مزید خبریں

بھاٹہ دھوڑیاں میں الوداعی تقریب کا انعقاد 

جاوید اقبال 
مینڈھر //مینڈھر کی بھاٹہ دھوڑیاں نیابت میں نائب تحصیلدار کے تبادلے کے سلسلہ میں ایک الوداعی تقریب کا اہتمام کیا گیا جس میں محکمہ مال کے ملازمین و آفیسران کیساتھ ساتھ عام معززین و پنچایتی اراکین نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔انتظامیہ کی جانب سے حال ہی میں جاری کردہ ایک نوٹس کے تحت نائب تحصیلدار کا تبادلہ کر دیا گیا تھا جس کے بعد نیابت میں ایک شاندار الوداعی تقریب کا اہتمام کیا گیا ۔مکینوں نے آفیسر موصوف کے کام کی تعریف کرتے ہوئے کہاکہ انہوں نے اپنی تعیناتی کے دوران عوامی مسائل کو حل کرنے کیلئے اہم رول ادا کیا ہے ۔انہوں نے آفیسر موصوف کیلئے نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا ۔نائب تحصیلدار نے مقامی لوگوں و معززین کا شکریہ ادا کیا ہے ۔
 
 

’فٹ انڈیا ‘مہم کے تحت منکوٹ میں ریلی کا انعقاد 

جاوید اقبال 
مینڈھر //نہرو یوا کیندر پونچھ کی جانب سے ’فٹ انڈیا ‘مہم کے تحت گور نمنٹ ہائر سکینڈری سکول منکوٹ میں ایک بیداری ریلی کا اہتمام کیا گیا ۔حکام کی جانب سے سکول انتظامیہ کے اشتراک سے نکالی گئی ریلی گور نمنٹ ہائر سکینڈری سکول سے مین بس سٹینڈ چوک تک منعقد کی گئی ۔اس سلسلہ میں منعقدہ پروگرام میں ضلع ترقیاتی کونسل چیئر مین چوہدری عمران ظفر ،چوکی آفیسر منکوٹ ،پرنسپل گور نمنٹ ہائر سکینڈری سکول ودیگر سٹاف ممبران اور معززین بھی موجود تھے ۔ضلع ترقیاتی کونسل رکن نے بطور مہمان خصوصی شمولیت اختیار کی جبکہ مقررین نے آزادی کا امرت مہا اتسو کے سلسلہ میں بھی تفصیلی جانکاری فراہم کی گئی ۔
 
 
 
 

دیراڑی ۔دبروٹ لفٹ سکیم 20دنوں سے بند 

لوگوں کو پانی کی شدید قلت کا سامنا ،محکمہ خامو ش تماشائی 

پرویز خان
منجا کوٹ //منجا کوٹ تحصیل کی سرحدی پنچایت دیراڑی تا دبروٹ لفٹ واٹر سپلائی سکیم گزشتہ 20دنوں سے بند ہونے کی وجہ سے عام لوگوں کو پینے کے صاف پانی کی شدید قلت کا سامنا کرناپڑرہا ہے ۔مقامی لوگوں نے محکمہ جل شکتی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ واٹر سپلائی سکیم بند ہونے کی وجہ سے علاقہ کے کم از کم چھ سو سے زائد کنبوں کو پانی کی قلت کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔مکینوں و پنچایتی اراکین نے بتایا کہ شعبہ کے میکینکل شعبہ کے ایگز یکٹو انجینئر اور پی ایچ او کے اسسٹنٹ ایگز یکٹو انجینئر کے دفتر کے چکر کاٹ کر پریشان ہو گئے ہیں لیکن ابھی تک سکیم کی بحالی کی جانب کوئی دھیان ہی نہیں دیا جارہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ محکمہ کی نا اہلی کی وجہ سے تنگ آکر لوگ ٹینکوں کی مدد سے پانی خریدنے پر مجبور ہو گئے ہیں ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ کے ملازمین وآفیسران کو متحرک کر کے سرحدی علاقہ کے مکینوں کی پانی سپلائی جلدازجلد بحاک کی جائے ۔
 
 
 
 
 
 

