مزید خبریں

ماڈل سکول پر سیاست نہ کی جائے 

3تحصیلوں کے مرکزی میں تعمیر شروع ہونی چاہئے :بار 
مینڈھر //مینڈھر بار ایسوسی ایشن نے جموں وکشمیر انتظامیہ سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ مینڈھر میں قائم ہو نے والے ماڈل سکول کو 3تحصیلوں کے مرکزی علاقہ میں قائم کیا جائے جبکہ اس معاملہ کو سیاسی طورپر پیچیدہ نہ بنایا جائے تاکہ بچوں کو مرکزی جگہ پر ہی بنیادی سہولیات میسر ہو سکیں ۔مینڈھر میں ایک پریس کانفرنس کے دوران بارایسوسی ایشن کے صدر ایڈوکیٹ جاوید احمد خان نے کہاکہ بھیرہ سے سکول کو کالا بن کی پہاڑیوں پر منتقل کرنا افسوس ناک ہے ۔انہوں نے کہاکہ انتظامیہ کی جانب سے مینڈھر قصبہ کے قریب بھیرہ علاقہ میں ماڈل سکول قائم کرنے کا منصوبہ بنایا گیا تھا لیکن اچانک اس کو کالابن منتقل کر دیا گیا ہے جو کہ چھوٹے بچوں کیساتھ ایک بڑی نا انصافی ہے ۔بار ایسوسی ایشن مینڈھر کا صدر ایڈوکیٹ جاوید احمد خان ،ایڈوکیٹ سجاد حسین شا ہ نائب صدر ،ایڈوکیٹ محمد فرید جنرل سیکریٹری ،ایڈو کیٹ محمد غایث خان ،ایڈوکیٹ سید بیگ ،ایڈوکیٹ افضال میر ،ایڈوکیٹ شمیم احمد خان ،ایڈوکیٹ شرافت اللہ خان ،ایڈوکیٹ محمد شوکت چوہدری ودیگران نے جموں وکشمیر انتظامیہ سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ ماڈل سکول کو ایک پہاری پر قائم کرنے کے بجائے تین تحصیلوں کے مرکزی میں جگہ کا انتخاب کر کے بنایا جائے تاکہ سبھی لوگوں کو برابر فائدہ پہنچ سکے ۔
 
 
 

نوجوان کیلئے والی بال ٹورنا منٹ کا انعقاد 

مینڈھر //فوج کی جانب سے مینڈھر سب ڈویژن میں نوجوانوں کیلئے ایک والی بال ٹورنا منٹ کا اہتمام کیا گیا ۔’کھیلے گا انڈیا تبھی تو آگے بڑھے گا انڈیا ‘کے عنوان سے منعقدہ اس ٹورنامنٹ کا اصل مقصد باصلاحیت نوجوانوں کو اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کرنے کیلئے موقعہ فراہم کرنا ہے ۔فوج کی جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ پسماندہ علاقوں کے نوجوانوں کو کھیلوں کی جانب راغب کرنے میں فوج ایک اہم رول ادا کررہی ہے جبکہ اس سلسلہ میں خطہ پیر پنچال میں کئی ٹورنامنٹ منعقد کئے جاچکے ہیں جبکہ اس سلسلہ کو آئندہ بھی جاری رکھا جائے گا ۔انہوں نے بتایا کہ مینڈھر میں منعقدہ ٹورنامنٹ میں مختلف علاقوں کی 11ٹیمیں شرکت کررہی ہیں ۔مقامی لوگوں و کھلاڑیوں نے فوج کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہاکہ آئندہ بھی اس طرح کے اقدامات جاری رکھے جائیں گے ۔
 
 
 
 

