مزید خبریں

حکومت تمام علاقوں کی یکساں ترقی کیلئے وعدہ بند:منوج سنہا | سابق وزیروسرینگراورکپوارہ کے ضلع ترقیاتی کونسل چیئرمین لیفٹینٹ گورنر سے ملاقی

سرینگر// سابق وزیرعمران رضاانصاری سمیت چیئرپرسن ڈسٹرکٹ ڈیولپمنٹ کونسل کپواڑہ عرفان پنڈت پوری اور ڈی ڈی سی سری نگر کے ارکان کے وفد نے اعجاز حسین کی قیادت میں لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا سے راج بھون میں ملاقات کی۔سابق وزیر عمران رَضا اَنصاری نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا سے راج بھون میں ملاقات کی۔سابق وزیر نے لیفٹیننٹ گورنر کے ساتھ جموںوکشمیر یوٹی کے موجودہ ترقیاتی منظر نامے پر اَپنے خیالات کا شیئر کئے۔ اُنہوں نے لیفٹیننٹ گورنر کا شکریہ اَدا کیا کہ اُنہوں نے نوجوانوں کی شمولیت اور خواتین کی اَنٹرپرینیور شپ بشمول مشن یوتھ ، حوصلہ ، تیجسوینی ، اُمید ساتھ اور دیگر مختلف منفرد پروگرام اور سکیمیں شروع کیں۔سابق وزیر نے شروع کئے گئے متعدد ترقیاتی اور عوامی فلاحی پروگراموں پر بھی اَپنے خیالات پیش کئے۔لیفٹیننٹ گورنر نے سابق وزیر کی جانب سے پیش کی گئی قیمتی تجاویز کو سراہا اور کہاکہ ان کو جموںوکشمیر یوٹی کے جاری ترقیاتی عمل میں شامل کیا جائے گا۔ڈی ڈی سی چیئرپرسن نے لیفٹیننٹ گورنر کو ایک یاد داشت پیش کی اور انہیں ضلع کپواڑہ کے مسائل اور مطالبات سے آگاہ کیا ۔مطالبات میں ہر ڈی ڈی سی حلقہ کے لئے اِضافی میکڈیمائزیشن ، آبپاشی شعبے کے لئے اِضافی فنڈنگ ، ضلع میں ایک ڈی ۔ایڈکشن سینٹر کا قیام اوراِس کے علاوہ اضلاع میں مختلف سرکاری محکموں میں اَفسران کی خالی اَسامیوں کو پُر کرنا شامل ہیں ۔ اِس موقعہ پر وائس چیئرمین ڈی ڈی سی کپواڑہ حاجی فاروق احمد میر بھی موجود تھے۔لیفٹیننٹ گورنر نے چیئرپرسن اور وائس چیئرپرسن کے ساتھ تبادلہ خیال کرتے ہوئے کہا کہ جموںوکشمیر حکومت دُور دراز علاقوں پر خصوصی توجہ مرکوز کئے ہوئی ہے اور تمام علاقوں کی یکساں ترقی کے ایجنڈے پر کام کر رہی ہے۔اُنہوں نے ترجیحی بنیادوں پر ان کے تمام مطالبات کے ازالے کی یقین دہانی کرائی۔دریں اثناء اعجاز حسین کی قیادت میں سری نگر کے ڈی ڈی سی اراکین کے ایک وفد نے لیفٹیننٹ گورنر سے ملاقات کی اور اَپنے مطالبات اور مسائل گوش گزار کئے۔ لیفٹیننٹ گورنر نے وفد کو بغور سنا اور اور یقین دِلایا کہ ان کی جانب سے پیش کئے تمام جائز مطالبات پر غور کیا جائے گا اور ان کے ازالے کے لئے متعلقہ محکموں کو بھیج دیا جائے گا۔
 
 
 

مرکزی حکومت کے دستکاری شعبے کی بحالی اورترقی کیلئے اقدام | دستکاریوں سے وابستہ کاریگروں کو ہرممکن امداد دی جائے گی:درشناوکرم جاردوش

