مزید خبریں

مشکوک نقل و حرکت کے واقعات میں اچانک اضافہ 

گزشتہ دو ہفتوں میں 1درجن تلاشی کارروائیاں عمل میں لائی گئی 

سمت بھارگو 
راجوری //راجوری ضلع میں گزشتہ کئی دنوں سے مشتبہ افراد کی مشکوک نقل و حرکت میں ہوئے اضافے کے واقعات کے بعد ضلع بھر میں سیکورٹی انتظامات مزید سخت کر دئیے گئے ہیں جبکہ سیکورٹی ایجنسیوں کی جانب سے گزشتہ دو ہفتوں میں ایک درجن کے قریب تلاشی کارروائیاں مختلف علاقوں میں انجام دی ہیں ۔اس تلاشی مہم کے دوران لمبیڑی علاقہ میں کچھ رابطہ کیلئے مصنوعی اشیاء بھی برآمد کی گئی ہیں ۔سرکاری ذرائع نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ 20جون کے بعد راجوری ضلع میں عسکریت پسندی کی وجہ سے سیکورٹی سخت کی گئی ہت جبکہ مذکورہ ایام میں مشتبہ افراد کی جانب سے مشکوک نقل و حرکت کے سلسلہ میں اطلاع موصول ہونے کے بعد تلاشی کارروائیاں عمل میں لائی گئی ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ جون سے اگست تک ہر برس ضلع کے کئی علاقوں سے مشکوک نقل وحرکت کی اطلاع موصول ہو تی ہیں ۔انہوں نے بتایا ک مکئی کی فصل کی بوائی کے بعد سے ہی مذکورہ نوعیت کی اطلاعات موصول ہوتی ہیں تاہم رواں برس مذکورہ سرگرمیوں میں اضافہ دیکھا گیا ہے ۔ذرائع نے بتایا کہ ضلع میں ہر دوسرے دن مشکوک نقل و حرکت کی اطلاع موصول ہوتی ہے جس کے بعد سیکورٹی ایجنسیوں کی جانب سے مزید سخت حفاظتی اقدامات اٹھائے جارہے ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ مشکوک نقل و حرکت کی لگ بھگ سبھی اطلاع حد متارکہ کے قریبی علاقوں اور دیہات سے موصول ہوئی ہیں ۔ذرائع نے بتایاکہ 20جوں کے بعد سے ابھی تک راجوری ضلع میں منجا کوٹ ،نوشہرہ ،راجوری ،تھنہ منڈی ،بدھل ،کالاکوٹ سمیت کل 9مقامات سے مشکوک نقل و حرکت کی اطلاع موصول ہوئی ہیں جس کے بعد ان علاقوں میں تلاشی مہم چلائی گئی ۔ان سرگرمیوں میں نوشہرہ اور سندر بنی میں 8جولائی او ر 20جون کو پیش آئے واقعات بھی شامل ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ حالیہ ماہ میں پیش آئے دونوں واقعات کے بعد سیکورٹی ایجنسیوں نے مزید مذکورہ نوعیت کے واقعا ت کے سلسلہ میں متحرک رہنے کی تلقین بھی کی ہے ۔ذرائع نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ دونوں سرحدی اضلاع میں سیکورٹی انتظامات سخت کر دئیے گئے ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز مشکوک نقل و حرکت کی ہر ایک اطلاع کو سنجیدگی کیساتھ لے رہی ہیں ۔
 
 
 

