مزید خبریں

تھنہ منڈی میں تلاشی مہم 

سمت بھارگو
راجوری //سیکورٹی فورسز کی جانب سے راجوری ضلع کے تھنہ منڈی سب ڈویژن میں ایک تلاشی مہم شروع کر دی گئی ہے ۔سیکورٹی ذرائع نے بتایا کہ تھنہ منڈی کے دیہات میں مشکوک نقل و حرکت کی اطلاع موصول ہونے کے بعد ایک تلاشی مہم شروع کی گئی ہے جس میں جموں وکشمیر پولیس کیساتھ ساتھ فوج کی ٹیم بھی موجود ہے ۔بدھ کی صبح شروع کر دہ تلاشی مہم آخری اطلاع موصول ہونے تک جاری تھی ۔دفاعی ذرائع نے بتایا کہ تھنہ منڈی اور منجا کوٹ کے درمیانی علاقوں میں سیکورٹی ایجنسیوں کو مشکوک نقل وحرکت کے سلسلہ میں اطلاع موصول ہوئی ہیں جس کے بعد ان علاقوں میں تلاشی مہم شروع کر دی گئی ہے ۔
 

 دھماکہ خیز مواد کو ناکارہ بنایا گیا

جاوید اقبال 
مینڈھر //سب ڈویژں مینڈھر میں سیکورٹی فورسز کی جانب سے دھماکہ خیز مواد کو کنٹرول دھماکے کے ذریعے تباہ کر دیا گیا ۔سیکورٹی فورسز کو دو ماہ قبل گرفتار شدہ ایک شخص کے قبضہ سے چار بم برآمد ہوئے تھے جبکہ اس عمل کے دوران مذکورہ شخص سے دیگر ساز و سامان بھی بر آمد کیا گیا تھا ۔بدھ کے روز سیکورٹی فورسز کے ماہرین نے پولیس پارٹی کے ہمراہ مذکورہ دھماکہ خیز مواد کو بیری رکھ علاقہ میں منتقل کر کے ایک کنٹرول دھماکے کے ذریعہ ان کو تباہ کر دیا گیا 
 

آلودگی کنٹرول کمیٹی کا بفلیاز میں اجلاس 

بختیار کاظمی
سرنکوٹ//جموں وکشمیر آلودگی کنٹرول کمیٹی پونچھ کی جانب سے گور نمنٹ ہائر سکینڈری سکول بفلیاز میں ایک عوامی اجلاس منعقد کیا گیا ۔اجلاس ایڈویشنل ڈپٹی کمشنر پونچھ بشارت حسین کی قیادت میں منعقدہ اجلاس میں ایس ڈی ایم ،تحصیلدار سرنکوٹ ،ریجنل ڈائریکٹر جے کے پی سی سی جموں و دیگر اراکین و ملازمین نے بھی شرکت کی ۔ان کے علاقہ ڈی ایم او پونچھ جاوید اقبال ،پی سی سی پونچھ مکیش سنگھ بالی ۔اجلاس کے دوران مقامی معززین نے بفلیاز میں معدنیات اور ماحولیاتی آلودگی کے سلسلہ میں اپنے حدشات کا اظہار کرتے ہوئے انتظامیہ کے قدم کی شدید مخالفت کی گئی ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ مذکورہ عمل کے ٹینڈروں میں مقامی لوگوں کو صرف موقعہ فراہم کیا جائے ۔
 
 