بجلی کی غیر اعلانیہ کٹوتی سے صارفین پریشان 

بختیار کاظمی
سرنکوٹ//سرنکوٹ کے متعدد علاقوں میں گزشتہ دو ہفتوں سے بجلی کی غیر اعلانیہ کٹوتی کی وجہ سے صارفین کو شدید مشکلات کا سامنا کرناپڑ رہا ہے ۔صارفین نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ کی جانب سے نہ تو ترسیلی لائنیں ٹھیک کی جارہی ہیں اور نہ ہی بجلی سپلائی کیلئے پختہ کھمبوں کا کوئی بندوبست کیا جارہا ہے جبکہ گزشتہ دو ہفتوں سے بجلی کی غیر اعلانیہ کٹوتی کی جارہی ہے جس کی وجہ سے عام صارفین کیساتھ ساتھ طلباء او ر بجلی کی مدد سے اپنا روز گار کمانے والوں کانظام ہی مفلوج ہو کر رہ گیا ہے ۔صارفین نے الزام عاید کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ کے ملازمین کی لاپرواہی کی وجہ سے عام لوگ متاثر ہورہے ہیں لیکن ضلع انتظامیہ پونچھ کی جانب سے محکمہ کے کام کاج کو فعال بنانے کیلئے کوئی عملی قدم نہیں اٹھایا جارہا ہے ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ سرنکوٹ میں بجلی کی غیر اعلانیہ کٹوتی کوختم کرکے صارفین کو سہولیات فراہم کی جائیں ۔
 
 
 
 

محکمہ بجلی کے سٹاف کی لاپرواہی 

غریب کو ستمبر ماہ کا 1855روپے بل ارسال کیا گیا 

بختیار کاظمی 
سرنکوٹ//محکمہ بجلی کی غیر سنجیدگی کی وجہ سے سرنکوٹ کے ایک غریب کو بجلی کا بھاری بل ارسال کر دیا گیا۔سرنکوٹ کے عبدالغنی نامی ایک صارف نے بتایا کہ محکمہ بجلی کی جانب سے اگست ماہ کا ماہانہ بل 184روپے ارسال کیا گیا جبکہ ستمبر میں مذکورہ بل 1855روپے ارسال کر کے اس کیساتھ نا انصافی کی گئی ہے ۔مقامی معززین نے محکمہ کے دفتر میں تعینات سٹاف ممبران کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ محکمہ کی جانب سے جان بوجھ کر صارفین کو ہراساں کیا جارہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ صارفین سے دوگنا کرایہ وصول کیا جاتا ہے جبکہ کسی بھی گھر محکمہ کا کوئی بھی میٹر ریڈر نہیں آتا جبکہ ملازمین اندازے کے مطابق بجلی کا لوڈ درج کر کے بل گھروں میں ارسال کر دیتے ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ ملازمین اکثر دفتروں تک ہی محدود رہتے ہیں جبکہ لوگوں کو دو سے تین سو روپے بل ارسال کئے جارہے ہیں ۔صارفین نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ کے نظام کو جلدازجلد درست کیا جائے جبکہ لاپرواہ ملازمین کیخلا ف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے تاکہ غریبوں کو انصاف مل سکے ۔
 
 

مغل شاہرہ پر سڑک حادثہ ،2زخمی 

راجوری //مغل شاہراہ پر پیش آئے ایک سڑک حادثے میں کم از کم دو افراد زخمی ہوگئے ۔جموں وکشمیر پولیس نے بتایا کہ شاہراہ پر بہرام گلہ علاقہ میں ایک ٹا ٹا موبائل گاڑی زیر نمبرJK12B-7508نوری چھم کے مقام حادثے کا شکار ہوگئی جس کی وجہ سے گاڑی میں سوار دو افراد زخمی ہو گئے ۔انہوں نے بتایا کہ حادثے کیساتھ ہی بچائوکارروائی میں شر کت کر کے دونوں زخمیوں کو سب ڈسٹر کٹ ہسپتال سرنکوٹ منتقل کیا گیا ۔زخمیوں کی شناخت ڈرائیور جمیل احمد ولد محمد صدیق سکنہ گونتھل اور جاوید احمد ولد محمد بشیر سکنہ سانگلہ کے طورپر ہوئی ہے ۔پولیس نے اس سلسلہ میں ایک معاملہ درج کرتے ہوئے مزید تحقیقات شروع کر دی ہیں ۔
 
 
 
 