مینڈھر ہسپتال کی چار دیواری برسو ں بعد بھی نہ ہوسکی 

محکمہ مال کو نشاندہی کیلئے کئی مرتبہ رجوع کیا گیا :بی ایم او 

جاوید اقبال 
مینڈھر //سب ڈسٹر کٹ ہسپتال مینڈھر کی چار دیواری برسوں سے نہیں کی جاسکی جس کی وجہ سے ہسپتال کی اراضی پر ہمیشہ غیر قانونی طورپر قبضہ کرنے کی کوششیں کی جاتی ہیں ۔مقامی معززین نے بتایا کہ محکمہ سے ہسپتال کی چار دیوری کے سلسلہ میں کئی مرتبہ رجوع کیا گیا لیکن ابھی تک ہسپتال کی اراضی کو یوں ہی چھوڑ دیا گیا ہے ۔غور طلب ہے کہ حالیہ دنوں میں ہی ہسپتال کی اراضی پر قبضہ کرنے کی ایک کوشش کو انتظامیہ کی جانب سے مداخلت کرنے کے بعد ناکام بنایا گیا تھا ۔اس کے علاوہ مینڈھر ہسپتال میں جانے والی سرکلر روڈ بھی نہیں ہے جس کی وجہ سے اکثر گاڑیاں جام میں پھنسی رہتی ہیں ۔بلاک میڈیکل آفیسر مینڈھر نے بتایا کہ کاغذی ریکارڈ کے مطابق ہسپتال کی کل اراضی 18کنال اور 6مرلے ہے تاہم اس کی نشاندہی کیلئے کئی مرتبہ متعلقہ محکمہ سے تحریری طورپر رجوع کیا جاچکا ہے لیکن ابھی تک اس جانب کوئی دھیان ہی نہیں دیا جارہا ہے ۔انہوں نے بتایاکہ اب ایک مرتبہ پھر سے محکمہ سے رجوع کیا جائے تا کہ اراضی کی نشاندہی کروائی جاسکے ۔انہوں نے بتایاکہ اس کی چار دیواری کے سلسلہ میں بھی رجوع کیا گیا ہے ۔مکینوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ ہسپتال کی جلدازجلد چار دیوری کروائی جائے تاکہ عام لوگوں کو بھی سہولیات دستیاب ہوسکیں ۔
 
 
 
 
 

پیٹرول میں پانی نہیں بلکہ کیمیکل ہے :پمپ مالکان

حسین محتشم
پونچھ// پچھلے کچھ دنوں سے پونچھ کے پیٹرول کے صارفین شکایت کر رہے تھے کہ پیٹرول پمپوں پر پیٹرول میں پانی ملا کر فروخت کیا جا رہا ہے۔اس دوران کچھ لوگوں نے احتجاج کر کے کاروائی کی بھی مانگ کی تھی۔ عوام کی شکایت کے بعد اب تمام پیٹرول پمپوں پر صارفین کو شعوری بیداری دی جارہی ہے۔اس دوران پیٹرول پمپ پر آنے والے افراد کو بتایا جا رہا ہے کہ وہ افواہوں پر توجہ نہ دیں۔منگل کے روز بھی یہ سلسلہ جاری رہا اس دوران لوگوں کو بتاگیا کہ پیٹرول میں ایتھنول نامی کیمیکل مکس کیا گیا ہے۔پیٹرول پمپ ماکلان کی جانب سے سبھی صارفین کی گاڑیوں کو ڈب سے چیک کیا جارہا ہے اور اسکے بعد ہی پیٹرول گاڑیوں میں ڈالا جارہا ہے ۔
 
 
 

فوج نے مصوری مقابلے کا اہتمام کیا 

محمد بشارت 
راجوری //فوج کی جانب سے سرحدی ضلع راجوری اور ریاسی میں کرگل دیوس کے سلسلہ میں مصوری مقابلے کا اہتمام کیا گیا ۔ان پروگراموں کومنعقد کرنے کا اصل مقصد کرگل جنگ میں ہلا ک ہوئے فوجی جوانوں کو خراج عقید ت پیش کرنا تھا جبکہ دونوں اضلاع کے کئی دیہات میں انڈین آرمی کی سموٹ بٹالین کی جانب سے پروگرام منعقد کئے گئے ۔ان پروگراموں میں بچوں کیساتھ ساتھ مقامی لوگو ں و معززین کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی ۔مقامی معززین نے فوج کی جانب سے اٹھائے جارہے اقدامات کی تعریف کرتے ہوئے کہاکہ فوج اس مشکل وقت میں بھی عوام کیساتھ بہترین تعاون و تال میل کیساتھ کام کررہی ہے ۔
 
 
 
 

کمپیوٹر دکان پر چوری کی واردات 

جاوید اقبال 
مینڈھر //مینڈھر قصبہ میں پیر اور منگل کی درمیانی شب ایک کمپیوٹر کی دکان پر چوری کی واردات انجام دی گئی جس کے دوران چھ ہزار روپے نقدی و دیگر ساز و سامان چوری کرلیا گیا ۔دکان پینکل ٹیکنالوجی نامی کمپیوٹر دکان کے مالک شانواز خان نے بتایا کہ چوروں نے دکان سے سازو سامان چوری کر نے کی کوشش کی تاہم اس دوران پولیس کی ایک ٹیم موقعہ پر پہنچی گئی جس کی وجہ سے چوروں نے جلدی میں کچھ نقدی و ساز و سامان لے کر فرار ہو گئے ۔جموں وکشمیر پولیس نے اس سلسلہ میں مینڈھر پولیس سٹیشن میں ایک کیس درج کر کے معاملہ کی مزید تحقیقات شروع کر دی ہیں ۔
 