سرنکوٹ میں رجسٹر یشن کا عمل ٹھپ 

بختیار کاظمی
سرنکوٹ// سب ضلع سرنکوٹ میں الگ بھگ آٹھ ماہ سے رجسٹریشن کا کام متاثر ہے جبکہ سابق ایس ڈی ایم سرنکوٹ محمد سلیم قریشی کے تبادلے سے لیکر اب تک سرنکوٹ میں رجسٹریشن کاعمل شروع ہی نہیں کیا جاسکا ۔بار ایسوسی ایشن سرنکوٹ نے بتایا کہ اس سلسلہ میں انہوں نے متعدد مرتبہ اعلیٰ حکام سے بھی رابطہ کیا ہے لیکن ابھی تک ٹھپ پڑے ہوئے نظام کو دوبارہ سے بحال ہی نہیں کیا جاسکا ہے ۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ رجسٹریشن کا عمل ٹھپ ہونے کی وجہ سے ان کو سرکاری دفتر کے کئی چکر کاٹنے پڑرہے ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ سرنکوٹ میں تعینات نئے ایس ڈی ایم کی رجسٹریشن آئی ڈی دو ماہ میں بھی تیار نہیں ہو سکی ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ جلداز جلد اس عمل کو دوبارہ سے شروع کیا جائے ۔ایس ڈی ایم سرنکوٹ نے بتایا کہ اس سلسلہ میں اعلیٰ حکام کو تحریری طورپر لکھا گیا ہے ۔
 

سنئی میں پانی نظام انتہائی خستہ 

پاپئیں بوسیدہ ہو گئی ،ملازمین ٹس سے مس نہیں 

؎بختیار کاظمی
سرنکوٹ//  مڈل پنچایت سنئی کے محلہ راجدھان میں پچھلے دس دنوں سے پانی شدید قلت پائی جا رہی ہے جس کی وجہ سے عام لوگوں کو مشکلات درپیش ہیں ۔مکینوں نے محکمہ آب رسانی پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ علاقہ میں پاپئیں مکمل طور پر بوسیدہ ہو گئی ہیں جبکہ لوگوں نے خود پاپئیں باندھ کر پانی کی سپلائی کچھ حد تک بحال رکھی ہوئی تھی لیکن مذکورہ نظام بھی حالیہ کئی دنوں سے متاثر ہو گیا ہے ۔انہوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ واٹر سپلائی سکیموں پر تعینات ملازمین پانی کی سپلائی کو بحال رکھنے کیلئے سنجیدہ ہی نہیں ہیں جس کی وجہ سے عام لوگوں کو کئی کلو میٹر کی پیدل مسافت طے کر کے پینے کا پانی لانا پڑریا ہے ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ ملازمین کو ہدایت جاری کی جائیں تاکہ پائپوں کی جلدازجلد مرمت کی جاسکے ۔
 
 

درہ نالے پر 5 برسوں سے پل تعمیر نہ ہو سکا

لوگوں کو دریا عبور کرنے میں پریشانی کا سامنا 

عظمیٰ یاسمین 
تھنہ منڈی //تھنہ منڈی کے پسماندہ گائوں درہ میں محکمہ دیہی کی جانب سے زیر تعمیر دو پلیاں گزشتہ پانچ برسوں سے تشنہ تکمیل ہیںجس کے نتیجے میں ہزاروں نفوس پر مشتمل کئی دیہات کی آبادی کو دریا عبور کرنے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ مکینوں کے مطابق پانچ سال گزرنے کے باوجود نامعلوم وجوہات کی بناء پر اس نالہ پر زیر تعمیر دو پلیوں کو آج تک مکمل نہیں کیا جا سکا۔ اس سلسلے میں گاؤں کے کئی باشندوں نے روزنامہ کشمیر عظمیٰ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اس سلسلے میں متعدد مرتبہ متعلقہ محکمہ سے رجوع کیا گیا لیکن بدقسمتی سے نامعلوم وجوہات کی بنا پر تاحال اس سلسلے میں کوئی پیشرفت نہیں ہوئی ہے جو کہ انتہائی افسوس ناک بات ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ خاص کر برسات کے موسم میں انھیں دریا عبور کرنے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے علاوہ ازیں کئی مرتبہ جانی اور مالی نقصان بھی اٹھانا پڑتا ہے تاہم عرصہ دراز گزرنے کے باوجود ان پلیوں کو قابل آمد و رفت نہیں بنایا گیا جس کے سبب لوگوں کو دقتوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ قابلِ ذکر ہے کہ کائیں والی ، اڑانگی اور نیڑیاں ڈھوک کے بالائی علاقوں سے نکلنے والا یہ نالہ درہ گاوں کو دو برابر حصوں میں تقسیم کرتا ہوا قصبہ تھنہ منڈی کی طرف بہتا ہے جس پر زیر تعمیر دو پلیوں کے تعمیراتی کام کو عرصہ پانچ سالوں سے ادھورا چھوڑ کر یہاں کے باشندوں کو مشکلات میں ڈالا ہوا ہے اور انھیں نہ کردہ گناہ کی سزا دی جا رہی ہے اور انتظامیہ کسی بڑے حادثے کی منتظر محو تماشا بنی ہوئی ہے۔ اس سلسلے میں موضع درہ اور اس سے ملحقہ کئی دیہات کے عوام نے ایک مرتبہ پھر ضلع ترقیاتی کمشنر راجوری راجیش کمار شاون اور گورنر انتظامیہ سے ان پلیوں کا ادھورا کام فوری طور مکمل کرنے کی مانگ کی ہے تاکہ عوام کو مزید مشکلات سے دوچار نہ ہونا پڑے۔
 
