مزید خبریں

لداخ میں کووِڈ- 19کے 7 نئے معاملے

لیہہ//لداخ میں کووِڈ- 19کے 7 نئے معاملے سامنے آنے کے ساتھ ہی خطے میں کورونامتاثرین کی تعداد 28,119 ہوگئی ہے جبکہ فعال کووِڈ معاملات کی تعدادکم ہوکر119رہ گئی ہے۔حکام کے مطابو نئے سبھی معاملے لیہہ میں پائے گئے ہیں۔خطے میں ابھی تک 228لوگ کووِڈکی وجہ سے فوت ہوچکے ہیں۔اس دوران لیہہ کے اسپتالوں سے آج 11مریضوں کوٹھیک ہونے کے بعد گھر روانہ کیاگیا۔ اس دوران مرکزی زیرانتظام اس علاقہ میںکوروناسے شفایاب ہوئے مریضوں کی تعداد 27,772ہوگئی ہے۔
 
 
 
 
 

امیراکدل گرنیڈ دھماکے میں ہوئی ہلاکتوں پرسیاسی جماعتیں برہم

بے گناہوں کے قتل کی اجازت نہیں:نیشنل کانفرنس،تحقیقات کی جائے:اے این سی،قابل مذمت:انجمن شرعی شعیاں

 سرینگر//نیشنل کانفرنس ،عوامی نیشنل کانفرنس،انجمن شرعی شعیان نے لالچوک گرینیڈدھماکے میں ہوئی ہلاکتوں کی مذمت کرتے ہوئے مہلوکین کے لواحقین سے تعزیت کااظہار کیا ہے۔نیشنل کانفرنس کے صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ اور نائب صدر عمر عبداللہ نے امیرا کدل میں ہوئے گرینیڈ دھماکے میں معصوم لوگوں کے جاں بحق ہونے اور دو درجن کے قریب افراد کے زخمی ہونے پر گہرے صدمے اور افسوس کا اظہار کیاہے۔ انہوں نے واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ایسے گھنائونے واقعات کی جس قدر مذمت اور ملامت کی جائے کم ہے۔ انہوں نے کہا کہ کوئی مذہب معصوم اور بے گناہوں کے قتلِ ناحق کی اجازت نہیں دیتا ہے۔ انہوںنے واقعہ میں جان بحق ہوئے نوہٹہ کے شہری محمد اسلم مخدومی اور صورہ کی معصوم دوشیزہ رافع نذیر کے اہل خانہ اور لواحقین کیساتھ دلی تعزیت کا اظہار کیا ہے ۔ انہوں نے دعا کی کہ اللہ تعالیٰ مرحومین کے سوگوران کو یہ صبر جمیل عطا کرے اور یہ صدمہ برداشت کرنے کی توفیق عطا فرمائے۔ دونوں لیڈران نے حکومت پر زور دیا کہ واقعہ میںزخمی ہوئے افراد کو بہتر سے بہتر علاج و معالجہ فراہم کیا جائے۔ عوامی نیشنل کا نفرنس کی صدر بیگم خالدہ شاہ اور سینئر نائب صدر مظفر شاہ نے امیراکدل میں ہوئے گرنیڈ حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔ایک بیان میں انہوں نے اس واقعہ کی اعلی سطحی تحقیقات کا مطا لبہ کرتے ہوئے کہا کہ جموں کشمیرکے لوگوں نے گزشتہ تین دہائیوں کے دوران تشددکی وجہ سے بہت کچھ سہا ہے اور اب ایسے واقعات بند ہونے چاہیں۔موصو لہ بیان میں انہوں نے اس حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی قسم کا تشددلوگوں کیلئے باعث مصیبت ہوتا ہے اور اس حملے کامنصوبہ بنانے والوں کو عدالت کے کٹہرے میں کھڑاکیاجانا چاہیے۔پارٹی نے حملے میں مارے گئے دوافراد کی مغفرت اورزخمیوں کی فوری شفایابی کی دعاکی۔ادھر انجمن شرعی شیعیان  کے صدر آغا سید حسن نے لال چوک سرینگر میں ہوئے گرینیڈدھماکے میں جان بحق جوان سال طالبہ رافیعہ نذیر دختر نذیر احمد ٹنڈا اور محمد اسلم مخدومی کے لواحقین سے دلی ہمدردی اور تعزیت و تسلیت کا اظہار کیاہے۔ آغا حسن نے اس دھماکے میں شدید طور پر زخمی ہوئے افراد کی جلد شفایابی کی دعا کرتے ہوئے کہا کہ بھیڑ بھاڑ والے مصروف مقامات پر اس طرح کے حملے قابل افسوس  اور قابل مذمت ہے ،ایسی انسانیت سوز کاروائیوں کی ہر سطح پر مذمت ہونی چائے ۔
 