کووڈ میں بے روز گاری سے اعلی تعلیم یافتہ نوجوان پریشان

مرکزی و مقامی انتظامیہ پر کھو کھلے وعدے کرنے کا الزام 

بختیار کاظمی
 سرنکوٹ// سرحدی ضلع پونچھ میں کووڈ کیساتھ ساتھ بے روز گاری میں ہورہے اضافے کی وجہ سے اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوانوں کی ایک بڑی تعداد پریشان ہو کر در بدر ک ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہو گئے ہیں ۔نوجوانوں نے بتایا کہ گزشتہ 2برسو ں سے کووڈ کی وجہ سے ان کے نجی مقامات پر روز گار بھی ختم ہو گئے ہیں جبکہ مقامی و مرکزی حکومت کی جانب سے نوجوانوں کو روز گار فراہم کرنے کیلئے صرف نعرے بازی ہی کی جارہی ہے جبکہ زمینی سطح پر صورتحال مزید پیچیدہ ہو گئی ہے ۔غور طلب ہے کہ جموں وکشمیر میں گزشتہ دو برسوں کے دوران نے روز گاری کی شرح میں نمایاں اضافہ ہو چکا ہے جس کی وجہ سے مختلف یونیورسٹیوں سے اعلیٰ تعلیم حاصل کر چکے نوجوانوں کی ایک بڑی تعداد روز گار کے سلسلہ میں دیگر ریاستوں و ممالک کا رخ کرنے پر مجبور ہو گئے ہیں ۔اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوانوں نے بتایا کہ ان کے والدین نے انتہائی غریبی کی حالت میں ان کی تعلیم کا بندوبست کیا تاہم تعلیم حاصل کرنے کے بعد ان کی مشکلات میں دوگنا اضافہ ہو چکا ہے ۔انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر کی خصوصی پوزیشن ختم کرنے کے دوران بھاجپا کی مرکزی حکومت تعمیر وترقی کیساتھ ساتھ بے روز گاری کو ختم کرنے کیلئے بلند و بانگ نعرے لگا رہی تھی لیکن دوبرسوں کے بعد صورتحال مزید خراب ہو چکی ہے ۔اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوانوں نے بھاجپا کی مرکزی حکومت سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ وعدے کے مطابق جموں وکشمیر کے بے روز گار نوجوانوں کیلئے روز گار کا موقعہ فراہم کیا جائے تاکہ ان کی تنگدستی کا معاملہ حل ہو سکے ۔
 

ساوجیاں میں تعمیر بنکروں کی حالت انتہائی خراب 

عشرت حسین بٹ
منڈی//ضلع پونچھ کے سرحدی علاقہ ساوجیاں میں محکمہ دیہی ترقی کی جانب سے لوگوں کو پاکستانی گولہ باری سے بچنے کیلئے زمیندوز بنکر بنائے گئے ہیں لیکن ان کی حالت خراب ہو چکی ہے ۔ضلع پونچھ کے سرحدی علاقہ ساوجیاں میں محکمہ دیہی ترقی کی جانب سے عوام کو پاکستانی گولہ باری سے بچنے کیلئے زمیندوز بنکر تو تعمیر کئے گئے لیکن تعمیر اتی ایجنسیوں کی مبینہ لاپرواہی کی وجہ سے ان بنکروں میں اب بارشوں کا پانی بڑی مقدار میں جمع ہوا ہے جس کی نکاسی کا کوئی بندوبست ہی نہیں ہے ۔ اگر چہ ہند پاک کے درمیان کچھ ہی عرصہ قبل جنگ بندی محاہدہ ہو ا تھا جس کے بعد حدمتارکہ کے مکینوں نے چین کی سانس لی تھی لیکن اب مقامی لوگ بنکروں کی تعمیر کو ایک مذاق کیساتھ تعبیر کررہے ہیں ۔مقامی لوگوں نے کہاکہ حکومت کی جانب سے انسانی جانوں کے تحفظ کیلئے اقداما ت اٹھائے گئے تھے لیکن متعلقہ محکموں کی لاپرواہی و مقامی انتظامیہ کی غیر سنجیدگی کی وجہ سے بنکروں کے صرف ڈھانچے ہے تعمیر ہو سکے ہیں جبکہ ان کو کئی ماہ بعد بھی مکمل نہیں کیاجارہا ہے ۔انہوں نے کہاکہ بنکروں کی تعمیر عام لوگوں کو سہولیت میسر ہونے کی امید تھی لیکن صورتحال اس کے بر عکس ہے ۔ساوجیاں میدان کے رہائشی بشیر بانڈے نے بتایا کہ مذکورہ علاقہ میں تعمیر ہوئے سبھی بنکروں میں پانی بڑی مقدار میں جمع ہو جاتا ہے ۔مقامی معززین و پنچایتی اراکین نے ضلع انتظامیہ سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ بنکروں کی تعمیر کو سنجیدگی کیساتھ لے کر ان کا قابل استعمال بنایا جائے ۔
 
 