 

میاں بشیر لاروی کے چہلم کی مناسبت سے تقریب کا انعقاد

عظمیٰ یاسمین
تھنہ منڈی //سب ڈویژن تھنہ منڈی کے محلہ مسیت والی اپر الال میںمیاں بشیر احمد لاروی کے چہلم کا پروگرام عقیدت واحترام کے ساتھ منایا گیا۔ غوثیہ جامع مسجد تھنہ منڈی کے خطیب و امام حافظ محمد نصیر الدین نقشبندی کی صدارت و حاجی نثار حسین کی محنت و کاوش سے منعقدہ اس تقریب سعید میں علماء کرام کے ساتھ ساتھ عقیدت مندوں کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی۔ تقریب کا آغاز تلاوت کلام الہی اور نعت رسول سے کیا گیا۔ بعدہ خطمات المعظمات کا بھی اہتمام کیا گیا۔اس موقع پر متعدد علماء نے اپنے خطاب کے دوران میاں بشیر احمد لاروی کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہاکہ مرحوم ایک ہمہ جہت شخصیت کے مالک تھے جنہوں نے پوری زندگی سیاسی ، سماجی اور مذہبی و روحانی طور پر عوام الناس کی بے مثال خدمت کی ہے۔ علماء نے کہا کہ امت مسلمہ اولیاء کرام کی تعلیمات پر عمل پیرا ہو کر ہی کامیاب زندگی حاصل کر سکتی ہے۔ علماء نے عقیدے کی پختگی اور مسلک اعلی حضرت کی صحیح ترجمانی کرتے ہوئے دعوت فکر دی کہ موجودہ صورت حال میں ضرورت اس بات کی ہے کہ دین اسلام کو عام کرنے کیلئے اپنا رول ادا کیا جائے۔ اس پروگرام میں کئی ایک علماء ِ کرام ، مشائخ، عہدیداران و کارکنان کے علاوہ مذہبی سکالروں نے شرکت کی۔ 
 

