مزید خبریں

منجاکوٹ میں بلاک لیول بنکرز کمیٹی میٹنگ منعقد

پرویز خان
منجاکوٹ//ڈاک بنگلہ منجاکوٹ میں بلاک لیول بنکرز کمیٹی میٹنگ منعقد ہوئی جہاں لیڈ بنک منیجر راجوری جیوتی پرکاش شرما اور سینئر کانگریس لیڈر و ڈی ڈی سی ممبر منجاکوٹ شبیر احمد خان بھی موجود تھے۔اس موقع پر جموں و کشمیر بنک ضلع منیجر جیوتی پرکاش شرما اور ڈی ڈی سی ممبر نے گھمبیر مغلاں میں بنک شاخ کھولنے کو کہا گیااور لیڈ بنک منیجر راجوری نے ایک مہینہ کے اندر اندر ہی شاخ کھولنے کا وعدہ کیا۔ اس موقع پر جموں و کشمیر بنک اور گرامین بنک منجاکوٹ کے برانچ منیجر کے علاوہ محکمہ زراعت، محکمہ باغبانی اور محکمہ پشو پالن کے علاوہ دیگر ملازمین بھی موجود تھے ۔
 
 
 

منجاکوٹ میں سیلون شاپ کا افتتاح 

منجاکوٹ//کانگریس کے سینئر لیڈر اور ڈی ڈی سی ممبر شبیر احمد خان نے منجاکوٹ میںایک سیلون شاپ کا افتتاح کیا جہاں بہترین قسم کی سہولیات دستیاب ہیں۔ شبیر احمد خان نے سیلون شاپ کے مالک کو نیک خواہشات سے نوازا۔ اس موقعہ پر ان کے ہمراہ کئی سیاسی و سماجی شخصیات بھی موجود تھیں۔ 
 
 
 
 

 سرحدی دیہات میںموبائل مواصلاتی خدمات کی فراہمی پر زور

 مینڈھر//سرحدی علاقہ جات کے مکینوں کی فلاح وبہبود ی کے لئے کام کرنے والی جموں وکشمیر کی واحد رجسٹرڈ تنظیم ’جموں وکشمیر بارڈر ایریا ڈولپمنٹ کانفرنس‘ نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا سے اپیل کی ہے کہ ضلع پونچھ کے سرحدی علاقوں میں مناسب موبائل مواصلاتی خدمات فراہم کی جائیں۔ جے کے بی اے ڈی سی چیئرمین ڈاکٹر شہزاد ملک نے لیفٹیننٹ گورنر کو اِس ضمن میں تفصیلی مکتوب ارسال کیا ہے جس میںپونچھ ضلع کی تحصیل منکوٹ کے پانچ گائوں چھجلہ،رام کنڈ، اڑکی، گا  ہنی، منکوٹ اوربنلوئی کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہاں پرکوئی بھی موبائل رابطہ نہیں، یہاں تک کہ حکومت کے ماتحت بی ایس این ایل نے بھی یہاں مواصلاتی خدمت مہیا نہ کی ہے۔ انہوں نے لیفٹیننٹ گورنر سے گذارش کی ہے کہ ترجیحی بنیادوں پر سرحدی علاقہ جات میں موبائل فون ٹاورز نصب کر کے وہاں پر مواصلاتی خدمات بہم پہنچائی جائیں۔
 
 

ڈگری کالج مینڈھر میں فوج کا بھرتی آگاہی پروگرام

جاوید اقبال      
مینڈھر//مینڈھر گنرس نے گورنمنٹ ڈگری کالج مینڈھر میں ایک پروگرام کا انعقاد کیا جسمیں فوجی آفیسران نے سکولی بچوں سے ملاقات کرکے فوج میں بھرتی ہونے سے متعلق بتایا۔ اس دوران کالج کے پرنسپل اور اسٹاف ممبران کے علاوہ گیارہویں اور بارہویں کلاس کے 150سے زائد بچوں نے حصہ لیا۔ فوجی آفیسران نے فوج میں بھرتی ہونے کیلئے کئی قسم کی سکیموں کے متعلق بچوں کو بتایا تاکہ بچے تعلیم حاصل کرنے کے بعد بیروز گار نہ رہیں ۔انکا کہنا تھا کہ ہندوستانی فوج میں بھرتی ہونے سے کیا کیا فائدے بچوں کو ملتے ہیں اور ملک کی کیسے خدمت کی جاتی ہے۔بچوں اور سکولی اساتذہ نے فو ج کا شکریہ اداء کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں بڑی خوشی ہوئی کہ فوجی آفیسران نہ ہمیں مختلف قسم کی سکیموں کے بارے میں بتایا تاکہ ہم فوج میں بھر تی ہو سکیں۔
 