جل شکتی کے عارضی ملازمین کی ہڑتال تیسرے دن بھی جاری رہی 

؎عظمیٰ یاسمین 
تھنہ منڈی // راجوری ضلع میں محکمہ جل شکتی کے عارضی ملازمین کی ہڑتال تیسرے روز بھی جاری رہی جس کی وجہ سے تھنہ منڈی کے مختلف علاقوں میں پینے کے صاف پانی کی شدید قلت پیدا ہو گئی ہے۔لینڈ کیسوں کے تحت لگے عارضی ملازمین نے کہا کہ انہوں نے اپنی زمینیں نوکری کیلئے دی ہیں لیکن متعلقہ محکمہ و اعلیٰ حکام کی جانب سے ان کیساتھ انصاف ہی نہیں کیا جارہا ہے ۔انھوں نے کہا کہ کچھ عرصہ ان کو تنخواہیں ملتی رہی لیکن نامعلوم وجوہات کی بناء پر پچھلے کئی ماہ سے تنخواہیں واگزار نہیں ہوئی ہیں جس کی وجہ سے ان کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ مظاہرین کا مزید کہنا تھا کہ اس سلسلہ میں متعدد بار انتظامیہ سے بات ہوئی ہے لیکن تاحال اس جانب کوئی اہم پیشرفت نہیں ہوئی ہے جو انتہائی افسوس کا مقام ہے۔مظاہرین نے کہا کہ چند روز قبل اعلی آفیسران سے تنخواہ کی واگزاری کا مطالبہ کیا گیا لیکن متعلقہ افسران کی جانب سے کوئی معقول جواب نہیں ملا جس کے چلتے ضلع بھر کے تمام لینڈ کیس ملازمین نے ایک ساتھ پانی کی سپلائی بند کرکے احتجاج شروع کر دیا ہے۔ ملازمین کا کہنا ہے کہ ’جب تک ہمارا مسئلہ حل نہیں ہوتا ہم احتجاج جاری رکھیں گے‘۔ وہیں تھنہ منڈی میں لوگوںجموں وکشمیر انتظامیہ سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ ملازمین کے مطالبات کو جلدازجلد پورا کیا جائے تاکہ ان کو پینے کا صاف پانی مل سکے ۔
 
 
 

سعودی عرب میں سینما و تھیٹر کی منظور ی شرعی قانون کیخلاف 

مسلم ممالک غیر شرعی قوانین کی واپسی کا مطالبہ کریں : محمد نصیر الدین نقشبندی 

 تھنہ منڈی //غوثیہ جامع مسجد تھنہ منڈی کے خطیب و امام مولانا حافظ محمد نصیر الدین نقشبندی نے سعودی حکومت کی جانب سے ملک میں سینما ہال اور تھیٹر کھولنے کی منظوری دیے جانے پر کڑے الفاظ میں مذمت کی ہے۔ انھوں نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ پوری دنیا میں دو سب سے بڑے مقدس مقامات ہیں علاوہ ازیں ان مقدس شہروں میں تمام انبیاء کرام نے امن و سکون اور سلامتی کی دعائیں کی ہیں جبکہ دونوں شہروں کو پوری دنیا کے مسلمان اپنی جان سے زیادہ عزیز رکھتے ہیں۔ انہوں نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان مقدس مقامات سے شرعی فیصلے اور دینی کاموں کو فروغ دینے کے بجائے فحاشت و عریانیت کو فروغ دینے کے ناپاک منصوبے بنائے جا رہے ہیں جو انتہائی افسوناک اور قابلِ مذمت ہیں۔ مولانا نقشبندی نے کہا کہ سعودی حکومت کو ایسے گھناؤنے فیصلے کر کے اللہ تبارکہ و تعالیٰ اور اس کے رسولؐکی ناراضگی نیز مسلمانان عالم کے جذبات کے ساتھ کھلواڑ نہیں کرنا چاہیے۔ انھوں نے کہا کہ اس نااہل حکومت نے ماضی میں بھی بہت سارے فیصلے یہود و نصاری کی خوشنودی حاصل کرنے کیلئے کئے جن کے تحت مزارات صحابہ و مزارات شہداء کو مسمار کر کے عالم اسلام کے مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کیا ہے اور اب یہ ایک مرتبہ پھر انہی کے اشاروں پر فحاشی ، عریانیت اور بے حیائی کو فروغ دینے کے لئے اس طرح کے حربے استعمال کر رہے ہیں جو یقیناً ملک و ملت کی سالمیت اور مذہب اسلام کی صریح خلاف ورزی ہے۔ مولانا نقشبندی نے کہا کہ تمام اسلامی ممالک کو اس پر غور کرنا چاہئے اور سعودی حکومت سے اس غیر شرعی قانون کو واپس کروانے کا مطالبہ بھی کرنا چاہیے۔
 