یوتھ سروسز اینڈ سپورٹس نے کھیل مقابلوں کا نعقاد کیا 

حسین محتشم
پونچھ//کھیلو انڈیا پروگرام کے تحت جموں کشمیر میں یوتھ سروسز اینڈ سپورٹس کی جانب سے مختلف کھیلوںکا انعقاد کیا جارہا ہے جس کی تیاری اور درکار سامان کیلئے سرکار کی جانب سے بڑی رقومات واگزار کی گئی ہیں۔اس سلسلہ کو جاری رکھتے ہوئے پونچھ میں محکمہ یوتھ سروس اینڈ سپورٹس کی جانب سے مختلف کھیل کود کی سرگرمیاں انجام دی جارہی ہیں ۔ محکمہ یوتھ سروس اینڈ سپورٹس کے ضلع افسرو چوہدری محمد قاسم کی قیادت میں ہری ماڈرن پبلک اکاڈمی پونچھ میں کیرم بورڈ کے مقابلے کروائے گئے ۔اس موقع پر ڈی وائی ایس پی آپریشن پونچھ منیش شرما مہمان خصوصی کی حیثیت سے شریک ہوئے جنہوں نے ٹاس کر کے کیرم بورڈ گیم کے اس ایونٹ کا آغاز کیا ۔بچوں کی جانب سے نہایت عمدہ کھیلوں کے مظاہرے کئے گئے۔اس دوران کامیاب ہونے والے کھلاڑیوں میں انعامات تقسیم کرتے ہوئے محکمہ کے اعلیٰ افسران اور مہمان خصوصی نے انکو بہتر کھیل کے لئے مبارک باد پیش کی۔انھوں نے کہا کہ پڑھائی کے ساتھ ساتھ کھیل کود بھی ضروری ہے چونکہ اس سے ہماری صحت ٹھیک رہتی ہے۔انھوں نے بچوں کو منشایات سے دور رہنے کی ہدایت کی۔ 
؎؎

بھاجپا کارکنوں نے پونچھ میں خون کا عطیہ دیا 

حسین محتشم
پونچھ//وزیر اعظم ہند نریندر مودی کے یوم پیدائش کی مناسبت سے بھارتیہ جنتا پارٹی کی پونچھ اکائی کی سیواہی سمرپن مہم جاری ہے۔ اس سلسلہ کو جاری رکھتے ہوئے  پارٹی کے سینئر لیڈر اور سابق ایم ایل سی پردیپ شرما کی قیادت میں راجہ سکھ دیو سنگھ ضلع ہسپتال پونچھ میںخون عطیہ کیمپ منعقد کیا گیا جہاں ایم ایل سی پردیپ شرما نے بھی خون عطیہ کیا۔ اس موقع پر بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا خون عطیہ کیمپ کے منعقد کرنے کا مقصد ضرورت پڑنے پر ضرورت مندوں کی بر وقت مدد کر کے ان کی زندگی بچانا ہے۔انہوں نے کہا کہ انسانی جذبے کے تحت بھارتیہ جنتا پارٹی بہت سارے ایسے کام کر رہی ہے جس سے عام لوگوں کو فائدہ پہنچ سکتا ہے اور خون دے کر کسی کی زندگی بچانا انسانیت کی سب سے بڑی خدمت ہے۔انہوں نے کہا بھارتیہ جنتا پارٹی اپنے وزیر اعظم کا یوم پیدائش منارہی ہے اس دوران مختلف پروگرام منعقد کئے جا رہے ہیں اسی کا ایک حصہ آج کا خون عطیہ کیمپ بھی ہے۔
 
 