لورن کے متعدد کارکنوں کی پی ڈی پی میں شمولیت 

منڈی //منڈی میں پی ڈی پی ضلع صدر شمیم احمد گنائی کی رہائیش گاہ پرمنعقدہ ایک اجلاس کے دوران لورن میں نیشنل کانفرنس کے فعال رکن ولی محمد نے اپنے ساتھیوں کے ہمراہ پی ڈی پی میں شمولیت اختیار کرلی ۔پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے والے کارکنوں نے کہاکہ جموں وکشمیر کی خصوصی پوزیشن کو ختم کرنے کے بعد اس کی بحالی کیلئے کوئی دوسری جماعت پی ڈی پی اتنی دلچسپی نہیں لے رہی ہے جبکہ پارٹی کی پالیسیوں سے متاثر ہو کر انہوں نے این سی کو خیر آباد کہہ دیا ہے ۔سنیئر کارکن ولی محمد شاد نے کہاکہ وہ نیشنل کانفرنس کیساتھ وابستہ تھے لیکن پی ڈی پی کا ایجنڈا اور ورکروں کیساتھ کئے جارہے سلوک سے متاثر ہو کر انہوں نے اپنی حامیوں سمیت پارٹی میں شمولیت اختیار کر لی ۔انہوں نے کہاکہ جس طرح کے حالات اس وقت جموں کشمیر میں بنے ہوے ہیںان سے نمٹنے اور مقابلہ کرنے کے لئے اگر کوئی جماعت ہے وہ صرف پی ڈی پی جماعت ہی ہے۔ اس وقت جس طرحمحبوبہ مفتی ایک خاتون ہوتے ہوے اپنے مضبوط ارادوں سے پارٹی کی باغ ڈور سنبھال عوام کی نمائندگی کررہی ہیں وہ انتہائی متاثر کن ہے ۔بلاک ڈیولپمنٹ کونسل چیئر مین او رپی ڈی پی ضلع صدر شمیم احمد گنائی نے پارٹی میں شامل ہونے والے ورکروں کا استقبال کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ نئے کارکنوں کی آمد سے پارٹی مزید مضبوط ہو گئی ۔
 
 

راجوری بفلیاز سڑک کی کشادگی 

مسافر تعمیراتی کمپنی کے ناقص کام سے در بدر  

عظمیٰ یاسمین
 تھنہ منڈی // راجوری تا بفلیاز سڑک کی کشادگی کے دوران تعمیر اتی کمپنی کے ناقص کارکردگی کی وجہ سے عام لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرناپڑرہا ہے ۔ راجوری ۔ تھنہ منڈی ۔ بفلیاز سڑک کی کشادگی مقامی لوگوں کی ایک دیرینہ مانگ تھی لیکن تعمیراتی کمپنی کا روڈ کے سلسلے میں ناقص انتظام عوام کیلئے خوف و خطرے کا باعث بنتا جا رہا ہے۔ مکینوں اور راہگیروں نے بتایا کہ گزشتہ کئی روز سے جاری شدید بارشوں کی وجہ سے پہلے سے تباہ شدہ سڑک انتہائی خراب ہوگئی ہے۔ تھنہ منڈی کے کھبلاں علاقے کے رہائشی طارق محمود نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ غیر ضروری کٹائی کی وجہ سے جگہ جگہ پسیاں گر آئی ہیں اور گہرے کھڈے بن گئے ہیں جبکہ نکاسی کا بی کوئی معقول بندوبست نہیں ہے جس کی وجہ سے بارشوں کا پانی سڑک سے ہی گزرتا ہے جس کی وجہ سے سڑک کیساتھ ساتھ ملحقہ علاقوں میں کسانوں کی زراعی زمینوں کا نقصان بھی ہو رہا ہے ساتھ ہی طلباء، مریضوں اور مسافروں کو بھی شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ انھوں نے ضلع انتظامیہ اور گورنر انتظامیہ سے فوری مداخلت کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ کہ متعلقہ کمپنی کے نام سڑک کے تعمیراتی کام میں سدھار اور بہتری لانے کے احکامات جاری کئے جائیں تاکہ عوام کی پریشانیوں کا ازالہ ہو سکے۔
 
 