اننت ناگ//مرکزی وزیر مملکت ٹیکسٹا ئل و ریلوے درشنا وکر م جار دوش نے کہا کہ مرکزی حکومت دستکاری اور ہینڈ لوم سیکٹروں کی بحالی اور ترقی کے لئے متعدد اقدامات کر رہی ہیں ۔ اُنہوں نے کہا کہ حکومت ان شعبوں کی ترقی کے لئے پُر عزم ہے اور ان سے وابستہ لوگوں کو ہر ممکن مدد فراہم کی جائے گی۔مرکزی وزیر مملکت نے اِن باتوں کا اِظہار پہلگام میں ہینڈی کرافٹس ، ہینڈ لوم اور سری کلچر اَفسران کے ساتھ طلب کی گئی میٹنگ کے دوران کیا۔اِس موقعہ پر مرکزی وزیر مملکت کو متعلقہ اَفسران نے ان شعبوں میں ہونے ولی سرگرمیوںاور ترقی کے بارے میں جانکاری دی ۔ اُنہوں نے اُنہیں کامیابیوں ، سکیموں ، بالواسطہ اور بلا واسطہ روزگار کے مواقع اور ان محکموں کی مختلف سکیموں کے تحت اِندراج شدہ فائدہ اُٹھانے والوں کی تعداد کے بارے میں بھی معلومات فراہم کیں۔ڈائریکٹر ہینڈی کرافٹس محمود احمد نے دستکاری شعبے کا جائزہ پیش کیا جبکہ ڈائریکٹر سری کلچر منظور احمد قادری نے اِس شعبے پر ایک پرزنٹیشن دی۔ اِن شعبوں سے متعلق مختلف سرگرمیاں بشمول ٹوئیڈ ورک ، زری کڑھائی ، چین سٹچ، نمدہ اور گبہ کام پر تفصیلی روشنی ڈالی گئی۔کارروائی کے دوران یہ بتایا گیا کہ فنون اور دستکاری کی بحالی کے لیے کچھ اہم اقدامات کیے گئے ہیں جن میں دستکاری اور ہینڈلوم کے شعبوں کا انضمام ، دستکاری اور ہینڈلوم سوسائٹیوں کو مالی امداد ، وظیفہ میں اضافہ ، کاریگر کریڈٹ کارڈ ، کارخانہ دار اور ایم ایس پی کاریگروں اور بُنکروں کے لئے سکیمیں اور تعلیمی سکیم شامل ہیں۔اِس موقعہ پر اَفسران نے شعبہ غنچۂ ابریشم کے بہتر شہتوت کی اقسام کے پھیلائو ، ریشم کے معیاری بیجوں کی پیداوار ، ریشم کے کیڑے پالنے کے لئے کسانوں کی مدد ، ککون نیلامی مارکیٹوں کا اہتمام اور نجی شعبے میں ریشم کی فروغ کے بارے میں تفصیلی معلومات دی۔اِس موقعہ پر ضلع ترقیاتی کمشنر اننت ناگ ڈاکٹر پیوش سنگلا ، ایس ایس پی آشیش مشرا، جوائنٹ ڈائریکٹر ہینڈی کرافٹس اینڈ ہینڈ لوم ، ڈائریکٹر سینٹرل سری کلچر ، ڈائریکٹر این آئی ایف ٹی ، ڈپٹی ڈائریکٹر ہینڈی کرافٹس ، اسسٹنٹ ڈائریکٹران ہینڈی کرافٹس اور ہینڈ لوم اور دیگر متعلقہ اَفسران موجود تھے۔مرکزی وزیر مملکت تجارت ، صنعت اور دیگر شراکت داروں کے وفود سے بھی ملے جنہوں نے اَپنے مطالبات اور شکایات پیش کیں۔وزیر نے ان وفود کو بغور سنااور یقین دِلایا کہ ان کے جائز مطالبات کو مناسب طریقے سے حل کیا جائے گا۔
 
 
 
 
 

جموں و کشمیر میں جاری مظالم کا |  موازنہ نہیں کیا جا سکتا:محبوبہ مفتی

یواین آئی
سرینگر// پی ڈی پی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کا الزام ہے کہ جموں و کشمیر میں سال 2019 سے جاری مظالم کا موازنہ نہیں کیا جا سکتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت اپنے لوگوں کے خلاف سختی سے پیش آتی ہے جبکہ چینی فوج کا والہا نہ خیر مقدم کرتی ہے ۔موصوف سابق وزیر اعلیٰ نے ان باتوں کا اظہار پیر کے روز اپنے سلسلہ وار ٹویٹس میں کیا۔انہوں نے کہا،’’جموں وکشمیر میں سال 2019 سے جاری مظالم کا موازنہ نہیں کیا جا سکتا ہے جموں وکشمیر میں جو کچھ ہوا، بدقسمتی سے اس سے چشم پوشی کی گئی، اب اسی نے پورے ملک کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے ۔ ہم کب زبان کھولیں گے ‘‘۔موصوفہ ے اپنے دوسرے ٹویٹ میں کہا،’’ جہاں بھی حقوق اور وقار کو پاؤں تلے روندھا جاتا ہے، وہاں دفعہ144 نافذ کرنا حکومت ہند کا ترجیحی اپروچ ہے ۔ حکومت اپنے ملک کے لوگوں کے خلاف آہنی مٹھی استعمال کرنے سے کوئی دریغ نہیں کرتی ہے جبکہ چینی فوج کا والہا نہ استقبال کیا جاتا ہے‘‘۔
 
 
 