 
 

محکمہ صحت کاصفائی کرمچاری معطل 

جاوید اقبال 
مینڈھر //محکمہ صحت کی جانب سے عوامی شکایت پر کی گئی ایک کارروائی کے دوران سب سنٹر بھیرہ میں تعینات ایک صفائی کرمچاری کو معطل کر دیا گیا ہے ۔بلاک میڈیکل آفیسر مینڈھر نے علاقہ کے مکینوں کی جانب سے کی گئی شکایت پر مذکورہ قدم اٹھا یا ۔انہوں نے بتایا کہ حالیہ کئی عرصہ سے مذکورہ صفائی کرمچاری کی غیر حاضری کے سلسلہ میں شکایت موصول ہو رہی تھی جبکہ مذکورہ ملازم کی جانب سے غیر سنجیدگی کا مظاہرہ کرنے کا سنجیدہ نوٹس لے کر اس کو معطل کر دیا گیا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ ملازمین کو مینڈھر ہسپتال کیساتھ اٹیچ کر کے تحقیقات کا حکم جاری کیا گیا ہے ۔
 
 
 

ڈی سی راجوری نے محکمہ دیہی ترقی کے کام کا ج کاجائزہ لیا 

راجوری //ضلع ترقیاتی کمشنر راجوری راجیش کمار شون نے محکمہ دیہی ترقی کے کام کاج کا جائزہ لیا ۔اس سلسلہ میں انتظامیہ کی جانب سے پی ڈبلیو ڈی ڈاک بنگلہ میں ایک اجلاس منعقد کیا گیا جس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر راجوری ،ایس ای محکمہ پی ڈبلیو ڈی ،ایس ای محکمہ جل شکتی و محکمہ دیہی ترقی کے بلاک ڈیو لپمنٹ آفیسران نے بھی شرکت کی ۔اجلاس کے دوران متعلقہ محکمہ کے زیر تحت جاری مختلف سکیموں کیساتھ ساتھ پروجیکٹوں کا جائزہ لیا گیا ۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے متعلقہ محکمہ کو ہدایت جاری کرتے ہوئے کہاکہ تمام تعمیراتی کاموں کی جیو ٹیگنگ جلداز جلد مکمل کی جائے ۔انہوں نے کہاکہ پنچایتوں میں تعمیراتی عمل کو مکمل کرنے کیلئے جلدازجلد بی کلاس ٹھیکیداروں کی رجسٹریشن کا عمل مکمل کیا جائے تاکہ نوجوانوں کو روز گار مل سکے ۔اجلاس کے دوران پی ایم اے وائی ،منریگا کیساتھ ساتھ مرکزی حکومت کی جانب سے شروع کر دہ دیگر سکیموں کا تفصیلی جائزہ لیا گیا ۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے متعلقہ آفیسران کو ہدایت جاری کرتے ہوئے کہاکہ تعمیراتی عمل میں تیزی لاکر پروجیکٹوں کو جلدازجلد مکمل کیا جائے تاکہ مکینوں کو معیاری سہولیات دستیاب ہو سکیں ۔انہوں نے تمام بلاک ڈیولپمنٹ آفیسر کو ہدایت جاری کرتے ہوئے کہاکہ وہ بغیر اجازت کے اپنے ہیڈ کوارٹر کو نہ چھوڑیں ۔
 
 
 
 