 

مینڈھر میں مشاعرے کا اہتمام

جاوید اقبال       
مینڈھر//گورنمنٹ ڈگری کالج مینڈھر میں جموں وکشمیر پولیس مینڈھرنے جموں وکشمیر کلچرل اکیڈمی کے اشتراک سے ایک مشاعرے کا اہتمام کیا جسمیں کئی شاعروں نے حصہ لیا۔اس موقعہ پر ایس ڈی پی او مینڈھر سید ظہیر عباس جعفری اور ایس ڈی ایم مینڈھر ڈاکٹر ساحل جنڈیال نے مہمان خصوصی کے طور پر شرکت کی جبکہ ایس ایچ او مینڈھر منظور کوہلی بھی مشاعرہ کے دوران موجود رہے ۔مشاعرے کا لطف ڈگری کالج میں موجود بچوں اور کئی معززین لوگوں نے اٹھایا۔ اس موقعہ پر شاعروں نے اپنے اپنے انداز سے اپنے اپنے شعر بیان کئے جبکہ پروفیسر ڈاکٹر مرتضی احم نے باہر سے آئے ہوئے مہمانوں کا شکریہ اداء کیا۔
 
 
 

مشیر بھٹناگر کی کئی متعدد وفود اور افراد سے ملاقات  | جائز شکایات کا بروقت اَزالہ کرنے کا یقین دلایا 

جموں//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر راجیو رائے بھٹناگر نے سول سیکرٹریٹ میں منعقدہ عوامی رسائی پروگرام کے دوران متعدد وَفود اور اَفراد سے ملاقات کی۔وَفود اور اَفراد نے مشیر کو اَپنے مسائل اور مطالبات گوش گزار کئے اور ان کے فوری حل کر نے کی مانگ کی۔جے کے ایمپلائز جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے ایک وفد نے جموں و کشمیر میں ملازمین کی فلاح و بہبود سے متعلق متعدد امور اُٹھائے۔ اُنہوں نے تنخواہ کی واگزاری اور باقی ماندہ آر ای ٹی کی خدمات کو باقاعدہ بنانے کا مطالبہ کیا۔اُنہوں نے مختلف محکموں میں تنخواہوں کی تفاوت کو دور کرنے ، اُجرتوں میں اضافہ اور این آر ایچ ایم ملازمین کو باقاعدہ بنانے ، ہسپتال ڈیولپمنٹ فنڈ میں کام کرنے والے ملازمین کو باقاعدہ بنانے اورجے کے آر ٹی سی ملازمین کے حق میں اِلتوأ میں پڑے تنخواہوں کی واگزاری کا مطالبہ کیا۔بے روزگار آئی ایس ایم ڈاکٹرس ایسوسی ایشن کے ایک اور وفد نے این ایچ ایم سکیم کے تحت برج کورس کے عہدوں پر درخواست دینے کے لئے عمر میں یک وقتی رعایت دینے کا مطالبہ کیا۔اِسی طرح محکمہ صحت کو لینڈ ڈونرس کی ایک وفد نے ایس آر او 520 کے تحت محکمہ میں شمولیت کا مطالبہ کیا۔ریاسی کے بلاک پنتھال کے مقامی اَفرادکے وفد نے مشیر کو اَپنے علاقے کی ترقی سے متعلق متعدد امور گوش گزار کئے۔اِسی طرح محکمہ جل شکتی کے لینڈ ڈونرس کے وفد نے محکمہ میں باقاعدہ شمولیت کا مطالبہ کیا۔اِسی طرح ڈی ڈی سی کونسلر کے ذریعہ مروہ ہلڈ کے مقامی افراد کے وفد نے داچنند کے لئے بھی علاحدہ میڈیکل بلاک کا مطالبہ کیا جس میں سی ایچ سی مروہ کے لئے خالی اسامیوں کو پُر کئے جانے کا مطالبہ بھی شامل ہے۔۔اِن وفود کے علاوہ جموں ، سری نگر، بڈگام ، راجوری ، پلوامہ ، اننت ناگ ، پہلگام ، ڈوڈہ ، کشتورند دیگر علاقوں سے متعدد افراد نے مشیر کے ساتھ ملاقات کر کرے متعدد امور اٹھائے اور فوری ازالہ کی مانگ کی۔مشیر بھٹناگر نے وَفود او راَفراد کے مطابات اور مسائل بغور سنا اور انہیں یقین دِلایا کہ ان کے مطالبات اور مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے گا۔
 