 
 
 
 
 

غیر معروف مقامات اورمہم جو سیاحت کا فروغ 

احمد آباداِنڈیا ٹریول مارٹ میں جموں وکشمیر سٹال کوبہترین قرار دیا گیا

احمد آباد//جموں وکشمیر محکمہ سیاحت کے سٹال کو احمد آباداِنڈیا ٹریول مارٹ میں غیر معروف مقامات اور مہم جو سیاحت کو فروغ دینے کے لئے بہترین سٹال قرار دیا گیا۔آرگنائزروں نے مومنٹو پیش کرتے ہوئے سیاحوں کو سیاحتی مصنوعات کی متنوع مصنوعات کی رینج فراہم کرنے کی کوششوں پر محکمہ کی تعریف کی۔ ٹریویل مارٹ آرگنائزروںاور سٹال پر آنے والے مہمانوں نے مہم جو سرگرمیوں کو مزید فروغ دینے اور ٹریکنگ روٹس ، برف اور دیگر مہم جوسرگرمیوں کو شامل کرنے کے لئے محکمہ کی کوششوں کو سراہا۔دریں اثنأ ،محکمہ نے تقریب کے موقعہ پر کیواڈیا میں سٹیچو آف یونٹی پر سیاحوں میں ایک تشہیری آئوٹ ریچ پروگرام کا اِنعقاد کیا۔اِس تقریب کا اہتمام سٹیچو آف یونٹی ،ائیریا ڈیولپمنٹ اینڈ ٹوراِزم گورننس اَتھارٹی (SoUADTGA)کے حکام کے تعاون سے کیا گیا ہے۔محکمہ سیاحت کے اَفسران چیف ایگزیکٹیو آفیسر راجوری ڈیولپمنٹ اَتھارٹی وویک پوری ، ڈپٹی ڈائریکٹر سیاحت کشمیر احسان الحق چشتی اور ٹورسٹ آفیسر احمد آباد انکش سونی نے سیاحوں کو جموںوکشمیر کے دورے کے دائرہ کار کے بارے میں معلومات فراہم کیں اورسیاحت کے فروغ کے لئے محکمہ کی طرف سے اُٹھائے گئے نئے اِقدامات کے بارے میں جانکاری دی۔سٹیچو آف یونٹی پر روزانہ ہزاروں کی تعداد میں سیاحوں کا بہت زیادہ رَش دیکھنے کو ملتا ہے۔اَفسران کی ٹیم نے پرانے احمد آباد شہر کی ایک ہیر ٹیج واک میں حصہ لیا جس کا اہتمام مقامی ٹریول آپریٹروں نے احمد آباد میونسپل کارپوریشن کے اشتراک سے کیا تھا ۔ اِس واک کے دوران اَفسران نے مقامی ثقافتی ورثہ کے شائقین کو جموںوکشمیر کی ثقافتی صلاحیتوں اور دیگر سیاحتی مصنوعات کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔
 
 
 