صوفی گلوکار جعفر وارثی رحمتِ حق

کو ہسار کلچر ل آرگنائزیشن و مداحوں نے دکھ کا اظہار کیا 

عشرت حسین 
 پونچھ// جے پور راجستھان  سے تعلق رکھنے والے صوفی گلوکار ایک کلاکار جعفر وارثی جے پور کے ایک ہسپتال میں مختصر علالت کے بعد اس دنیا سے کوچ کر گئے جن کی موت پر کوہسار کلچرل آرگنائزیشن پونچھ اور ضلع پونچھ کے متعدد لوگوں نے اظہار آفسوس کیا ہے۔واضح رہے کہ مرحوم جعفر وارثی موسیقی کی دنیا میں ایک ابھرتا ہوا ستارہ تھے اور ان کی صوفی موسیقی میں اپنی ایک الگ پہچان تھی جنہوں نے پوری دنیا کے ساتھ ساتھ ہندوستان اور جموں کشمیر کے ضلع پونچھ کی عوام کا اپنی موسیقی کے ذریعہ دل جیت لیا تھا۔ اس حوالے سے کوہسار کلچرل آرگنایزیشن پونچھ کے چیرمین خالد محمود میر نے پونچھ میں اپنی رہایش گاہ پر ایک تعزیتی اجلاس کا اہتمام کیا جس میں مرحوم کے خاندان کے ساتھ اظہار تعزیت کیا گیا اور ان کے ایصالِ ثواب کیلئے فاتحہ خانی بھی کی گئی ۔اس موقعہ پر خالد میر نے کہا کہ مرحوم ایک شریف اور دیندار شخصیت کے مالک تھے اور انہوں نے اپنی صوفیانہ موسیقی کے ذریعہ جموں کشمیر خاص کر ضلع پونچھ کی عوام کے دل جیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مرحوم کا  لگاو وادی کشمیر کے ساتھ ساتھ سرحدی ضلع پونچھ کے لوگوں کے ساتھ بھی تھا اور انہوں نے کیں پروگرام وادی کشمیر اور ضلع پونچھ میں انجام دئیے تھے جس سے انہوں نے عوام کا دل جیت لیا تھا۔ یاد رہیے کہ ضلع پونچھ میں کوہسار کلچرل آرگنایزیشن کی جانب سے انکو پونچھ میں لایا گیا تھا جسکے بعد ہندوستان کے متعدد کلاکاروں کی آمد بھی پونچھ میں ہوہی تھی۔ اس موقہ پر ضلع پونچھ سے تعلق رکھنے والے شوکت میر اصف میر آعظم میر محمد حسین مغل شیخ سجاد پونچھی شنکر شرما سنجے شرما قلب عباس قمر لطیف امتیاز میر فاروق ساقی منجیت سنگھ پرویز ملک آفریدی پیر یعقوب مخدومی پیر محمد معشوق مخدومی پیر ذادہ بلال مخدومی عمران میر اور بشارت محمود نے بھی مرحوم کی وفات پر غم کا اظہار کیا اور مرحوم کے لواحقین کے ساتھ اظہار تعزیت پیش کی ہے۔
 
 

ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ کا لورن میں عوامی دربار

عشرت حسین بٹ
منڈی// تحصیل منڈی کے بلاک لورن میں ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ کی جانب سے ایک عوامی دربار منعقد کیا گیا جس میں لورن کی عوام کے ساتھ ساتھ تمام ضلع آفسران سمیت پنچایتی نمایندگان ڈی ڈی ممبر لورن اور بی ڈی سی چیئر مین لورن بھی شامل ہویں۔ اس موقعہ پر عوام اور پنچایتی نمایندگان نے اپنے اپنے علاقہ جات جن میں پانی بجلی راشن رسوئی گیس سڑک اور لورن میں مواصلاتی نظام کے حوالے سے ضلع ترقیاتی کمشنر اور ضلع آفسران کو روشناس کروایا گیا ۔اس موقہ پر ڈی ڈی سی ممبر اور بی ڈی سی چیئر مین نے ضلع ترقیاتی کمشنر سے لورن ٹنگمرگ سڑک پر تعمیری کام کے حوالے سے کہا کہ گزشتہ کافی عرصہ سے اس اہم سڑک پر تعمیری کام رکا پڑا ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ براچھڑ تا مہرکوٹ لوہل بیلہ تا ناگاناڑی سڑکوں پر کام جلد لگایا جائے ۔انہوں نے کہا کہ آڑی گام اور ڈارگام سیب لورن علاقہ جات میں ایک ایک اور راشن گھات کا قیام عمل لایا جائے ۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے ان تمام عوامی معملات کو بغور سنا اور بہت جلد ان تمام معملات کو حل کروانے کی یقین داہانی کروائی ۔
 
 