 
 

تھرو میں تحصیل دفتر کے قیام کو لیکر احتجاج

 زاہد ملک
درماڑی//سب ڈویژن درماڑی کے تحصیل تھرو کے لوگوں نے تھرو میں تحصیل دفتر کے قیام کے مطالبہ کو لیکر احتجاج کیا۔مظاہرین مانگ کر رہے تھے کہ تحصیلدار تحصیل دفتر تھرو میں بیٹھے۔مظاہرین نے کہا کہ تحصیلدار تھرو جو کہ درماڑی ہیڈکوٹر پر بیٹھتا ہے وہ تھرو میں بیٹھے۔لوگوں نے کہا کہ انہیں تحصیل کے کام کیلئے درماڑی کا رخ کرنا پڑتا ہے ۔لوگوں نے کہا انہوں نے اس سے قبل بھی مظاہرے کئے تھے لیکن صرف جھوٹی یقین دھانی کرائی گئی۔لوگوں نے بدھن درماڑی سڑک کو کئی گھنٹوں تک بند رکھا ۔اس کے بعد تحصیلدار تھرو موقع پر پہنچے اور لوگوں کو یقین دلایا کہ وہ ہفتہ میں کچھ دن تھرو میں بھی بیٹھیں گے جس کے بعد لوگوں نے احتجاج ختم کر دیا۔
 
 
 

محکمہ جل شکتی خواب غفلت میں |  پینے کے پانی کی فراہمی کا نظام بوسیدہ: سروڑی

 جموں//سابق وزیر اورجموں و کشمیر پردیش کانگریس کمیٹی کے نائب صدر غلام محمد سروڑی نے الزام لگایا کہ محکمہ جل شکتی کی ہر گھر کو نل کا پانے فراہم کرنے کی اسکیم منہدم ہو رہی ہے اور محکمہ خواب غفلت میں ہے جسے بیدار کرنا وقت کی ضرورت ہے ۔سروڑی نے کہا کہ محکمہ پرانی زنگ آلود پائپوں کوتبدیل کرنے میں ناکام رہا ہے اور لوگوں کو کئی جگہوں پر آلودہ پانی پینا پڑرہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آلودہ اور ناپاک پینے کے پانی کی فراہمی کی وجہ سے پانی سے پیدا ہونے والی بیماریاں بڑھ رہی ہیں۔ سروڑی نے کہا کہ جل شکتی محکمہ کا سپلائی نظام سست روی کا شکار ہے اور لوگوں کو پانی کیلئے مشکلات کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے ۔انہوںنے کہاکہ  پچھلے کئی ماہ سے کشتواڑ اور ڈوڈہ اضلاع میں ایک بڑی تعداد پانی کے بحران سے دوچار ہے جہاں متعدد علاقوں میں نلکے خشک ہو رہے ہیں اور خاص طور پر خواتین کو پانی کی قلت کے سبب مشکلات کا سامنا کرنا پڑا رہا ہے ۔انہوںنے کہاکہ محکمہ کو چاہئے کہ جن علاقہ جات میں پانی کی فراہمی نہیں ہے ان کاسروے کرے تاکہ تمام لوگوں کو پینے کا صاف پانی مہیا ہوکیونکہ ہر گھر کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی نہیں ہے۔سروڑی نے اس سلسلے میں کمشنر سکریٹری جل شکتی سے ملاقات کی اور عوامی مسائل کی جانکاری فراہم کی ۔
 
 
 