گورنمنٹ ڈینٹل کالج سرینگر میں ’یومِ ماہرین دندان‘ کی تقریب منعقد

سرینگر//ڈینٹل کالج سرینگرمیں پیرکو’ماہرین دندان ‘دن صحت عامہ کے محکمہ کی طرف سے منایاگیا۔اس سلسلے میں منعقدہ ایک تقریب میں سینئرڈاکٹروں،پوسٹ گریجویٹ ڈاکٹروں،اورطلاب نے شرکت کی۔تقریب کاآغازکالج کے پرنسپل ڈاکٹر ریاض فاروق نے کیا۔تقریب کا موضوع  ’دندان سازی کے مختلف معاملات ‘ تھا، جس پر مقررین نے تفصیلی جانکاری فراہم کی اور اس دبائو اور پریشانی سے کیسے بچا جاسکتا ہے۔ موجودہ کورونا دورمیں طبی شعبے سے وابستہ افرادکیلئے نہایت ہی پریشان کن ہے، داکٹر عاصم فاروق شاہ نے دندان سازی کے مسائل پر مفصل روشنی ڈالی۔ مہمان خصوصی ڈاکٹر یامون کاوسہ نے دندان سازی سے بچنے کیلئے تجاویز پیش کی۔ڈاکٹر یامون کاوس نے نفسیات (psychiatry)میں ایم ڈی کیا ہے اور اس وقت انسٹیٹوٹ آف مینٹل ہیلتھ اینڈ نیورو سائنسز گورنمنٹ میڈیکل کالج میں اسسٹنٹ پروفیسر ہیں۔ 
 
 
 
 

سینئرایڈوکیٹ جاویدکائوسہ انتقال کرگئے

بارایسوسی ایشن ،ڈاکٹر فاروق، محکمہ قانون اور کشمیریونیورسٹی کااظہار تعزیت 

سری نگر//سینئر ایڈوکیٹ جاوید احمد کاوسہ کا مختصر علالت کے بعد اتوارکی رات انتقال ہوگیا۔ مرحوم کی نماز جنازہ پیر باغ میں ادا کی گئی جس کے بعد ان کی میت کو صنعت نگر قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا۔نیشنل کانفرنس صدرڈاکٹر فاروق عبداللہ نے ہائی کورٹ کے سینئر وکیل ایڈوکیٹ جاوید احمد کائوسہ ساکن پیرباغ کے انتقال پر گہرے صدمے کااظہار کیاہے اور اس سانحہ ارتحال پر مرحوم کے جملہ سوگواران خصوصاً مرحوم کے والد جسٹس محمد حسین کائوسہ کے ساتھ دلی تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے مرحوم کی جنت نشینی کیلئے دعا کی۔ پارٹی کے نائب صدر عمر عبداللہ ،جنرل سکریٹری علی محمدساگر، صوبائی صدر ناصر اسلم وانی، سینئر لیڈر عرفان احمدشاہ ، رکن پارلیمان جسٹس (ر) حسنین مسعودی نے بھی اس سانحہ ارتحال پر تعزیت کا اظہار کیاہے اور مرحوم کی جنت نشینی کیلئے دعا کی ہے۔ادھر قانون ، اِنصاف اور پارلیمانی امور محکمہ نے سابق ایڈیشنل ایڈ ووکیٹ جنرل جاوید احمد کاووسہ کے اِنتقال پر گہرے دُکھ کا اِظہار کیا ہے ۔جاوید احمد کاووسہ نے ایڈیشنل ایڈ وکیٹ جنرل کی حیثیت سے جموںوکشمیر ہائی کورٹ کے سامنے مختلف سرکاری محکموں کی نمائندگی کی تھی۔ محکمہ کاووسہ کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھے گا۔تمام اَفسران اور ملازمین بالخصوص سیکرٹری قانون اچل سیٹھی نے سوگوار کنبے کے ساتھ دلی ہمدردی اور یکجہتی کا اِظہار کیا ہے اور مرحوم کی روح کے ابدی سکون کے لئے دعا کی۔ جموں و کشمیر ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن نے مرحوم کی یاد میں سوموارکو کام بند کیا۔بار ایسوسی ایشن کی جانب سے تعزیتی اجلاس سہ پہر ہائی کورٹ کے کانفرنس ہال میں منعقدہوا،جس دوران مرحوم کوخراج عقیدت پیش کیاگیااوراُن کے ایصال ثواب کیلئے دعای گئی۔دریں اثناء کشمیر یونیورسٹی کے وائس چانسلر، رجسٹرار اور افسران نے سینئر ایڈوکیٹ جاوید احمد کاوسہ کے انتقال پر تعزیت کا اظہار کیا۔یونیورسٹی کی طرف سے جاری بیان میں کہاگیاکہ وائس چانسلر یونیورسٹی آف کشمیر پروفیسر طلعت احمد، رجسٹرار ڈاکٹر نثار اے میر اور یونیورسٹی کے دیگر سینئر افسران نے پیر کو سینئر ایڈوکیٹ جموں و کشمیر ہائی کورٹ، جاوید احمد کاووسہ کے انتقال پر تعزیت کا اظہار کیا۔پروفیسر طلعت اور ڈاکٹر نثار نے مرحوم کی روح کے ابدی سکون کی دعا کرتے ہوئے غم کی اس گھڑی میں سوگوار خاندان خاص طور پر جوائنٹ رجسٹرار کشمیر یونیورسٹی عصمت کاووسہ کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا۔پروفیسر طلعت اور ڈاکٹر نثار نے کہا کہ جاوید کائوسہ نہ صرف ایک نامور وکیل تھے بلکہ ایک عاجز انسان بھی تھے۔ انہوں نے ماضی میں کشمیر یونیورسٹی کے اسٹینڈنگ کونسل کے طوران کی طویل وابستگی کو بھی یاد کیا۔ڈاکٹر نثار اور یونیورسٹی کے متعدد افسران نے مرحومہ کی نماز جنازہ میں شرکت کی اور کشمیریونیورسٹی کی جوائنٹ رجسٹرار عصمت کاووسہ اور ان کے پورے خاندان سے اظہار یکجہتی کیا۔
 