 
 

نوجوان فنکار جعفر وارثی کے انتقال پر کہکشاں کلچرر آرگنائزیشن سوگوار

حسین محتشم
پونچھ//معروف فنکار و گلوکارجعفر وارثی بھری جوانی میں اپنے مداحوں کو ہمیشہ کیلئے سوگوار چھوڑ گئے۔مرحوم جے پور کے رہنے والے تھے ان کا شمار ہندوستان کے معروف ہارمونیم چلانے والوں میں ہوتا تھا، اس کے علاوہ آپ مولانا رومی ،شمس تبریز ،جعفر شیرازی، امیر خسرو علامہ اقبال کے کلاموں کو پڑھتے تھے اور ان کے بارے میں بڑی جانکاری رکھتے تھے۔ ان کے فن کے سفر میں انہوں نے اجمیر شریف، دہلی کے علاوہ پورے ہندوستان ہی نہیں بلکہ پوری دنیا میں اپنا ایک منفرد مقام بنایاتھا۔کہکشاں کلچرر آرگنائزیشن کی جانب سے مرحوم کے انتقال پر ایک تعزیتی اجلاس پونچھ کے صدر مقام پر منعقد کیاگیا ۔اس اجلاس میں پونچھ میں رہنے والے مرحوم کے مداحوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔تعزیتی اجلاس کے دوران مرحوم کے ایصال ثواب کے لئے فاتحہ خوانی کی گئی اور ان کی مغفرت کے لئے خصوصی دعائیں طلب کی گئی۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سجاد شیخ پونچھی چئیر مین کہکشاں کلچرر آرگنائزیشن نے کہاجعفر وارثی قوال ستاروں کی دنیا میں چلے گئے۔انھوں نے کہا کہ موسیقی کی دنیا میں ان کے انتقال سے بڑا خلاء پیدا ہوا ہے۔انھوں نے کہا مرحوم وارثی پونچھ کے معروف شخصیت خالد میر کے ساتھ بہت اچھے تعلقات تھے اور ان سے ہمیشہ مشورہ کیا کرتے تھے اس دوران وہ کئی بار پونچھ بھی تشریف لائے۔انھوں نے کہا کہ پونچھ میں رہنے والے ان کے چاہنے والے ان کے غم میں سوگوار ہیں ۔انھوں نے کہا کہ مرحوم ایک اچھے دوست اور انسان ہونے کے ساتھ ساتھ ایک بہترین موسیقار بھی تھے جنہوں نے کئی لوگوں کو نہ صرف متاثر کیا بلکہ انہیں موسیقی کی طرف راغب بھی کیا۔انہوں نے کہا کہ انھیں یقین نہیں آتا کہ وہ اب ہم میں نہیں رہے لیکن یہی زندگی ہے کہ آج کوئی ہے اور کل نہیں۔اس دوران دیگر شرکاء نے بھی ان کے انتقال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے انہیں خراجِ عقیدت پیش کیا۔ مقررین نے ان کے ساتھ گزرے وقت کویادگار قرار دیا۔
 
 

شاہپور میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی شجر کاری مہم

پونچھ//بھارتیہ جنتا پاڑتی کی پونچھ آکائی کی جانب سے نریندر مودی کی سالگرہ منانے کے سلسلہ میں ضلع بھر میں تقریبات کا سلسلہ جاری ہے ۔سیوا ہی سمرپن مہم کو جاری رکھتے ہوئے سابق ایم ایل سی پردیپ شرما کی قیادت میں سرحدی گائوں شاہپور میں شجر کاری مہم چلائی گئی ۔اس موقعہ پر دیگر بی جے پی لیڈران اور کارکنان بھی موجود تھے۔اپنے خطاب میںایم ایل سی پردیپ شرما نے کہا کہ محفوظ اور صاف و شفاف ماحول انسان کی بقا کیلئے لازمی ہے۔انہوں نے ماحول کو صاف رکھنے میں درختوں کے رول پر تفصیلی روشنی ڈالی۔انہوں نے کہا کہ یہ درخت ہمیں آکسیجن دیتے ہیں،جس سے ہوا کا معیار بہتر ہوتا ہے۔پانی کو بچاتا ہے، زمین کو محفوظ رکھتے ہیں اور آلودگی کی سطح کو قابو کرکے انسان اور جنگلی جانوورں کو مدد کرتے ہیں۔شجر کاری مہم کے دوران گائوں میں مختلف مقامات پر پودے لگائے گئے اور لوگوں کو شجر کاری  کرنے کی اپیل کی گئی۔
 