وارڈ نمبر2پونچھ کی عوام سڑک کی خستہ حالی سے پریشان

حسین محتشم
پونچھ//پونچھ قصبہ کے وارڈ نمبر 2 کی عوام سڑک کی خستہ حالی سے پریشان ہے، علاقے کی رابطہ سڑک پر جگہ جگہ گڈھے بن گئے ہیں جس سے راہگیروں کو پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ معمولی بارش کے ہوتے ہی سڑک تالاب کی شکل اختیار کر دیتی ہے جس پر چلنا دشوار ہو جاتا ہے ۔انھوں نے کہا کہ   بارشوں کے دوران سڑک پر کیچڑ اور گندہ پانی جمع ہونے کے سبب راہگیروں خاص کر بچوں، مریضوں اور بزرگوں کو چلنے میں دشواریوں کا سامنا کرپڑتا ہے۔پریشان مقامی باشندوں نے کشمیر عظمیٰ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وارڈ میونسپل حدود میں آتی ہے لیکن ان کو کوئی بھی سہولت فراہم نہیں کی جاتی ۔انھوں نے کہا خصوصی طور پر انکی سڑک انتظامیہ کی نظروں سے اوجھل ہے۔ مقامی شہریوں نے بتایا کہ سڑک کی حالت اس قدر خستہ ہو چکی ہے کہ وہ کسی نالے کی شکل اختیار کر چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مقا کئی مرتبہ سڑک کی مرمت کا معاملہ متعلقہ محکمہ کی نوٹس میں لایا گیا ہے تاہم متعلقہ محکمہ نے ہمیشہ غیر سنجیدگی کا مظاہرہ کیا۔ مقامی باشندوں نے انتظامیہ سے سڑک کی مرمت کو یقینی بنانے کا مطالبہ کیا تاکہ ان کو مزید مشکلات سے دوچار نہ ہونا پڑے۔
 
 

پونچھ میں کرکٹ ٹورنامنٹ اختتام پذیر

حسین محتشم
پونچھ// چوہدری حسن دین پسوال میموریل کرکٹ ٹورنامنٹ کا فائنل میچ ڈنہ لورن میں پیر کے روز کھیلا گیا ۔اختتامی میچ لورن سلطان کرکٹ اور شیخ کرکٹ کلب کے درمیان کھیلا گیاجس میں سخت مقابلے کے بعد لورن سلطان کرکٹ کلب نے پانچ وکٹوں سے فتح حاصل کی ۔اس دوران انعاماتی تقریب منعقد کی گئی جس میں سی او لورن آرمی نوین کمار 58 آر آر اور چوہدری عبدالغنی ڈی ڈی سی ممبرپونچھ مہمان خصوصی ، چوہدری محمد نظیر بی ڈی سی چیرپرسن ننگا لی بلاک اورچوہدری جمیل احمد کوہلی بی ڈی سی چیر پرسن پونچھ بلاک مہمان اعزازی کی حیثیت سے شریک ہوئے ۔جنہوں نے فاتح ٹیم اور ہارنے والے ٹیموں میں انعامات تقسیم کئے ۔اس دوران چوہدری گلزار احمد جٹ جنرل سیکرٹری کانگریس کمیٹی ڈسٹرکٹ پونچھ،سید امیر حسین شاہ ،چوہدری عبدالقیوم سرپنچ ،سرپنچ جہاں بہادر،الحاج بشیر احمد خاکی ،سرپنچ چوہدری بشیر احمد کامران،پریزیڈنٹ سر پنچ اایسوسی ایشن بلاک لورن اعجاز احمد تانترے ،پرویز ملک آفریدی صاحب، چوہدری محمد رشید ،حاجی یار محمد ،چوہدری بشیر احمد چیچی،ولی محمد بٹ ،ٹھیکیدار ثناء اللہ شیخ ،ٹھیکیدار فاروق احمد شیخ،حاجی وزیر محمد تانترے، شاہنواز بانڈے،امتیاز احمد تانترے موجود رہے۔اس دوران مہمانان گرمای نے کھلاڑیوں کو خطاب کرتے ہوئے ان کی حوصلہ افزائی کی اور انھیں منشیات سے دور رہے کی ہدایت کی ۔چیف آرگنائزرجاوید چوہدری نے تمام شرکا کا شکریہ اداکیا۔  
 
 