محکمہ بجلی ملازمین کو | سیفٹی کٹ فراہم کرنے میں ناکام

سرینگر// جموں کشمیر پی ڈی ایل ٹی ڈی ایل ایمپلائز یونین نے بجلی انتظامیہ پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ جانفشانی سے کام کرنے والے عارضی ملازمین تک سیفٹی کٹ فراہم کرنے میں مکمل طور ناکام ہوچکا ہے۔انہوں نے گورنر انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ وہ معاملے کو سنجیدگی سے لیکر محکمہ کو متحرک کریں تاکہ آیندہ ملازمین کو کسی مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔بجلی ملازمین کا ایک اجلاس زیر صدارت صدر یونین عرفان احمد کاوا منعقد ہوا۔اجلاس میں تنظیمی اموات پر تفصیلی بحث ہوئی جبکہ سرکار کے تئیں ملازمین کی پالیسی کا بغور جائزہ لیا گیا۔چیئرمین موصوف نے بجلی انتظامیہ پر زوردیا کہ وہ پی ڈی ایل،ٹی ڈی ایل ملازمین کے جائز اور حل طلب معاملات کو فوری طور حل کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔
 
 
 

افسر شاہی عوامی حکومت کا متبادل نہیں ہوسکتی:ساگر

سرینگر// نیشنل کانفرنس کے جنرل سکریٹری علی محمد ساگر نے کہا ہے کہ حکومت نے عوام کو حالات کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا ہے اور زمینی سطح پر حکومت کی طرف سے عوام کی راحت رسانی کیلئے کوئی بھی اقدام نہیں اُٹھایا جارہا ہے۔ ذرائع ابلاغ اور سوشل میڈیا پر حکومت کارناموں کے ڈھنڈورے پیٹنے کیلئے لیپاپوتی پر مبنی اقدامات کئے جارہے ہیں۔ ساگر پارٹی ہیڈکوارٹر پر مختلف عوامی وفود، پارٹی اراکین اور لیڈران سے خطاب کررہے تھے۔   ساگر نے کہا کہ جموں و کشمیر کو نہ صرف اس وقت زبردست سیاسی چیلنجوں کا سامنا ہے بلکہ انتظامی خلفشار اور انتشار بھی لوگوں پر بھاری پڑ رہا ہے۔ اُن کا کہنا تھا کہ افسر شاہی میں عوام کا کوئی پُرسان حال نہیں۔ انہوں نے کہا کہ افسر شاہی عوامی حکومت کا متبادل نہیں ہوسکتی ہے ۔موجودہ انتظامیہ ہر جگہ اور ہر سطح پر ناکام ہوچکی ہے۔ جس سے عوام کو گوناگوں مشکلات سے دوچار ہونا پڑ رہا ہے۔ ساگر نے پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں پر زور دیا کہ وہ لوگوں کے مسائل و مشکلات کو ہرسطح پر اُجاگر کریں۔ انہوں نے کہا کہ اللہ کے فضل و کرم سے پارٹی انتخابات آخری مراحل پر پہنچ گئے ہیں۔ انہوں نے پارٹی سے وابستہ افراد پر زور دیا کہ وہ سازشی عناصر سے ہوشیا رہے کیونکہ صرف نیشنل کانفرنس ہی دشمنوں کے نشانے پر ہے کیونکہ یہی جماعت یہاں کے عوام کی حقیقی نمائندہ ہے۔
 
 
 

ای نیلامی کے ذریعے الاٹ کئے گئے کان کنی بلاک | محکمہ کان کنی کے کمشنر سیکریٹری نے پیش رفت کاجائزہ لیا

جموں//محکمہ کان کنی اورعمومی انتظامی کے کمشنر سیکریٹری منوج کماردویدی نے یہاں ایک میٹنگ میں ای نیلامی کے ذریعے نیلام کئے گئے معمولی کان کنی بلاکوں کی پیش رفت کاجائزہ لیا جن میں ان پروجیکٹوں کے حامیوں نے لیٹر آف انٹینٹ کی مدت میں توسیع کا مطالبہ کیا ہے۔ دویدی نے حامیوں اورکنسلٹنٹوں سے تبادلہ خیال کیا اوران سے کان کنی کوپٹے پر دینے کے ان کے کیسوں میں حائل رکاوٹوں کے بارے میں استفسار کیا۔انہوں نے اُن پرزوردیا کہ وہ معمولی کان کنی بلاکوں جہاں عوامی سماعت ہوئی ہے ،کواَپ لوڈ کرنے میں سرعت لائیں تاکہ ان کے حق میں ماحولیاتی کلیرنس کے جاری کرنے پر ’جے کے ای آئی اے اے‘ غور کرے۔ پروجیکٹ کے حامیوں نے اس موقعہ پرحقیقی خدشات کوسامنے لایا جن پر میٹنگ میں تبادلہ خیال کیاگیا،اورموقعہ پرہی ان معاملات کانوٹس لیکر انہیں دور کرنے کی ہدایت دی گئی۔دیویدی جوائنٹ ڈائریکٹر جموں کشمیرکوذاتی طورروزانہ بنیاد پرلازمی دستاویزات کو اَپ لوڈ کرنے کے کام کی نگرانی کرنے کی ہدایت دی۔انہوں نے اُنہیں ماحولیاتی کلیئرنس دینے کے معاملوں میں درپیش رکاوٹوں کو سرعت کے ساتھ دور کرنے کی بھی تلقین کی۔انہوں نے اضلاع کے کان کنی افسروں کوہدایت دی کہ وہ اپنے علاقوں میں غیرقانونی کان کنی پرروک کویقینی بنائیں ۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ چار پانچ ماہ کے دوران طلب اور سپلائی میں خلیج کو کافی حد تک پاٹا گیا ہے اورمحکمہ کان کنی کے باقی ماندہ پٹوںکو منظور کرنے کی کوششیں جاری رکھے گا۔انہوں نے ابھی تک کان کنی کے بلاکوں کے کام کاج کو باضابطہ بنانے کی کاوشوں کو سراہا جن کی وجہ سے جموں کشمیرمیں بڑے منصوبوں کی عمل آوری کیلئے معقول مقدارمیں خام مال دستیاب ہے۔انہوں نے متعلقہ محکموں کو معاملات کوحل کرنے کیلئے یک جٹ ہوکر کام کرنے کی تلقین کی ۔
 