 

جھلاس میںپنڈت دین دیال کے یوم پیدائش پر تقریب

پونچھ//بھارتیہ جنتا پارٹی یوا مورچہ نے پنڈت دین دیال اْپادھیائے کے یومِ پیدائش پر انہیں خراج عقیدت پیش کیا۔اس حوالے سے ایک اجلاس جھلاس میں منعقد ہوا جہاں بھارتیہ جنتا پارٹی کے جموں کشمیر کے ترجمان سنیل گپتا کے علاوہ بھارتیہ جنتا پارٹی یوتھ کے صدر امن ڈابر اور دیگر لیڈران نے ان کی تصویر پر ملائیں چڑھا کر انھیں خراج تحسین پیش کیا ۔اس دوران مقررین نے کہا کہ ملک کے مسائل کا حل پنڈت دین دیال اپادھیائے کے نظریات میں تلاش کیا جا سکتا ہے جس کی بنیادیں ہندوستانی نظریات میں پیوست ہیں۔انھوں نے کہا کہ مرکزی سرکار ان کے بتائے ہوئے اصولوں پر چل کر ہندوستان کی تعمیر وترقی کر رہی ہے جس میں بڑی کامیابی حاصل ہوئی ہے۔امن ڈابر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہپنڈت دین دیال نوجوان نسل کے لئے باعث تحریک ہیں۔ انھوں نے نوجوانوں سے اپیل کی کہ وہ پنڈت جی کی زندگی کا مطالعہ کر کے اس سے سبق حاصل کریں۔ 
 
 
 

’ورلڈ فارماسسٹ‘ڈے پر پونچھ میں پروگرام

حسین محتشم
پونچھ//فارماسسٹ کے عالمی دن پر پونچھ کے فارماسسٹ نے بھی ایک تقریب منعقد کی جس میں سی ایم او پونچھ مہمان خصوصی کی حیثیت سے شریک ہوئے۔اس دوران باضابطہ کیک کاٹ کر جشن منایاگیا ۔ تقریب کے دوران خطاب کرتے ہوئے فارماسسٹ ایسوسی ایشن پونچھ کے اعلیٰ عہدیداران بلبیر سنگھ، اصغر علی میر اور دیگران نے کہا کہ سالانہ فارماسسٹ ڈے منانے کا مقصد ایسی سرگرمیوں کی حوصلہ افزائی کرنا ہے جو دنیا کے کونے کونے میں صحت کو بہتر بنانے میں فارماسسٹ کے کردار کو فروغ دیتی ہیں اور ان کی وکالت کرتی ہیں۔ انھوں نے کہا کہ صحت کی دیکھ بھال کیلئے اعتماد بھی ضروری ہے۔انھوں نے کہا کہ صحت کے پیشہ ور افراد پر اعتماد اور مریضوں کے صحت کے نتائج کے درمیان ایک اہم تعلق ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ جب مریضوں کو صحت کی دیکھ بھال کرنے والے پیشہ ور افراد پر زیادہ اعتماد ہوتا ہے تو وہ علاج کیلئے بہتر جواب دیتے ہیں اور کم علامات کے ساتھ زیادہ فائدہ مند طبی رویہ ظاہر کرتے ہیں ، جس سے مجموعی طور پر معیار زندگی بہتر ہوتا ہے۔انھوں نے  تمام فارماسسٹ برادری کو اس دن پر مبارک باد پیش کی۔
 
 
 