زونل ایجوکیشن آفیسر سرنکوٹ کے خلاف اساتذہ کا احتجاج

حسین محتشم
پونچھ//سرنکوٹ کے اساتذہ کی جانب سے زونل ایجوکیشن افسر کے دفتر میں ایک زبردست احتجاجی مظاہرہ کیاگیا جہاں اساتذہ نے زونل ایجوکشن افسر پر الزام لگایا کہ وہ ان کو بلاوجہ پریشان کرتے ہیں۔اساتذہ کا کہنا تھا کہ زونل ایجوکیشن افسر نے ایک ہدایت نامہ جاری کیا تھا جس میں انہوں نے پیر کے روز ایک میٹنگ طلب کی تھی ۔انھوں نے کہا کہ ہدایت نامہ کے مطابق تمام اساتذہ مٹینگ میں شامل ہونے کے لئے دفتر آئے تو وہاں پتہ چلا کہ زونل افسر نہیں آرہے ہیں۔ اساتذہ نے مزید کہا کہ    زونل ایجوکیشن آفیسر سرنکوٹ ملازمین کو بغیر کسی وجہ سے تنگ کررہے ہیں ۔انھوں نے کہا کہ موصوف نے  2 اکتوبر کو ایک حکم نامہ جاری کیاتھاجس میں تمام  مڈل سطح کے سکولوں کے انچارج اساتذہ کو میٹنگ میں شامل ہونے کو کہا گیا تھا مگر اساتذہ جب آفس پہنچتے ہیں تو وہاں نہ تو آفیسر موجود ہیں اور نہ ہی اساتذہ کے بیٹھنے کا کوئی انتظام کیا گیا تھا ۔انھوں نے الزام لگایا کہ جب اساتذہ نے آفس میں موجود عملہ سے پوچھا تو انہوں نے بتاکہ ہمیں میٹنگ کوئی اطلاع نہیں ہے۔اساتذہ نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں بلاوجہ ہراساں کیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ چیف ایجوکیشن آفیسر پونچھ کو پہلے بھی کئی بار بتا چکے ہیں مگر ان کی پریشانی جو کی توہے ۔ اساتذہ نے اعلی حکام سیان کے مسائل کو حل کرنے کا مطالبہ کیا
 
 

بلوں کی عدم ادائیگی پر کنکشن کاٹنے کا انتباہ 

پونچھ//محکمہ بجلی کے ایگز یکٹو انجینئر پونچھ ارشاد حسین نے صارفین کو انتباہ دیتے ہوئے کہاکہ بجلی کے بل ادا نہ کرنے پر کنکشن کاٹ دئیے جائینگے ۔موصوف نے کہاکہ بجلی بغیر بل جمع کروائے استعما ل کرنے کی اجازت کبھی بھی نہیں دی جائے گی ۔انہوں نے کہا کہ بجلی چوروں کے خلاف سخت کاروائی جلد شروع کی جائے جبکہ بجلی چوری کے خلاف شروع ہونے والی مہم کی نگرانی وہ خود ہی کریں گے ۔آفیسر موصوف نے کہاکہ بجلی چوروں کے خلاف جرمانوں کے ساتھ مقدمات بھی درج کروائے جائیں گے۔انہوں نے صارفین سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ وہ جلدازجلد بجلی کے میٹر لگوا کر ہے بجلی کا استعمال کریں تاکہ قاعدہ ی خلاف ورزی نہ ہو ۔
 

ڈی ڈی سی نے مختلف علاقوں کا دورہ کیا 

کوٹرنکہ //ضلع ترقیاتی کونسل رکن بدھل اولڈ اے کوٹرنکہ شازیہ کوثر نے مختلف علا قوں کا دورہ کرتے ہوئے عوامی مسائل کا تفصیلی جائزہ لیا ۔موصوفہ نے کوٹرنکہ ،حبی ،کنڈی ،پنجناڑہ ودیگر علاقوں کا تفصیلی دورہ کیا جس کے دوران انہوں نے مکینوں کو درپیش مسائل کیساتھ ساتھ گزشتہ دنوں علاقہ میں ہوئی شدید ژالہ باری کی وجہ سے فصلوں کے ہوئے نقصان کا بھی جائزہ لیا ۔موصوفہ نے متاثرہ کسانوں کو یقین دلاتے ہوئے کہاکہ فصلوں کے نقصان کا تخمینہ لگا کر کسانوں کو سہولیات فراہم کرنے کیلئے ضلع ترقیاتی کمشنر راجوری کو ہدایت جاری کی جائیں گی ۔
 
 