 حضرت فاطمہ زہرا ؑ کی ولادت با سعادت پرجشن

حسین محتشم 
پونچھ// جناب فاطمہ زہرا بنت رسول اکرمؐ کی ولادت باسعادعت کے موقعہ امام بارگاہ عالیہ پونچھ میں20جماد الثانی کی شب محفل کا اہتمام کیا گیا جس میں عاشقان محمد و آل محمد کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔محفل کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا ، بعد از آںثناء خواں حضرات نے نعت و منقبت کے نذارنہ پیش کئے۔اس دوران حجۃ الاسلام مولانا انعام علی نقوی امام جمعہ و جماعت مرکزی جامع مسجد المصطفٰی منڈی نے اس موقعہ پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دختر رسول جناب فاطمہ زہرا سلام اللہ بیس جمادی الثانی ہجرت سے آٹھ سال قبل پیغمبر اسلام حضرت محمد مصطفے صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور جناب خدیجہ الکبری سلام اللہ علیھا کے بیت الشرف میں اس دنیا میں تشریف لائیں ۔محفل کے اختتام پر انجمن جعفریہ پونچھ کے زیر اہتمام جناب فاطمہ زہرا کی سیرت سے متعلق ہوئے امتحانت میں پہلی دوسری اور تیسری پوزیشن حاصل کرنے والوں میں انعامات تقسیم کئے گئے۔ امام بارگاہ عالیہ منڈی میں بدھوار کو بعد نماز ظہرین ایک محفل مقاسدہ کا اہتمام کیا گیا جس میں ضلع پونچھ کے معروف شعرائے کرام جن میں محتشم احتشام، عظمت جعفری، شبیہ الحسن قیصر ، ابرار نقوی، عشرت بٹ، اکبر علی، محمد سبطین ، محمد جعفر ، شاہد رضا، وسیم حیدر نے دیئے گئے مصرعہ طرحی ’’مقام ْ منزلت کی کیا عطا زہرا نے پائی ہے‘‘ پر اپنے لکھے اشعار پیش کر کے داد وتحسین حاصل کی ۔بعد نماز مغربین مسجد اہلبیت بچتر نگر پونچھ میں اسی ضمن میں محفل مقاصدہ کا انعقاد کیا گیا جہاں شعرائے کرام نے مصرعہ طرح ’’ قرآن تیرے حق میں قصیدہ ہے فاطہ‘‘ پر اپنے اشعار پیش کئے ۔
 
 

۔6 فروری سے وادی کشمیر میں ریل چلانے کی افواہیں بے بنیاد:حکام

محمد تسکین
بانہال// وادی کشمیر میں 06 فروری سے ریل سروس کو چلائے جانے کی خبریں بدھ کے روز سوشل میڈیا پر گشت کرتی رہیں اور بانہال میں کئی لوگ ریل کے چلنے کے بارے میں خوب تشہیر کرتے ریے جبکہ ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کو بھی اس خبر کے بارے میں فون کالز موصول ہوتی رہیں۔ سوشل میڈیا پر پھیلی اس خبر کا سچ جاننے کیلئے کشمیر عظمیٰ نے ریلوے ٹریفک انسپکٹر کشمیر عبدالبصیر بالی سے بات کی تو انہوں نے ان خبروں کو غلط اور بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ خبریں سوشل میڈیا پر ہی پھیلی ہوئی ہیں اور حقیقت سے اس کا کوئی تعلق نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس بارے میں ریلوے حکام کو کسی بھی قسم کی کوئی ہدایت نہیں دی گئی ہے اور لوگوں کو سوشل میڈیا پر پھیلی ان افواہوں پر کان نہیں دھرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ مارچ 2020 کے مہینے میں کورونا وائرس کی عالمی وبا پھوٹنے کے بعد بند ریل سروس کو جب بھی بحال کیا جائے تو اس بارے میں سب کو پتہ چل جائے گا۔اس دوران ذرائع نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ بدھ کے روز بانہال میں ارکان انٹرنیشنل سے منسوب ریل کا ایک ڈبہ چلتا رہا اور اس میں ڈیزل سے بجلی پر ریل چلانے کیلئے نصب کی جارہی الیکٹرک لائین کیلئے سامان لیا جارہا تھا جس کا کام ارکان انٹرنیشنل کو سونپا گیا ہے۔
 
 