پونچھ کے سرحدی دیہات میں محکمہ مال کا کیمپ 

حسین محتشم 
پونچھ// سرحدی علاقہ شاپور گونتریاں میں محکمہ مال نے ایک کیمپ منعقد کیا جس کی صدارت تحصیلدار حویلی بشیر انجم خٹک نے کی۔واضح رہے کہ ضلع پونچھ کا دور دراز اور سرحدی علاقہ شاہپور، گونتریاں حدمتارکہ پرقائم ایک ایسا علاقہ ہے جہاں کی عوام عرصہ دراز تک گولہ باری سے سخت پریشان تھی تاہم گولہ باری پر قدغن لگنے سے اب یہاں کی عوام کو بڑی راحت نصیب ہوئی ہے۔ اس دوران ضلع ترقیاتی کمشنر کی ہدایت پر لوگوں کی سہولیات کے لئے بڑی سطح پر اقدام اٹھائے جا رہے ہیں۔اس سلسلہ کو جاری رکھتے ہوئے گزشتہ روز محکمہ مال کی جانب سے عوامی کیمپ منعقد کیا گیا جس میں ڈومیسائیل، انکم سرٹیفیکیٹ ،اے ایل سی اور دیگر اسناد عوام کو موقعہ پر ہی بناکر فراہم کی گئیں۔تحصیلدار حویلی بشیر انجم خٹک، نایب تحصیلدار بانڈی چیچیاں رندھیر سنگھ اور محکمہ مال کے ملازمین اورسکول کے اساتذہ نے اس موقعہ موجود کثیر تعداد میاں آئے مقامی لوگوں سے لوازامات حاصل کرکے انھیں اسناد فراہم کی۔اس دوران ایس ٹی، اے ایل سی اور او بی سی زمرے کے 241 افراد میں اسناد تقسیم کی گئی۔ 140 پہاڑی اسٹیٹس، 170 ڈومیسائل، 43 انکم سرٹیفکیٹ5 پراپٹی اور دس افراد میں ان ایمپلائیڈ کی اسناد تقسیم کی گئی۔ مقامی لوگوں نے  کیمپ کے انعقاد پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ تحصیلدار حویلیاں ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ اندرجیت کے مشکور ہیں جنہوں نے اس دور دراز علاقے کے لوگوں کی مشکلات کو سمجھتے ہوئے ان کے لیے اس کیمپ کا انعقاد کیا۔
 
 

اساتذہ کے اعزاز میں الوداعی تقریب 

عظمیٰ یاسمین
 تھنہ منڈی // گورنمنٹ ہائر سکینڈری سکول ساج میں ایک الوداعی تقریب کا اہتمام کیا گیا ۔سکول پرنسپل بچتر سنگھ کی صدارت میں منعقدہ پروگرامیں سکول انتظامیہ اور دیگر اسٹاف ممبران نے شرکت کی۔ اس تقریب کا انعقاد فزیکل ایجوکیشن ماسٹر مقبول حسین لون اور محمد تاج بھٹی کے اعزاز میں کیا گیا۔ واضح رہے کہ یہ دونوں اساتذہ آئندہ 30 ستمبر کو محکمہ تعلیم سے سبکدوش ہو رہے ہیں۔اس موقع پر سکول کے استاد محمد اشرف قریشی نے دونوں عہدیداروں کی کامیابیوں کو اجاگر کیا اور محکمہ تعلیم میں ان کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ دونوں عہدیدار بے شمار خوبیوں کے مالک ہیں ان کے کام اور لگن کو طویل عرصے تک یاد رکھا جائے گا۔ قریشی نے کہا کہ ان دونوں ملازمین نے اپنے اپنے شعبوں میں نہایت ہی اچھا اور معیاری کام کیا ہے اور بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے انمٹ نقوش چھوڑے ہیں ۔مقررین نے معزز مہمانوں کی محنت اور لگن کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ زندگی بھر متحرک اور فعال رہ کر انھوں نے طلباء کی خاطر بہترین کام کیا ہے جسے برسوں یاد رکھا جائے گا۔ اس موقع پر ریٹائرلیکچرار محمداقبال شاہ، حاجی علی محمد بھٹی،محمد حنیف بھٹی،مقبول لون ، محمد اشرف لون اور ماسٹر شاہد بھٹی کے علاوہ محکمہ تعلیم سے وابستہ کئی تعلیمی اور سماجی شخصیات نے شرکت کی۔
 
 
 
 

پولیس نے آکسیٹوسن انجکشن ضبط کئے 

جاوید اقبال 
مینڈھر //جموں وکشمیر پولیس نے مینڈھر مین ایک کارروائی کرتے ہوئے بغیر کسی اجازت کے فروخت کئے جارہے آکسیٹوسن انجکشن ضبط کرلئے ۔پولیس نے بتایا کہ ایک خفیہ جانکاری موصول ہوئی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ مینڈھر میں ایک شخص کی جانب سے غیر قانونی طورپر ممنوع انجکشن فروخت کئے جارہے ہیں جس کے بعد ایس ڈی پی او کی قیادت میں ایک ٹیم تشکیل دی گئی جس نے مینڈھر بس سٹینڈ پر محمد شفیق ولد کرامت حسین نامی ایک شخص کی دکان پر چھاپہ مار کر 5400آکسیٹوسن انجکشن ضبط کرلئے جبکہ اس سلسلہ میں پولیس سٹیشن مینڈھر میں ایک کیس زیر ایف آئی آر نمبر 338/2021درج کر کے مزید تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں ۔
 
