روز گار سکیمیں شروع کی گئی ہیں وہائیں فوج کی جانب سے نوجوانوں کو مختلف امتحانات کیلئے تیار کرنے کیلئے کوچنگ بھی فراہم کی جارہی ہے ۔انہوں نے نوجوانوں سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ انتظامیہ اور فوج کی جانب سے شروع کر دہ روز گار سکیموں سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھایا جائے تاکہ وہ اپنا روز گار خود تیار کرنے کے اہل ہو سکیں ۔
 

سوچھتا ابھیان کے تحت پونچھ میں صفائی مہم چلائی گئی 

پونچھ //این سی سی رضا کاروں کی جانب سے پونچھ ضلع میں سوچھتا ابھیان کے تحت پونچھ میں صفائی مہم چلائی گئی جس کے دوران پانی بالخصوص قدتی چشموں کی صفائی ستھرائی عمل میں لائی گئی ۔اس صفائی مہم میں گور نمنٹ ہائر سکینڈری سکول پونچھ کے این سی سی رضا کاروں کیساتھ ساتھ گور نمنٹ ڈگری کالج پونچھ ودیگر سرکاری سکولوں کے بچوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔اس صفائی مہم کے دوران این سی سی رضا کاروں نے پونچھ میں مختلف قدرتی چشموں کی صفائی ستھرائی کرنے کیساتھ ساتھ عام لوگوں سے بھی صفائی ستھرائی کے سلسلہ میں اپنا رول ادا کرنے کی اپیل کی ۔اس دوران تعلیمی اداروں کے سٹاف ممبران بھی مذکورہ رضاکاری کے ہمراہ موجود تھے ۔