 
 

محکمہ بجلی ملازمین کو | سیفٹی کٹ فراہم کرنے میں ناکام

سرینگر// جموں کشمیر پی ڈی ایل ٹی ڈی ایل ایمپلائز یونین نے بجلی انتظامیہ پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ جانفشانی سے کام کرنے والے عارضی ملازمین تک سیفٹی کٹ فراہم کرنے میں مکمل طور ناکام ہوچکا ہے۔انہوں نے گورنر انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ وہ معاملے کو سنجیدگی سے لیکر محکمہ کو متحرک کریں تاکہ آیندہ ملازمین کو کسی مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔بجلی ملازمین کا ایک اجلاس زیر صدارت صدر یونین عرفان احمد کاوا منعقد ہوا۔اجلاس میں تنظیمی اموات پر تفصیلی بحث ہوئی جبکہ سرکار کے تئیں ملازمین کی پالیسی کا بغور جائزہ لیا گیا۔چیئرمین موصوف نے بجلی انتظامیہ پر زوردیا کہ وہ پی ڈی ایل،ٹی ڈی ایل ملازمین کے جائز اور حل طلب معاملات کو فوری طور حل کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔
 
 
 

خاتون کی اغوا کاری و ہراسانی | BDCممبر گرفتاری سے بچنے کیلئے روپوش

بانڈی پورہ //عازم جان// حاجن سونہ واری کے ایک بی ڈی سی ممبر کیخلاف ایک خاتون کو اغوا اور اسے ہراساں کرنے کے الزام میں کیس درج کیا گیا ہے۔ مذکورہ ممبر گرفتاری سے بچنے کیلئے روپوش ہوگیا ہے۔پولیس نے بتایا کہ ننی نارہ حاجن( سمبل سونہ واری)میں ایک خاتون نے پولیس سٹیشن سمبل میں شکایت درج کرائی کہ بی ڈی سی ممبر عبدالحمید کلو نے اسے اغوا کیا اور اسے ہراساں کرنے کی کوشش کی۔مزکورہ خاتون شادہ شدہ ہے اور اسی گائوں کی رہنے والی ہے۔پولیس کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ گائیڈ لائنز کے مطابق خاتون کی شکایت پر فوری طور پر بی ڈی سی ممبر کیخلاف کیس زیر نمبر131/2021زیر دفعات366، 489 درج کیا گیا اور مذکورہ ممبر کی تلاش شروع کی گئی لیکن وہ  گرفتاری سے بچنے کیلئے روپوش ہوگیا ہے۔
 
 
 
 
 

جموں میں بھاگوت کی تقریر مایوسی کا عکاس | کشمیریوں نے تاریخ کے سیاہ ادوار میں بھی اپنے وجود کو منوایا:سوز