 

قومی سطح کے مقابلوں کیلئے پونچھ میں ہاکی کھلاڑیوں کے ٹرائل 

حسین محتشم
پونچھ// جھانسی میں 21 اکتوبر تا 31 اکتوبر 2021  جونیئر قومی ہاکی چمپئن شپ (ویمنز) اور سمیڈا میں 20 اکتوبر تا 30 اکتوبر 2021 کو ہاکی انڈیا کے زیر اہتمام سینئر کیٹیگری کے مقابلے ہو رہے ہیں ان مقابلوں میں شمولیت کیلئے جموں کشمیر سے بھی کھلاڑیوں کو سلیکٹ کیا جارہا ہے۔ اس سلسلے میں ضلع پونچھ میں ایک ٹرائل ایونٹ کا انعقاد کیا گیا سپورٹس سٹیڈیم میں کیا گیا جہاں جونیئر اور سینئر کیٹگری کے کھلاڑیوں نے اپنے کھیل کے مظاہرے دکھائے اس دوران  8 جونیئر کیٹیگری میں اور 8 سینئر کیٹگری کے کھلاڑیوں کو منتخب کیا گیا جو جموں میں صوبائی اور ریاستی سطح کے مقابلوں میں حصہ لیں گی۔ ٹرائلز کے دوران کوویڈ 19 پروٹوکول کی سختی سے پابندی کے کی گئی۔ منتخب کھلاڑی جموں میں ہونے والے ریاستی ٹرائلز میں شرکت کریں گے۔ یہ ٹرائلز راجیو شرما صدر ہاکی جے اینڈ کے ، راجندر سنگھ سینئر نائب صدر ہاکی جے اینڈ کے اور ڈاکٹر ترن سنگھ جنرل سکڑی کی ہدایت پر چلائے جا رہے ہیں۔پونچھ میں ٹرائلز ہاکی جے اینڈ کے ریزیڈنٹ سیکریٹری پرینکا سنگھ اور سنجیو کمار ایگزیکٹو ممبر ہاکی جے اینڈ کے کی نگرانی میں اور پون کمار ، مکیش کمار (ہاکی کوچ) کی تکنیکی نگرانی میں ہوئے۔ جب کہ اس موقع ہر متیندر پال سنگھ اور نوجوت سنگھ ہاکی کوچ موجود تھے۔
 

راجوری میں ’فٹ انڈیا ‘دوڑ کا انعقاد 

راجوری //نہر یو ا کیندر راجوری کی جانب سے ’آزادی کے امرت مہا اتسو‘کی مناسبت سے ’فٹ انڈیا ‘دوڑ کا اہتمام کیا گیا ۔اس دوڑ میں سینکڑوں افراد نے شرکت کی ۔گور نمنٹ ڈگری کالج ڈھونگی میں سے منعقد ہونے والی ریلی مختلف علاقوں سے گزرتے ہوئے کیری علاقہ میں جا کر اختتام پذیر ہوئی ۔اس ریلی کو گور نمنٹ ڈگری کالج ڈھونگی کے پرنسپل نے ہری جھنڈی دکھا کر روانہ کیا ۔اس موقعہ پر کالج کے سٹاف ممبران کیساتھ ساتھ گور نمنٹ گرلز ہائر سکینڈری سکول ڈھونگی ،شیو جی یوتھ کلب ،نیشن بلڈرز یوتھ کلب کے اراکین و علاقہ کے معززین نے بڑی تعدادمیں شرکت کی ۔
 
 