پولیس نے ہیروئن سمیت سمگلر گرفتار کرلیا 

حسین محتشم
پونچھ//جموں وکشمیر پولیس نے پونچھ کے کالائی پل پر ایک ناکے کے دوران کی جارہی چیکنگ میں ایک شخص کو نو سے دس گرام ہیروین کے ساتھ رنگے ہاتھوں گرفتار کیاہے۔ سب انسپکٹر ارون شرما کی قیادت میں پولیس تھانہ پونچھ کی ایک ٹیم جو کہ کلائی پل پر ناکہ لگا کر تلاشی لے رہی تھی نے مقصود احمد ولد منظور احمد عمر 32 سال سکنہ سیڑھی خواجہ جو مشکوک حالات میںدیکھ کر اس کی پوچھ تاچھ شروع کی جبکہ غیر تسلی بخش جواب دینے کے دوران پولیس نے اس کی تلاشی لی جس کے دوران اس کے قبضہ سے مذکورہ ہیروئن ضبط کر لی گی ۔اس سلسلہ میں پولیس نے ایک مقدمہ پولیس سٹیشن پونچھ میں درج کرتے ہوئے مزید تحقیقات شروع کر دی ہیں ۔
 

منجا کوٹ میں والی بال کوچنگ کیمپ شروع 

پرویز خان 
منجا کوٹ //والی بال سپورٹس فیڈریشن آف جموں و کشمیر کی جانب سے تحصیل منجا کوٹ میں انڈر 19زمرے کی لڑکیوں کیلئے 21روزہ والی بال کوچنگ کیمپ کا افتتاح کر دیا ہے ۔اس تربیتی کیمپ کے افتتاح کے دوران والی بال ایسوسی ایشن اف جموں وکشمیر کے جنرل سیکریٹری طارق خان انچار ج راجوری پونچھ والی بال ایسوسی ایشن ،پنچایتی اراکین ،معززین کیساتھ ساتھ فیزیکل ٹیچر ز و دیگر ملازمین بھی موجود تھے ۔اس کوچنگ کیمپ کے افتتاحی دن تحصیل کے مختلف سرکاری سکولوں کی 22لڑکیوں نے شرکت کی ۔مقامی لوگوں نے متعلقہ شعبہ و ایسوسی ایشن کی جانب سے لڑکیوں کو کھیلوں کی جانب راغب کرنے اور ان کو معقول تربیت فراہم کرنے کی قدم کی سراہنا کی ۔
 
 

پُر اسرار حالت میں بچے کی موت 

رمیش کیسر 
نوشہرہ //سب ڈویژن نوشہرہ کی چوکی پنچایت میں ایک بچے کی مشکوک حالت میں موت ہوگئی جس کے بعد پولیس نے معاملہ درج کرتے ہوئے تحقیقات شروع کر دی ہیں ۔پولیس نے بتایا کہ پنچایت کی وارڈ نمبر سات میں منجیت سنگھ نامی ایک شخص و اس کے بچے رمن دیپ سنگھ نے اپنی گھر میں ہی کوئی زہریلی چیز نگل لی جس کی وجہ سے دونوں کی صحت خراب ہو گئی ۔ہسپتال پہنچنے تک بچے کی موت واقعہ ہوگئی جبکہ منجیت سنگھ کا نوشہرہ ہسپتال میں علاج معالجہ کیاجارہا ہے ۔پولیس نے اس سلسلہ میں معاملہ درج کرتے ہوئے مزید تحقیقات شروع کر دی ہیں ۔
 
 

نوشہرہ میں او بی سی کارپوریشن کا دفتر کھولنے کی مانگ 

رمیش کیسر 
نوشہرہ //سب ڈویژں نوشہرہ کے مکینوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ ایس سی ،ایس ٹی اور او بی سی کارپوریشن کا نوشہرہ میں بھی ایک دفتر قائم کیا جائے تاکہ سماج کے پسماندہ طبقہ کی مسائل کو حل کرنے میں مدد مل سکے ۔ان طبقو ں کے معززین نے بتایا کہ مرکزی حکومت کی جانب سے کئی ایسی سکیمیں شروع کی گئی ہیں جن کی مدد سے سماج کے پسماندہ طبقہ کی فلاح و بہبود میں مدد مل سکتی ہے لیکن نوشہرہ میں کارپوریشن کا کوئی بھی دفتر موجود نہیں ہے جس کی وجہ سے طبقہ کی ایک بڑی آبادی مرکزی حکومت کی فلاحی سکیموں سے واقف ہی نہیں ہے ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ طبقہ کے نوجوانوں کو روز گار فراہم کرنے میں مدد کرنے والی کارپوریشن کا جلدازجلد نوشہرہ میں ایک دفتر قائم کیا جائے تاکہ ان لوگوں کی تعمیر وترقی ممکن ہو سکے ۔