سرینگر//سابق مرکزی وزیر پروفیسر سیف الدین سوز نے راشٹریہ سوئم سیوک سنگھ کے سربراہ موہن بھاگوت کے اُس بیان جس میں انہوں نے کہا تھا کہ دفعہ370کی منسوخی کے بعد اب جموں کشمیرکے لوگوں کی سوچ بدلنے کیلئے کچھ عملی اقدامات کی ضرورت ہے،کومایوسی سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ موہن بھاگوت کی تقریر اس بات کا عملی ثبوت ہے کہ اُسے کشمیر کے لوگوں کے مزاج کی کوئی خبر نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ وہ اپنے دن میں دیکھے ہوئے خواب کی تعبیر میں سوچتاہے کہ اب دفعہ370کی منسوخی کے بعدکچھ عملی اقدامات کی ضرورت ہے۔سوزنے کہا کہ یہ عملی اقدامات کیاہوں گے ،وہ توموہن بھاگوت ہی بتاسکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ موہن بھاگوت کو کشمیر کی تاریخ کے بارے میں کوئی معلومات نہیں ہیں۔ اس لئے اُس کو معلوم نہیں ہے کہ کشمیریوں نے اپنی تاریخ کے سیاہ باب میں مغلوں، پٹھانوں ، سکھوں اور ڈوگرہ شاہی کے دوران اپنے وجود کو صاف طور منوالیا تھا اور انہوں نے اطاعت کے بجائے اپنی عملی جدوجہد جاری رکھی تھی۔ اسی پس منظر میں مہاراجہ رنجیت سنگھ نے لاہور دربار کے آخری گورنر شیخ غلام محی الدین کو یہ پیغام بھیجا تھا ،’’ جو کوئی بھی کشمیر میں انتظام کیلئے مقرر کیا جائے گا ، اُس کو یہ بات نظر میں رکھنی چاہئے کہ کشمیر کے لوگ موحّد ہیں یعنی وہ ایک خداکو ماننے والے ہیں اور وہاں کے انتظام میں اُن کا دل رکھا جانا چاہئے۔ اُسی میں اُس کی یعنی مہاراجہ رنجیت سنگھ کی فلاح و بہبودمنحصر ہے۔‘‘مجھے نہیں معلوم کہ مہاراجہ رنجیت سنگھ کی دعا کا کیا نتیجہ ہوا تھا، مگر جب لاہور دربار کے آخری گورنر شیخ محی الدین نے دیگر رفاہی کاموں کے علاوہ جامع مسجد سرینگر کو 25 برس کی تالا بندی کے بعد نماز کیلئے کھولا تھا ،تو کشمیریوں نے اپنی شکر گزاری میں شیخ محی الدین کے جنازے کو اپنی تاریخ کے بہت عظیم جنازوں میں عملی طور دکھایا تھااور شیخ محی الدین کو حضرت مخدوم کے پہلو میں سپرد خاک کیا تھا۔‘‘
 
 
 

کورونا ایام میں اموات | 50ہزار روپے فی کس معاوضہ نہیں روکا جاسکتا: سپریم کورٹ

 نیوز ڈیسک
نئی دلی //سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ کسی بھی ریاست یا مرکزی زیر انتظام علاقے کی حکومت کوکورونا وائرس سے فوت افراد کے اہلخانہ کو ملنے والی 50ہزار روپے کی امداد نہیں روکنی چاہئے ،اگرچہ مرنے والے شخص کی سرٹیفکیٹ پر موت کی وجہ میں وائرس کا ذکر نہیں ہوگا۔ضلع انتظامیہ کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ ددرخواست معصول ہونے کے بعد 30دنوں کے اندر اندر وائرس سے مرنے والے شخص کے لواحقین کو امداد فراہم کرنی ہوگی جن کی موت کی سرٹیفکیٹ پر موت کی وجہ وائرس کو قرار دیا گیا ہوگا۔سپریم کورٹ نے پہلے ہی کہا تھا کہ یہ رقم تمام ریاستوں کو قدرتی آفات کیلئے مخصوص رکھی گئی رقم سے ادا کرنی ہوگا۔ سپریمک کورٹ نے کہا کہ کوئی بھی ریاست یا مرکزی زیر انتظام علاقے کی سرکاری متوفین کے لواحقین کو موت کی وجہ کا بہانہ  50ہزار روپے کی مالی امداد سے محروم نہیں رکھی گی تاہم موت کی سرٹیکفیکیٹ کسی منظورہ شدہ ادارے کی جانب سے اجرا کی گئی ہو۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ اگر اس حولے سے کوئی شکایت ہو تو متوفین کے لواحقین ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر، چیف میڈیکل آفیسر ، پرنسپل، ایچ او ڈی اور دیگر ماہرین پر مشتمل ضلع سطحی کمیٹی میں درخواست دے سکتے ہیں جوشکایتوں کا ازالہ کرکے نئی سرٹیفکیٹ جاری کرسکتے ہیں۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ تمام ریاستوں اور مرکزی زیر انتظام علاقوں میں ایسی کمیٹیاں ایک ہفتہ کے اندر اندر قائم ہوگی جبکہ کمیٹیوں کے بارے میں تفصیلات مقامی اخبارات اور الیکٹرونک میڈیا میں مشتہر کئے جائیں گے۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ اگر کمیٹی کی رپورٹ متوفین کے لواحقین کے حق میں نہیں ہوگی تو کمیٹی کو اس کی وجہ بھی بیان کرنی ہوگی۔
 
 
 
 
 
 
 
 
 

 ترگام سوناواری میں ’پیغام اولیاء‘ کانفرنس کا انعقاد

سرینگر//حضرت شیخ حمزہ مخدومؒ، حضرت شیخ مجدد الف ثانیؒ اور مولانا احمد رضا احمد خان بریلوی کے عرس پر ضلع بانڈی پورہ کے ترگام، سوناواری میں ’پیغام اولیاء ‘کانفرنس کا انعقاد کیا گیاجس میں جامعہ القادریہ سے وابستہ طلباء اور علماء کے علاوہ مقامی لوگوں نے بھی شرکت کی۔منتظمین کے مطابق کانفرنس کا مقصد اولیاء کرام کے پیغام کو لوگوں تک عام کرنا تھا جو انہوں نے محبت اور آپسی بھائی چارگی کے تناظر میں دیا ۔ تقریب میں کاروان اسلامی انٹرنیشنل کے سرپرست مولانا غلام رسول حامی کے علاوہ کئی دیگر علماء نے شرکت کی۔
 