 
 
 

یومِ عالمی خواتین

گاندربل کے نوجوان کا حیرت انگیز کارنامہ

۔4برسوںمیں 2 لاکھ خواتین کو ہیلپ لائن کی جانکاری دی

ارشاد احمد
گاندربل//یوم خواتین کا عالمی دن ہے جو ہر سال 8 مارچ کو خواتین کی ثقافتی، سیاسی اور سماجی اقتصادی کامیابیوں کی یاد میں منایا جاتا ہے. اس یوم کو منانے کا مقصد خواتین کے حقوق کی جو صنفی مساوات، تولیدی حقوق، اور خواتین کے خلاف گھریلو تشدد اور بدسلوکی جیسے مسائل پر توجہ دلاتی ہے۔خواتین کے عالمی دن کے موقعہ پر جہاں جموں وکشمیر میں مختلف مقامات پر تقاریب کا انعقاد کیا گیا اور خواتین کی حوصلہ افزائی کی بات کی جارہی ہے.وہی جموں وکشمیر کے ضلع گاندربل کے علاقہ تولہ مولہ میں ایسا بھی نوجوان ہے جو سماج میںخواتین پر ہورہے گھریلو تشدد، ظلم و زیادتیوں کے خلاف لگن اور کوششوں سے جانکاری مہم کو گھر گھر جاکر خواتین کو انصاف دلانے کے لئے دن رات محنت کررہا ہے۔بلال احمد بٹ ساکنہ تولہ مولہ گاندربل نے 2018 سے آج تک جموں، کشمیر اور لداخ صوبوں میں 1 لاکھ 96 ہزار سے زائد خواتین کو جموں کشمیر ومنز ہیلپ لائن 181 کے بارے میں جانکاری دی جو جموں کشمیر سرکار کے محکمہ سماجی بہبود کے زیر اہتمام وزارت خواتین اور بچوں کی دیکھ بھال حکومت ہند کی جانب سے ان مظلوم خواتین کے متعلق قائم کی گئی ہے جو گھریلو تشدد، زیادتی،جہیزکی ستائی ہوئی خواتین کو مدد بہم پہنچانے کے لئے شروع کی گئی ہے۔ بلال احمد بٹ  نے بہت کم وقت میں حوصلہ مند کام انجام دیا ہے جو قابل تعریف اور حوصلہ افزابھی ہے۔جموں کشمیر سرکار کی جانب سے قائم کی گئی ہیلپ لائن181 جو خواتین کیلئے قائم کی گئی جو گھریلو تشدد،ظلم و زیادتیوں کی شکار خواتین کیلئے مقرر کی گئی ہے جو 24 گھنٹے میسر رہتی ہے۔بلال احمد بٹ نے کشمیر کے بانڈی پورہ، بڈگام،سرینگر،گاندربل، کوگام اور دراس کرگل اضلاع میں جاکر سکولوں، کالجوں سمیت گھر گھر جاکر خواتین کو ان کے حقوق کے بارے میں جانکاری دی ہے۔ جانکاری مہم کے تحت تشدد کی شکار ہزاروں خواتین نے اس ہیلپ لائن سے استفادہ کرتے ہوئے اپنے حقوق حاصل کئے۔عوامی حلقوں میں مذکورہ نوجوان کے کام کی کافی سراہناکی جارہی ہے ،ایسے میں خواتین کے عالمی دن پر مذکورہ نوجوان کی حوصلہ افزائی کی جائے تاکہ مزید نوجوان اس کام کی جانب راغب ہوجائے ۔ 
 