بریری گائوں میں صحت مرکزی قائم نہ ہو سکا 

علاقہ کی 4ہزار سے زائد آباد ی دیگر علاقوں میں دربدر 

رمیش کیسر 
نوشہرہ //سب ڈویژن نوشہرہ کے بریری گائوں میں انتظامیہ کی جانب سے ابھی تک صحت شعبہ کا کوئی بھی طبی مرکزی قائم نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے علاقہ کی ایک وسیع آبادی مختلف بیماریوں کے علاج معالجہ کے سلسلہ میں دیگر علاقوں میں قائم کر دہ طبی مراکز و ہسپتالوں میں دربدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہیں ۔مقامی لوگوں نے ضلع انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ گزشتہ کئی عرصہ سے پسماندہ علاقہ میں طبی سہولیات کی دستیابی کے سلسلہ میں ہیلتھ سنٹر قائم کرنے کی مانگ کی جارہی ہے لیکن ابھی تک عوامی مشکلات کو حل کرنے کیلئے کوئی عملی قدم نہیں اٹھایا گیا ہے ۔مقامی معززین نے بتایا کہ مذکورہ گائوں کی 95فیصد آبادی ابھی بھی مرکزی حکومت کی جانب سے شروع کر دہ صحت کی مختلف سکیموں سے فائدہ نہیں اٹھا پارہے ہیں جبکہ علاقہ میں کوئی طبی مرکزی بھی قائم نہیں ہے ۔مقامی لوگوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ سب ڈویژن کے پسماندہ گائوں بریری میں بنیادی طبی سہولیات کیلئے مرکزی کا قیام عمل میں لایا جائے ۔
 
 

خواتین میں سلائی مشینیں تقسیم 

نوشہرہ//سب ڈویژن نوشہرہ کے چوکی گائوں میں فوج کی جانب سے مقامی خواتین میں سلائی مشینیں تقسیم کی گئی ۔اس سلسلہ میں فوج کی جانب سے آپریشن سد بھاونا کے تحت ایک پروگرام کا اہتمام کیاگیا جس میں فوجی آفیسران کیساتھ ساتھ علاقہ کے معززین نے بھی شرکت کی ۔اس سے قبل فوج کی جانب سے علاقہ میں بے روز گار لڑکیوں کو با اختیار بنانے کیلئے ایک سلائی سنٹر قائم کیا گیا تھا جبکہ لڑکیوں کی سہولیات اور اپنا روز گار خود تیار کرنے کیلئے ان کو سلائی مشینیں بھی تقسیم کی گئی ہیں ۔مقامی معززین نے فوج کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہاکہ فوج ہر ایک مشکل وقت میں عوام کی فلاح و بہبود کیلئے کوشاں رہتی ہے ۔
 
 

نوشہرہ میں پی ایچ ای محکمہ کیخلاف احتجاج 

رمیش کیسر 
نوشہرہ //نوشہرہ میں پانی کے صاف پانی کی قلت کو لے کر مقامی لوگوں نے محکمہ آب رسانی کیخلاف شدید احتجاج کیا ۔مظاہرین نے محکمہ جل شکتی کے ملازمین پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ عوام کو پانی سپلائی ہی نہیں کیا جارہا ہے جس کی وجہ سے لوگوں کو پانی کی قلت کا سامنا کرناپڑرہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ ملازمین کی جانب سے ڈیوٹی کے سلسلہ میں انتہائی غیر سنجیدگی کا مظاہرہ کیاجارہاہے جبکہ اے ڈی سی سے رجوع کرنے کے بعد بھی محکمہ کی جانب سے سہولیات فراہم نہیں کی جارہی ہیں ۔مظاہرین نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ گزشتہ دو ماہ میں محض چار مرتبہ علاقہ میں پانی کی سپلائی دی گئی ہے ۔مظاہرین نے ضلع ترقیاتی کمشنر راجوری سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ کو ہدایت جاری کی جائیں تاکہ ان کو پانی کی سپلائی فراہم کی جائے جبکہ لاپرواہ ملازمین کیخلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے ۔
 
 

بجلی ٹرانسفامر خراب ،صارفین پریشان 

محمد بشارت 
کوٹرنکہ //سب ڈویژں کوٹرنکہ کی پنچایت راج نگر اپر میں بجلی کا ٹرانسفارمر خراب ہونے کی وجہ سے صارفین کو شدید مشکلات درپیش ہیں ۔صارفین نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ پنچایت کے شیخ محلہ میں نصب کردہ ٹرانسفارمر گزشتہ کئی روز سے خراب ہوا ہے لیکن متعلقہ محکمہ کو جانکاری فراہم کرنے کے بعد بھی اس کی مرمت نہیں کی جارہی ہے جس کی وجہ سے کئی گھروں کی بجلی سپلائی معطل ہوگئی ہے ۔صارفین نے محکمہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ بجلی کے ماہانہ بل مسلسل ارسال کئے جارہے ہیں لیکن ان کو بجلی کی مناسب سپلائی ہی فراہم نہیں کی جارہی ہے ۔انہوں نے مقامی انتظامیہ و ضلع ترقیاتی کمشنر راجوری سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ کو ہدایت جاری کی جائیں تاکہ خراب ٹرانسفارمر کی جلدازجلد مرمت کی جاسکے ۔