 
 

نصرت اندرابی کے انتقال پراظہار رنج وغم  

سرینگر//نامور ماہر تعلیم پروفیسر نصرت اندرابی کے انتقال پر ولر اردو ادبی فورم کشمیر کے عہدیداروں اور جملہ اراکین اور آثار شریف پنجورہ شوپیان کے متولی نے اپنے گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے لواحقین کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا ہے ۔ ایک تعزیتی بیان کے مطابق فورم کے صدر طارق شبنم ،چیف کاڈی نیٹر ڈاکٹر ریاض توحیدی اورنگران راجہ یوسف نے نصرت اندرابی کی علمی و ادبی خدمات کو یاد کرتے ہوئے ان کے انتقال پر اپنے گہرے دکھ اور صدمے کا اظہار کیا ہے اور ان کے انتقال کو ایک ناقابل تلافی نقصان قرار دیتے ہوئے مرحومہ کو خراج عقیدت پیش کیا ہے ادھر آثار شریف پنجورہ شوپیاں کے متولی میر بشیر احمد نے بھی پروفیسر نصرت اندرابی کے انتقال پر دکھ او ر صدمہ کا اظہار کرتے ہوئے سوگواران سے تعزیت کا اظہار کیا ہے ۔اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ مرحومہ نصرت اندرابی کا جموں وکشمیر میں زبان وادب کو فروغ دینے میں کافی اہم رول رہا ہے۔انہوں نے مرحومہ کی جنت نشینی کیلئے بھی دعا کی ۔
 
 
 

اننت ناگ میں آگ |  سینکڑوں گھاس کی گچھیاں راکھ کے ڈھیر میں تبدیل

اننت ناگ/عارف بلوچ/ ضلع اننت ناگ میں آگ کی ایک واردات میں گھاس کی گچھیاں خاکستر ہوگئیں ۔آرہ ڈورو میں سوموار کی دوپہر کو غلام نبی نائیکو نامی شہری کی گھاس کی گچھیوں میں آگ نمودار ہوئی ۔اگرچہ مقامی لوگوں اور محکمہ فائر اینڈ ایمرجنسی عملہ موقع پر پہنچا اور آگ بجھانے کی کارروائی شروع کی تاہم سینکڑوں گھاس کی گچھیاں راکھ کے ڈھیر میں تبدیل ہوگئیں ۔آگ کی اس پراسرار واردات سے علاقہ کے لوگوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔پولیس نے معاملے کی نسبت کیس درج کیا ہے۔
 
 
 

میر غلام رسول ناز این سی کے ضلع صدر بانڈی پورہ منتخب

سرینگر// نیشنل کانفرنس کے تنظیمی چنائو کے سلسلے میں بانڈی پورہ ضلع کے صدر کا انتخاب انچارج الیکشن کشمیر غلام نبی بٹ کی نگرانی میں منعقد ہوا اور سینئر پارٹی لیڈران ایڈوکیٹ محمد اکبر لون، جگدیش سنگھ آزاد، ڈاکٹر محمد شفیع اور نثار احمد نثار نے الیکشن مبصرین کے فرائض انجام دیئے۔ اس دوران پارٹی کے سینئر لیڈر میر غلام رسول ناز کو دوسری بار ضلع صدر منتخب کیا گیا۔ پارٹی لیڈران نے نومنتخب ضلع صدر کو مبارکباد پیش کی اور انہیں پھولوں کے ہار پہنائے ۔ پارٹی لیڈران نے اُمید ظاہر کی کہ میر غلام رسول ناز پارٹی اور قیادت کی مضبوطی کیساتھ ساتھ لوگوں کے ساتھ قریبی رابطہ رکھنے میں مزید کام کریں گے ۔رکن پارلیمان محمد اکبر لون نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نیشنل کانفرنس ہر حال میں عوام کی بات کرتی رہے گی اور عوامی اُمنگوں ، احساسات اور جذبات کی ترجمانی کرتی رہے گی۔ انہوں نے کہا کہ حکمران کشمیریوں کو محتاج بنانے کیلئے جس طرح سے آئے روز عوام کُش فیصلے اور اقدامات کئے جارہے ہیں، اُس کے نتائج سامنے آئیں گے۔ انہوں نے نئی دلی پر زور دیا کہ جموں و کشمیر کے عوام کے حقوق بحال کرکے یہاں کے عوام کو عزت اور وقار کے ساتھ اپنی زندگی امن وامان کے ساتھ جینے کا موقع فراہم کیا جائے۔
 
 

آزادی کا امرت مہا اتسو |  لیگل سروسز اتھارٹی بانڈی پورہ کے اہتمام سے مضمون نگاری مقابلہ