قبائلی طبقہ کی لڑکی انڈین ائیر فورس میں تربیت کیلئے منتخب 

سمت بھارگو 
راجوری //راجوری ضلع کے پسماندہ گائوں سے تعلق رکھنے والی ایک قبائل طبقہ کی لڑکی انڈین ائیر فورسز میں تربیت کیلئے منتخب ہو ئی ہے ۔راجوری ضلع کی ماویہ سودن کے بعد یہ دوسری ایسی لڑکی ہے جو ضلع میں سے انڈین ائیر فورس کیلئے منتخب ہوئی ہے۔طاہرہ رحمان دختر عبدالرحمان سکنہ کھوڑ بنی خواص ،ایک پسماندہ علاقہ سے تعلق رکھتی ہیں تاہم ان کے والد فوج میں کپٹن کے عہدے پر فائز رہے ہیں ۔غور طلب ہے کہ راجوری ضلع کا خواص علاقہ ہر ایک بنیادی سہولیات سے محروم ہے جبکہ عام لوگوں کے پاش رابطہ سڑک اور پانی و بجلی جیسی ہسولیات بھی موجود نہیں ہیں ۔طاہر ہ رحماں کے رشتہ داروں نے بتایا کہ موصوفہ کی ایس ایس سی کی جانب سے سلکشن ہوئی جبکہ اس نے انڈین ائیر فورس میں جانے کو ترجیح دی ۔اس سے قبل راجوری ضلع سے ماویہ سودن سکنہ لمبیڑی نے انڈین ائیر فورس میں پائلٹ کی تربیت کیلئے منتخب ہوئی تھی ۔طاہرہ رحمان کے والد نے لگ بھگ 30برسوں تک انڈین آرمی میں اپنی خدمات انجام دی ہیں ۔ان کے والد نے کہاکہ طاہرہ کی کامیابی ان کیساتھ ساتھ علاقہ کیلئے بھی خوشی کا مقام ہے تاہم انتظامیہ کو چاہئے کہ وہ دور افتادہ علاقوں کی عوام کو بھی سہولیت فراہم کرئے تاکہ ان کے بچے اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کر سکیں ۔ضلع ترقیاتی کمشنر راجوری نے اہل خانہ کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے طاہرہ کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ۔
 
 

منجا کوٹ میں الوداعی تقریب منعقد 

پرویز خان 
منجا کوٹ //تحصیل منجا کوٹ میں معززین و محکمہ دیہی ترقی کے ملازمین کی جانب سے سابقہ بلاک ڈیولپمنٹ آفیسر کے تبادلے کے سلسلہ میں ایک الوداعی تقریب کا اہتمام کیا گیا ۔اس تقریب میں ضلع ترقیاتی کونسل کے وائس چیئر مین شبیر احمد خان کیساتھ ساتھ پنچایتی اراکین ،سیاسی نمائندوں و معززین نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔غور طلب ہے سابقہ بی ڈی او منجا کوٹ محمد نواز کو حالیہ دنوں میں انتظامیہ کی جانب سے تبدیل کر کے نئی تعیناتی عمل میں لائی گئی ہے ۔اس موقعہ پر بولتے ہوئے مقررین نے کہاکہ آفیسر موصوف نے منجا کوٹ میں رہ کر غریب طبقہ کی مدد کرنے کیساتھ ساتھ تعمیر وترقی میں ایک اہم رول ادا کیا ہے ۔انہوں نے آفیسر موصوف کیلئے نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا ۔
 
 