سیلاں میں پی ایم جی ایس وائی کی سڑک مکمل ہونے کی منتظر 

بختیار کاظمی
سرنکوٹ// سرنکوٹ کی پنچایت سیلاں میں 13 سال قبل پی ایم جی ایس وائی کے تحت سڑک کی زمینی کٹائی کی گئی تھی جس کا سروے مٹر موڑ وایا بھونی کھیت سیلاں تا چنن سیر تک کا تھا لیکن ابھی بھی ایک وسیع علاقہ کی عوام مذکورہ رابطہ سڑک سے محروم ہے ۔ مقامی سرپنچ بشیر ملک و فاروق چوہدری پنچ گلزار احمد نے بتایا کہ سڑک کا پہلا ٹینڈر 2013/14 کو ہوا تھا جس کے بعد متعلقہ محکمہ کی جانب سے تین کلو میٹر تک کٹائی کرنے کے بعد کچھ حصہ کو یوں ہی چھوڑ دیا گیا ۔انہوں نے بتایا کہ 12کلو میٹر سڑک محض ایک سو میٹر اراضی کی کٹائی نہ کرنے کی وجہ سے تعمیر ہی نہیں ہو سکی ۔انہوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ مذکورہ اراضی کے سلسلہ میں نہ تو کوئی جھگڑا ہے اور نہ ہی اس پر کوئی مکان تعمیر ہے لیکن محکمہ کی مبینہ لاپرواہی کی وجہ سے ہزاروں کی آبادی کو دوران آمد ورفت شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔مکینوں نے بتایا کہ محکمہ کی لاپرواہی و غیر سنجیدگی کی وجہ سے مریضوں اور حاملہ خواتین کو ہسپتال منتقل کرنے میں شدید مشکلات کا سامنا کرناپڑتا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ سڑک کو مکمل کروانے کے سلسلہ میں انہوں نے محکمہ کیساتھ ساتھ ضلع انتظامیہ سے بھی رجوع کیالیکن اس کے باوجود اس جانب کوئی دھیان ہی نہیں دیا جارہا ہے ۔پنچایتی اراکین و مقامی لوگوں نے لیفٹیننٹ گورنر انتظامیہ سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ سڑک کو جلدازجلد مکمل کرنے کیلئے متعلقہ محکمہ کو حکم جاری کیا جائے تاکہ پسماندہ علاقہ کی عوام کو معیاری سہولیات میسر ہو سکیں ۔
 
 

کوٹرنکہ میں فائر بریگیڈ سٹیشن قائم کرنے کا مطالبہ 

محمد بشارت 
کوٹرنکہ //سب ڈویژن کوٹرنکہ میں فائر اینڈ ایمرجنسی سٹیشن قائم نہ ہونے کی وجہ سے عام لوگوں کو کئی طرح کے مسائل کا سامنا رہتا ہے ۔مقامی معززین نے بتایا کہ گزشتہ کئی برسوں سے سب ڈویژن ہیڈ کوارٹر پر فائر بریگیڈ سٹیشن قائم کرنے کی مانگ کی جارہی ہے لیکن انتظامیہ کی جانب سے دی گئی یقین دہانیوں کے باوجود بھی عوام کو مذکورہ سہولیات دستیاب نہیں ہو سکی ۔مختار چوہدری نامی ایک مقامی شخص نے بتایا کہ کوٹرنکہ میں آگ کی وار دار رونما ہونے کے دوران فائر اینڈ ایمر جنسی سروس ہی دستیاب نہیں ہوتی جس کی وجہ سے عام لوگوں کی شدید نقصان ہوتا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ گزشتہ روز ایک گیس سلنڈر کو لگی آگ کے دوران مذکورہ سہولیت دستیاب ہی نہیں تھی جس کی وجہ سے مشکل کیساتھ آگ پر قابو پایا گیا ۔مقامی معززین نے بتایا کہ سب ڈویژن میں لگ بھگ سبھی رہائشی مکانات میں لکڑی کا استعمال کیا گیا ہے تاہم آگ لگنے کی وجہ سے مذکورہ رہائشی مکانات مکمل طورپر تباہ ہو جاتے ہیں ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ کوٹرنکہ میںہی سٹیشن قائم کیا جائے تاکہ کسی بھی مشکل میں مکینوں کو مذکورہ سہولیت میسر ہو سکے ۔
 
 