جعلی تقرریوںکا سکینڈل بے نقاب،بدنام زمانہ جعلساز گرفتار

 جموں// کرائم برانچ جموں نے جعلی تقرریوںکے ایک بڑے سکینڈل کا پردہ فاش کرتے ہوئے بدنام زمانہ جعلساز کو گرفتار کرلیا ہے۔کرائم برانچ بیان کے مطابق ایک بدنام زمانہ جعلساز منظور حسین قادری ولد مرحوم غلام حسن قادری ساکن پوشوانی ، تحصیل پٹن ضلع بارہمولہ کو جموں سٹی سے گرفتار کیا ۔کرائم برانچ جموں نے شریک ملزموں مشتاق احمد گنائی ساکن بونہ محلہ کولگام،فیاض احمد ڈار ساکن چھانہ پورہ پٹن کے ساتھ ملی بھگت کرکے  جعلی تقرری کے احکامات بنانے اوربے روزگار نوجوانوں کو دھوکہ دینے میں ملوث ہونے کا الزام ہے۔اس سلسلے میںرمن کترو اور دیگر کے ذریعہ کرائم برانچ جموں میں ایک تحریری شکایت درج کی گئی تھی جس میں اس نے یہ الزام لگایا تھا کہ مذکورہ ملزم افراد نے نوکری کا بندوبست کرنے کے بہانے ان کے حق میں جعلی تقرری کے احکامات جاری کرنے کے بعد ان سے بڑی رقم وصول کی۔کیس کی تفتیش کے دوران ، یہ پتہ چلا ہے کہ ملزم ایک عادی مجرم اور بدنام زمانہ مجرم ہے۔ وارنٹ معزز عدالت کے ذریعہ اس کے خلاف جاری کیا گیا ۔ ملزم محکمہ جنگلات میں ملازم کی حیثیت سے خدمات انجام دے چکا ہے لیکن بعد میں اسے ملازمت سے فارغ کردیا گیا۔ وہ مختلف پولیس اسٹیشنوں میں درج 08 تک فوجداری مقدمات میں بھی ملوث ہے۔ ملزم کو مقدمے کی مزید تفتیش کے لئے پولیس ریمانڈ طلب کرنے پر معزز عدالت قانون کے روبرو پیش کیا گیا۔
 
 

 نوجوان خاتون کی پراسرار موت قتل میں بدل گئی |  متوفی خاتون کے شوہر کو گرفتار کرلیاگیا: پولیس

راجوری//ضلع راجوری میں جموں و کشمیر پولیس نے 16 نومبر 2020 کو پراسرارحالات میں جاں بحق ہونے والی اپنی اہلیہ کے قتل کے الزام میں ایک شخص کے خلاف مقدمہ درج کرکے اسے گرفتار کیا ہے جس کے بعد اس واقعہ کی تفتیشی کارروائی تھانہ سندر بنی میں کی گئی۔16 نومبر 2020 کو سندربنی قصبے کے وارڈ 4 کے رہائشی شنکر شرما کی بیوی روپکشی شرما کی پراسرار موت کے بارے میں ایک اطلاع موصول ہوئی۔واقعے کا جائزہ لیتے ہوئے پولیس نے 174 سی آر پی سی کے تحت تفتیش کی کارروائی شروع کردی اور سندربنی میں بورڈ آف ڈاکٹروں کے توسط سے لاش کا پوسٹ مارٹم کیا گیا اور اسپاٹ شواہد بھی اکٹھے کیے گئے۔ایس ایس پی راجوری چندن کوہلی نے بتایا کہ ایڈیشنل ایس پی نوشہرہ ، گدھاری لال شرما کی نگرانی میں سب ڈویڑنل پولیس آفیسر نوشہرہ ذاکر شاہین مرزا اور اسٹیشن ہاؤس آفیسر سندربنی سنجیو سلتھیا کی سربراہی میں خصوصی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی گئی اورتمام بیانات ، ثبوت ، حالات اور قانونی پہلوؤں کو مدنظر رکھتے ہوئے معاملے کی تحقیقات پیشہ ورانہ طور پر کی گئیں۔ ایس ایس پی نے کہا"شبہ کی سوئی مقتول کے شوہر یعنی شنکر شرما کی طرف موڑ گئی جسے بھی حراست میں لیا گیا جبکہ میڈیکل رپورٹ اور پوسٹ مارٹم رپورٹ میں گلا گھونٹنے کے سبب خاتون کی موت واقع ہوگئی جس کے بعد مقتولہ کے شوہر پر مقدمہ درج کیا گیا ہے اور اسے اپنی بیوی کے قتل کے معاملے میں گرفتار کیا گیا ہے" ۔انہوں نے مزید کہا کہ سندربنی پولیس اسٹیشن میں دفعہ 302 آئی پی سی کے تحت ایف آئی آر 10/2021 درج کی گئی ہے اور ملزم گرفتار ہوا ہے۔
 
 