 
 

جراثیم کش ادویات اورکھادوں کی قیمتوںمیں اضافہ

میوہ صنعت کو زمین بوس کرنے کی سازش : نیشنل کانفرنس 

سرینگر// نیشنل کانفرنس نے باغبانی شعبے سے تعلق رکھنے والے افراد کی حالت زار پر زبردست تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایسا محسوس ہورہاہے ایک منصوبہ بند سازش کے تحت یہاں کی میوہ صنعت کو زمین بوس کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ پارٹی ترجمان نے کہاکہ گذشتہ برسوں کے دوران قبل از وقت برفباری نے جہاں مالکانِ باغات کی کمر توڑ کر رکھ دی تھی، وہیں 5اگست2019کے بعد مسلسل لاک ڈائون اور سرینگرجموں شاہراہ کی خرابی کے نام پر میوہ ٹرکوں کی نقل و حمل پر پابندی نے اس صنعت سے وابستہ لوگوں کوپشت بہ دیوار کردیا تھا۔ اگرچہ گذشتہ سال مالکانِ باغات کی اُمیدیں جاگ اُٹھیں تھی، تاہم ایرانی سیبوں کی بغیر ٹیکس درآمد نے کشمیری فروٹ انڈسٹری کو ایک اور دھچکا دیا۔ ان حالات کے پس منظر میں جہاں حکومت کو یہاں کے مالکانِ باغات کی مدد کیلئے آگے آنا تھا، وہیں حکومت کاغذی گھوڑے دوڑانے کے سوا کچھ نہیں کررہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ اس شعبے کے تئیں حکومت کی غفلت کا اندازہ اس بات سے لگایاجاسکتا ہے کہ باغبانی میں کام آنے والی جراثم کُش ادویات، کھادوں اور دیگر ساز و سامان کی قیمتوںکو اعتدال میںرکھنے کیلئے حکومتی سطح پر کوئی بھی نظام کام نہیں کررہا ہے اور مالکان باغات سے ان ضروری چیزوں کیلئے منہ مانگی قیمتوں وصول کی جارہی ہیں۔پوٹیش کھاد کی مثال پیش کرتے ہوئے ترجمان نے کہا کہ گذشتہ سال اس کھاد کی قیمت 1700روپے کونٹل تھی جبکہ امسال یہی کھاد 3400سے4000روپے کے داموں بک رہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ ایک سال میں قیمتوں میں دوگناہ اضافے سے کاشت کار زبردست مشکلات سے دوچار ہیں اور حکومت سطح پر میلوں کے انعقاد کے بغیر کچھ نہیں ہورہاہے۔ ترجمان نے متعلقہ حکام سے اپیل کی کہ وہ باغبانی میں کام آنے والی ادویات، کھادوں اور دیگر اشیاء کی قیمتوں کو اعتدال میں رکھنے کیلئے جنگی بنیادوں پر اقدامات کریں۔ 
 
 
 
 
 
 
 
 