بانڈی پورہ/عازم جان /ڈسٹرکٹ لیگل سروسز اتھارٹی بانڈی پورہ کے چیئرمین وپرنسپل اینڈ سیشن جج محمد ابراہیم وانی کی ہدایت پر سیکریٹری سب جج فارقہ نذیرنے نادم میموریل ہائرسیکنڈری کلوسہ بانڈی پورہ میں آزادی کا امرت مہااتسو کے عنوان سے مضمون نگاری مقابلہ کا اہتمام کیا ہے۔تقریب کی صدارت ڈسٹرکٹ لیگل سروسز اتھارٹی کے سیکریٹری سب جج فارقہ نذیر نے کی اور کہا کہ مضمون نگاری مقابلہ زونل سطح پر کیا گیاجن میں جو12طلاب مقابلے میں سرفہرست رہے ہیں وہ یہاں مقابلہ میں شریک ہوئے ۔اس موقع پر اعلیٰ کارکردگی دکھانے والوں کو انعامات سے نوازاگیا۔
 
 

ڈاک بنگلہ سوپورمیں بیداری پروگرام

سوپور//آزادی کاامرت مہااتسوکے تحت سوپور قصبہ میں صحت وصفائی سے متعلق عوامی جانکاری ہفتہ منانے کاسلسلہ جاری ہے ۔اس ہفتے کے تحت گزشتہ روز ڈاک بنگلہ سوپورمیں ایک تقریب کااہتمام کیا گیا،جس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر سوپور پرویز سجاد اورصدرمیونسپل کونسل سوپور مسرت رسول کار،میونسپل کونسلروں،اوقاف کمیٹی کے ممبران،ٹریڈانجمنوںکے ممبران،کارڈی نیشن کمیٹی واکنامک الائنس کے ممبران،صفائی کرمچاریوں اورطلبہ ومقامی لوگوں نے شرکت کی ۔ڈائریکٹر اربن لوکل باڈیز کشمیر نے بھی کچھ وقت کیلئے اس تقریب میں شرکت کی ۔انہوںنے صدر میونسپل کونسل سوپور ،کونسلروں اورکونسل کے ملازمین وصفائی کرمچاریوں کو اس قسم کابہترین پروگرام منعقد کرنے پرشاباشی دی اوراُن کے کام کوسراہا۔ڈائریکٹرموصوف نے اس موقعہ پرتعریفی اسنادبھی تقسیم کیں ۔خیال رہے وادی کے دوسرے علاقوںکی طرح ہی سوپورمیں بھی آزادی کاامرت مہااُتسوکے تحت 27ستمبر سے3اکتوبرتک صٖفائی کاہفتہ منایا گیا۔اس ہفتے کے تعلق سے صدر میونسپل کونسل سوپور مسرت رسول کارنے کہاکہ انسانی صحت وتندرستی کیلئے مقوی غذائیات کیساتھ ساتھ شفاف ماحول بھی لازمی ہے اوریہ تب ہی ممکن ہے ،جب ہم اپنے گردونواح کوصاف رکھیں گے ۔انہوںنے کہاکہ صحت وصفائی سے متعلق عوامی سطح پربیداری اورجانکاری عام کرنا انتہائی ضروری ہے اورمیونسپل کونسل سوپور نے اسی مقصدکے تحت رواں ہفتے بیداری پروگراموںکاانعقاد کیا۔
 
 

ڈاک بنگلہ سوپورمیں بیداری پروگرام

سوپور//آزادی کاامرت مہااتسوکے تحت سوپور قصبہ میں صحت وصفائی سے متعلق عوامی جانکاری ہفتہ منانے کاسلسلہ جاری ہے ۔اس ہفتے کے تحت گزشتہ روز ڈاک بنگلہ سوپورمیں ایک تقریب کااہتمام کیا گیا،جس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر سوپور پرویز سجاد اورصدرمیونسپل کونسل سوپور مسرت رسول کار،میونسپل کونسلروں،اوقاف کمیٹی کے ممبران،ٹریڈانجمنوںکے ممبران،کارڈی نیشن کمیٹی واکنامک الائنس کے ممبران،صفائی کرمچاریوں اورطلبہ ومقامی لوگوں نے شرکت کی ۔ڈائریکٹر اربن لوکل باڈیز کشمیر نے بھی کچھ وقت کیلئے اس تقریب میں شرکت کی ۔انہوںنے صدر میونسپل کونسل سوپور ،کونسلروں اورکونسل کے ملازمین وصفائی کرمچاریوں کو اس قسم کابہترین پروگرام منعقد کرنے پرشاباشی دی اوراُن کے کام کوسراہا۔ڈائریکٹرموصوف نے اس موقعہ پرتعریفی اسنادبھی تقسیم کیں ۔خیال رہے وادی کے دوسرے علاقوںکی طرح ہی سوپورمیں بھی آزادی کاامرت مہااُتسوکے تحت 27ستمبر سے3اکتوبرتک صٖفائی کاہفتہ منایا گیا۔اس ہفتے کے تعلق سے صدر میونسپل کونسل سوپور مسرت رسول کارنے کہاکہ انسانی صحت وتندرستی کیلئے مقوی غذائیات کیساتھ ساتھ شفاف ماحول بھی لازمی ہے اوریہ تب ہی ممکن ہے ،جب ہم اپنے گردونواح کوصاف رکھیں گے ۔انہوںنے کہاکہ صحت وصفائی سے متعلق عوامی سطح پربیداری اورجانکاری عام کرنا انتہائی ضروری ہے اورمیونسپل کونسل سوپور نے اسی مقصدکے تحت رواں ہفتے بیداری پروگراموںکاانعقاد کیا۔
 