بکریاں چوری کرنے پر چور موقعہ سے پکڑا گیا

حسین محشم
پونچھ// سرحدہ ضلع پونچھ کے دور دراز دیہی علاقوں سے بکریوں کوچوری کرنے والے ایک شخص کو مقامی لوگوں نے رنگے ہاتھو ں پکڑ کر پولیس کے حوالے کر دیا ۔گائوں کھنیتر کے مقامی لوگوں نے اس وقت رنگے ہاتھوپکڑ لیا جب وہ ایک گھر سے بکر ی چرا کر فرار ہونے کی کوشش کر رہا ہے ۔مقامی لوگوں نے چور کو پکڑ کر بکری سمیت پولیس تھانہ پہنچایا جہاں پولیس نے اسے حراست میں لیکربکری کو اپنے قبضہ میں لے لیا ۔ جانکاری کے مطابق یہ شخص کلائی کا رہنے والا ہے کافی عرصہ سے بکریوں کو چرا رہا تھا جس کی وجہ سے لوگوں کو اور پولیس کو اس کی تلاش تھی ۔
 
 
 
 

سماج سیوا سوسائٹی نے کرگل کے شہدا ء کو خراج عقیدت پیش کیا

حسین محتشم
پونچھ// سماج سیوا سوسائٹی پونچھ نے کرگل وجئے دیوس کے سلسلہ میں ایک تقریب کا انعقاد کیا جس میں پدم شری ایوارڈی شمبو ناتھ کھجوریا ، کیپٹن جسونت سنگھ ، کیپٹن یشپال سنگھ، لوکیش شرما چیئرمین پہاڑی ویلفیئر فورم کے علاوہ مختلف سکولوں کے اساتذہ طلبہ اور معزز شہریوں نے شرکت کی ۔اس موقعہ پر خطاب کرتے ہوئے سماج سیوا سوسائٹی کے صدر جگل کشور شرما نے کہا کہ ہمیں اپنے بہادر فوجیوں کی قربانیوں کو ہمیشہ یاد رکھنا چاہئے۔ انھوں نے کہا کہ ان کی تنظیم پونچھ میں گذشتہ 6 سالوں سے وجے دیوس منا رہی ہے۔موصوف نے کووڈ کے پھیلائو کو روکنے کیلئے اپنا رول اداکرنے کی اپیل بھی کی ۔اس دوران گریما سودن ، تبسم نذیر ، سونیا سودن اور سمیکشا دتہ اور دیگربہت سے بچوں نے کرگل جنگ پر اپنے خیالات کااظہار کیا ۔مقررین نے کہاکہ مسلح افواج نے لگ بھگ 60 دن تک جنگ لڑی اور جنگ 26 جولائی 1999 کو اختتام پذیر ہوئی جس کے نتیجے میں ہندوستان کی فتح ہوئی۔ انھوں کے مزید کہا کرگل جنگ میں ہندوستانی مسلح افواج کے بہت سارے فوجیوں نے اس مادر وطن کے لئے اپنی جانوں کی قربانی دی۔ انھیں کی یاد میں وجے دیوس منایا جاتا ہے۔اس موقعہ پر ماسٹر ہردیو سنگھ،نذیر حسین،امجد ملک،محمد شکیل،منظور احمد،وشال شرما،اشونی کمار،امرت لال موجود تھے۔
 

ٹاٹا کمپنی کے نام پر جعلی نمک فروخت 

235نمک پیکٹ ضبط ،کارروائی کیلئے شکایت درج 

جاوید اقبال 
مینڈھر //مینڈھر سب ڈویژن میں انتظامیہ کی جانب سے کی جارہی مارکیٹ چیکنگ کے دوران ہرنی علاقہ میں ایک دکان سے 235نمک کے جعلی پیکٹ ضبط کر کے کارروائی کی سفارش کی گئی ہے ۔حکام نے بتایا کہ ہرنی علاقہ میں ایک دکاندار کی جانب سے ٹا ٹا کمپنی کے نمک کے نام پر جعلی کمپنی کا نمک فروخت کیا جارہا تھا تاہم مذکورہ ساز و سامان کے معائینے کے دوران متعلقہ آفیسر نے نمک کی جانچ کے دوران اس کو غیر معیاری پا کر پیکٹ ضبط کر لئے جبکہ اس سلسلہ میں مزید کارروائی کیلئے پولیس کو تحریری طور پر لکھ دیا گیا ہے ۔غور طلب ہے کہ حالیہ کئی دنوں نے انتظامیہ کی جانب سے مارکیٹ چیکنگ کی جارہی ہے جس کے دوران ساز و سامان کے معیار کا معائینہ کیا جارہا ہے ۔انتظامیہ نے تاجروں کو ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ صارفین کو معیاری ساز و سامان فروخت کیا جائے جبکہ غیر قانونی کام کرنے والوں کیخلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