 جموں وکشمیر نےجو کچھ کھویا ہے

 محبوبہ مفتی کی قیادت میں واپس حاصل کرینگے:ہانجورہ 

سرینگر//پی ڈی پی کے جنرل سیکریٹری غلام نبی لون ہانجورہ نے کہا ہے کہ جموںوکشمیر نے جو کچھ بھی کھویا ہے وہ پارٹی صدر محبوبہ مفتی کی قیادت میں عزت و وقار سے واپس حاصل کرینگے ۔ ہانجورہ کی سربراہ میں عہدیداروں اور وسطی کشمیر کے ضلع اور زونل صدور کی کمیٹی میٹنگ پارٹی ہیڈکوارٹر میںمنعقد ہوئی ۔ میٹنگ میں پارٹی کی سینئر لیڈر اور سابق وزیر آسیہ نقاش بھی موجود تھی۔ غلام نبی لون ہانجورہ نے بنیادی سطح پر پارٹی سرگرمیوںاور ممبر شپ مہم کا جائزہ لیا۔ ہانجورہ نے کہاکہ جموںوکشمیر میں پی ڈی پی ہی واحد ایسی جماعت ہے جس کے پاس عوام دوست ایجنڈا ہے جس کو تاریخ ساز لیڈر اور پی ڈی پی بانی مفتی محمد سعید نے دیا ہے اور اس پارٹی کی قیادت محترک لیڈر محبوبہ مفتی کررہی ہے۔ میٹنگ میں  ریاستی سیکریٹری عبدالحمید کوہ شین اور غلام محی الدین وچی، اسٹیٹ کارڈینیٹر طارق محی الدین، ضلع صدر سری نگر حاجی پرویز احمد، ضلع صدر بڈگام محمد یاسین بٹ، میڈیا کارڈینیٹر کشمیر بشیر بیگ، ریاستی سیکریٹری یوتھ عارف لائیگرو ، سینئر لیڈر سابق وی سی حلقہ انچارج عیدگاہ ڈاکٹر علی محمد، حلقہ انچارج بٹہ مالو عبدالقیوم بٹ، انچارج جڈی بل آصف وانگنو، ضلعی نائب صدور میر محمد صدیق، علی محمد بابا، سابق وی ڈی پی سری نگر محمد مقبول بیگ، ضلع سرینگر کے صدر محمد مقبول بیگ، یوتھ صدر سرینگر، تمام ضلعی کمیٹی کے اراکین، زونل صدور اور زونل کمیٹیوں کے اراکین نے شرکت کی۔ 
 
 
 

ولادتِ امام حسین ؑ، بارجی ہارون میںمجلس 

سرینگر//ولادتِ امام حسین ؑکی مناسبت سے اسلامک ایڈ کئیر فاونڈیشن بارجی بالا اور شیعہ ایسوسی ایشن یونٹ بارجی ہارون کی جانب سے مشترکہ طور پر ایک مجلس کا انعقاد کیا گیا جس میں درسگاہ معارف علوم اسلامی سے وابستہ کئی درسگاہوں کے ہونہار طلبہ و طالبات نے قرآن خوانی، منقبت اور نعت خوانی کرکے اس محفل کو پررونق بنایا۔ طلبہ و طالبات کے علاوہ اس مجلس میں مقامی باشندوں نے بھی خاصی تعداد نے شرکت کی۔محفل کے اختتام پر آغا سید عدیل مرتضیٰ نے ولادتِ امام حسین ؑ کے مختلف گوشوں پر روشنی ڈالتے ہوئے شرکاء محفل خاص کر محفل میں موجود تمام طلبہ و طالبات کو حسینی کردار اپنانے کی تلقین کی۔آغا عدیل نے پشاور پاکستان میں ہوئے حملے کی مذمت کرتے ہوئے تمام اسلامی ممالک کے حکمرانوں اور خاص کر پاکستانی حکمرانوں سے اس دلدوذ واقع کی تحقیقات کرنے کامطالبہ کیا۔مجلس میں شیعہ ایسوسی ایشن یونٹ بارجی ہارون کے چئیرمین گلفام بارجی نے اس موقع پر اسلامی ایڈکئیر فاونڈیشن بارجی بالا کے تمام منتظین کا اس طرح کی روح پر ور محفل منعقد کرنے کے لئے ان کی کافی سراہناکی اور اس محفل کو کامیاب بنانے کے لئے تمام شرکاء محفل کو مبارک باد پیش کی۔