راجپور بھاٹا رابطہ سڑک نا قابل استعمال 

رمیش کیسر 
نوشہرہ //سب ڈویژں نوشہرہ کے راجپور بھاٹا گائوں کی جانب جانے والی رابطہ سڑک انتہائی خستہ ہونے کی وجہ سے عام لوگوں کو دوران آمد ورفت شدید مشکلات کا سامنا کرناپڑرہا ہے ۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ نوشہرہ سب ڈویژن ہیڈ کوارٹر سے 19کلو میٹر دور آبادگائوں میں محکمہ گریف کی جانب سے تعمیر کی گئی سڑک کی حالت انتہائی خراب ہو گئی ہے جس کی وجہ سے عام لوگوں کیساتھ ساتھ ٹرانسپورٹروں کو بھی مشکلات درپیش ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ سڑک پر متعلقہ محکمہ کی جانب سے 10برس قبل تار کول بچھائی گئی تھی لیکن اس کے بعد اس جانب کوئی دھیان ہی نہیں دیا گیا جس کی وجہ سے اب سڑک نا قابل استعمال ہو چکی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ محکمہ کی نا اہلی کو دیکھتے ہوئے اب ٹرانسپورٹر علاقہ میں جانے سے گر یز کررہے ہیں ۔غور طلب ہے کہ مذکورہ سڑک کی مدد سے راجپورہ بھاٹا ،ٹھالکہ ،اندروٹھ ودیگر ملحقہ دیہات کی ہزاروں کی آبادی متاثر ہو رہی ہے ۔مکینوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ گریف کو ہدایت جاری کی جائیں تاکہ رابطہ سڑک کو معیاری بنایا جائے ۔
 
 

نوشہرہ میں کووڈ ویکسین مہم جاری 

رمیش کیسر 
نوشہرہ //سب ڈویژن نوشہرہ میں محکمہ صحت کی جانب سے کووڈ ویکسین لگانے کیلئے مہم کو مسلسل جاری رکھا گیا ہے جس کے دوران عوام کو گھروں میں جار کر کووڈ ویکسین لگائی جارہی ہے ۔گزشتہ روز سب ڈویژن کے گنگوٹا گائوں میں محکمہ صحت کے ملازمین نے گھروں میں جاکر لوگوں کو کووڈ ویکسین لگائی ۔اس مہم کے دوران ملازمین نے بزرگ خواتین و مردوں کو ویکسین لگاتے ہوئے عام لوگوں کو ہدایت دی کہ جلدازجلد ویکسین لگوائی جائے تاکہ مہلوک وائرس کے پھیلائو کو روکا جاسکے ۔مقامی معززین و پنچایتی اراکین نے محکمہ صحت کی تعریف کرتے ہوئے کہاکہ اس مشکل وقت میں بھی عام لوگوں کو ویکسین ودیگر بنیادی سہولیات فراہم کرنے کیلئے محنت و لگن کیساتھ کام کیا جارہا ہے ۔
 
 

محکمہ زراعت کے دفتر کا سائن بورڈ غائب 

رمیش کیسر 
نوشہرہ //سب ڈویژن ہیڈ کوارٹر نوشہرہ میں محکمہ زراعت کی جانب سے قائم کردہ دفتر کے سامنے کوئی سائن بورڈ نصب ہی نہیں کیا گیا ہے جس کی وجہ سے کسان دفتر کی تلاش میں دن بھر تاجروں و عام راہگیروں سے پوچھ تاچھ میں مصروف رہتے ہیں ۔کسانوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ کی جانب سے جس عمارت میں دفتر رکھا گیا ہے اس کے گیٹ کے اندر ایک سائن بورڈ نصب کیا گیا ہے جس سے کسانوں کو کوئی فائدہ نہیں ہے جبکہ دفتر پر سامنے کوئی بورڈ نصب نہیں کیا گیا ہے ۔کسانوں نے بتایا کہ وہ مرکزی سکیموں کیساتھ ساتھ مختلف نوعیت کی معاونت کے سلسلہ میں مذکورہ دفتر کا رخ کرتے ہیں لیکن دفتر کسی جگہ قائم سے اس کا کوئی اندزہ نہ ہونے کی وجہ سے ان کو گھنٹوں در بدر رہتا پڑتا ہے ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ سائن بورڈ ایسی جگہ پر نصب کیا جائے جہاں سب کیلئے عیاں ہو ۔