راجوری میں ہیروئین کے ساتھ شہری گرفتار

راجوری//ہیروئن کی کھیپ کے ساتھ راجوری قصبے کے علاقے دھنی دھر سے تعلق رکھنے والے ایک شخص کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔پولیس نے بتایا کہ تھانہ راجوری کی پولیس پارٹی سمیر جیلانی ایس ایچ او راجوری اور ونود کمار ڈی وائی ایس پی حکرس راجوری کی نگرانی میں سیلانی کے علاقے میںناکہ چیکنگ ڈیوٹی پر تھی کہ راجوری کی طرف جاتے ہوئے ایک سکارپیو گاڑی کو روکا گیا۔ گاڑی کے ڈرائیور نے اپنی شناخت محمد شکور ولد محمد بشیر ساکن دھنی دھر راجوری کے طور پر ظاہر کی۔پولیس نے مزید بتایا کہ مذکورہ شخص سے 11 گرام ہیروئن مادہ کی طرح ملی۔ گاڑی کو موقع پر ہی قبضہ میں لیا گیا تھا اور ایک شخص کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے۔
 
 
 

 سندر بنی سیکٹر گوباری سے گرج اٹھا

سمت بھارگو
راجوری// پندرہ دن کے وقفے وقفے کے بعد راجوری ضلع کے سندربنی سیکٹر میں لائن آف کنٹرول پر ہندوستان اور پاکستان کی افواج کی بندوقیں گرجنے لگیں۔عہدیداروں نے بتایا کہ جنگ بندی کی خلاف ورزی شام چھ بجے شروع ہوئی ۔عہدیداروں نے مزید کہا کہ پاک فوج نے علاقے میں اسلحے کی فائرنگ اور گولہ باری کا آغاز کیا جس سے بھارتی فوج کی جانب سے شدید جوابی کارروائی کی گئی ۔پولیس نے بتایا کہ ابھی تک کسی کے جانی نقصان یا زخمی ہونے کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔اس سے قبل 18 جنوری کو پاک فوج نے اسی سیکٹر میں جنگ بندی کی خلاف ورزی کی تھی جس کے نتیجے میں ایک فوجی جوان زخمی ہوگیا تھا جو بعد میں دم توڑ گیا تھا۔
 

عالمی تحریک اردو کی طرف سے مظفر حنفی عالمی ایوارڈ کا اعلان 

جموں//عالمی شہرت یافتہ افسانہ نگار، مترجم ، شاعر اور نقاد مظفر حنفی کے نام پر عالمی تحریک اردو تنظیم نے مظفر حنفی عالمی اردو ایوارڈ شروع کرنے کا اعلان کیا ہے جو اپریل 2021 کے پہلے ہفتے میں دیا جائے گا۔ عالمی تحریک اردو کے صدر ڈاکٹر ذاکر ملک بھلیسی نے عالمی تحریک اردو کے فیس بک پیج پر لایو آکر اس ایوارڈ کا اعلان کیا۔ انھوں نے بتایا کہ عالمی تحریک اردو کی مرکزی کمیٹی کا اجلاس 30 جنوری کو منعقد ہوا تھا جس میں یہ فیصلہ لیا گیا تھا کہ اس سال سے عالمی تحریک اردو مظفر حنفی عالمی اردو ایوارڈ شروع کرے گی۔ انھوں نے بتایا کہ ایوارڈ کیلئے 35 ہزار روپے کی رقم کے علاوہ ایک سرٹیفکیٹ اور ٹرافی بھی دی جائے گی اور باضابطہ طور ا?ن لاین یا ا?ف لاین پروگرام میں کسی ادبی شخصیت کو اس ایوارڈ سے نوازہ جائے گا۔ 
 

شاہراہ پر ٹریفک کی آمد و رفت جاری

محمد تسکین
بانہال // جواہر ٹنل کے دونوں طرف اور بانہال کے پہاڑوں پر بدھ کی صبح سے ہی ہلکی ہلکی برفباری کا سلسلہ سلسلہ رک رک کر جاری رہا جبکہ بانہال رام بن سیکٹر میں بارشوں کے باوجود شاہراہ ٹریفک کی نقل وحرکت کیلئے چلتی رہی اور بدھ کو کشمیر سے جموں کی طرف ٹریفک معمول کے مطابق چلتا رہا۔ اس دوران بدھ کی سہ پہر بعد ٹنل اور قاضی گنڈ کے درمیان سلپ کیوجہ سے ٹریفک جام اور بند رہا تاہم اسے پانچ بجے بعد بحال کیا گیا۔اس دوران کیو آر ٹی کھڑی کے رضاکاروں نے بدھ کی شام دیر گئے اطلاع دی کہ شیر بی بی اور ناچلانہ کے درمیان پسی کے گرنے سے بند ہوئی شاہراہ کو رات قریب ساڑھے نو بجے دوبارہ بحال کیا گیا اور کشمیر سے جموں کی طرف ٹرک نکل رہے ہیں۔