 

ڈاکٹر فاروق عبداللہ کا میرواعظ اوراندرابی خانوادوں سے اظہارِ تعزیت

سرینگر// نیشنل کانفرنس صدرڈاکٹر فاروق عبداللہ نے مرحوم میرواعظ مولوی محمد یوسف شاہ کے برادر اور انجمن نصرۃ الاسلام کے سابق جنرل سکریٹری مولوی محمد شاہ کے فرزند مولوی غلام مصطفی کی اہلیہ کے انتقال پر گہرے صدمے کا اظہار کیا ہے اور اس سانحہ ارتحال پر مرحومہ کے جملہ سوگواران کے ساتھ تعزیت کی۔ انہوں نے اس سانحہ ارتحال پرمیرواعظ کشمیر مولوی محمد عمر فاروق کے ساتھ تعزیت کرتے ہوئے مرحومہ کی جنت نشینی اور بلند درجات کیلئے دعا کی۔ ڈاکٹر عبداللہ نے ماہر تعلیم اور سابق پرنسپل خواتین کالج پروفیسر نصرت اندرابی کے انتقال پر بھی صدمے کا اظہار کیا ہے۔ مرحومہ کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے نیشنل کانفرنس صدرنے کہا کہ نصرت اندارابی کے انتقال سے ایک خلاء پیدا ہوا ہے جسے پُر کرنا انتہائی مشکل ہے۔ پارٹی جنرل سکریٹری علی محمدساگر، معاون جنرل سکریٹری ڈاکٹر مصطفی کمال، صوبائی صدر ناصر اسلم وانی ، سینئر لیڈران مبارک گل ، عرفان شاہ اور ترجمان عمران نبی ڈار نے بھی تعزیت کا اظہار کیاہے۔ 
 
 

انجمن نصرۃ الاسلام کا اظہار تعزیت

سرینگر//انجمن نصرۃ الاسلام سرینگر نے نامور ماہر تعلیم پروفیسر نصرت اندرابی، ڈاکٹر فیصل خان ( امریکہ )، جمعیت اہلحدیث کے نائب صدر ڈاکٹر عبدالطیف الکندی کے جواں سال بھانجے شیخ محمد امین اور معروف تاجر مرحوم محمد امین بٹ ساکن احمد نگر کی والدئہ نسبتی کے انتقال پر گہرے دکھ اور صدمے کا اظہار کیا ہے ۔اپنے تعزیتی بیان میں انجمن صدر میرواعظ محمد عمر فاروق کی جانب سے مرحومین کو خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے اللہ تعالیٰ سے اِن کی مغفرت اور سوگواروں کیلئے صبر جمیل کی خصوصی دعا کی ہے ۔
 
 

سماج کے مختلف طبقوں کا ڈاکٹر الکندی سے اظہار تعزیت

سرینگر //جمعیت اہلحدیث کے نا ئب صدر ڈاکٹر عبداللطیف الکندی کے جواں سال بھانجے شیخ محمد امین کی نماز جنازہ پیر کی صبح صدر جمعیت پروفیسر غلام محمد بٹ المدنی کی پیشوا ئی میںادا کی گئی۔ اس موقع پر انہوں نے سوگواران  کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا اورمرحوم کی جنت نشینی کیلئے دعاکی ۔دریں اثناء میر واعظ کشمیر مولانا محمد عمر فاروق نے ڈاکٹر الکندی اور دیگر غمزدہ کنبے سے تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے انہیں صبر و  استقامت سے اس سانحہ عظیم کو سہنے کی تلقین کی ہے ۔ ادھر جمعیت اہلحدیث برطانیہ کے ناظم اعلیٰ شیر خان جمیل اور دنیا کے مختلف خطوں سے جید علماء، فضلاء ،دانشوروں اور زندگی کے مختلف طبقہ ہائے فکر سے وابستہ افراد نے تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے دعا کی ہے کہ رب جلیل مرحوم کو کروٹ کروٹ جنت نصیب کرے ۔رام بن ،ڈوڈہ، کشتواڑ، ادھم پور، جموں، پونچھ اور راجوری سے بھی جمعیت سے وابستہ عہدیداروں اور کارکنوںنے رنج و الم ظاہر کرتے ہوئے مرحوم کے بلنددرجات کی دعا کی ہے ۔